Bismillah

652

۶ تا۱۲ذوالقعدہ ۱۴۳۹ھ  بمطابق    ۲۰تا۲۶جولائی۲۰۱۸ء

’’نبی کا عشق ہو جس میں وہ دل پتھر نہیں ہوتا‘‘ (نظم ۔ پروفیسر انور جمیل)

’’نبی کا عشق ہو جس میں وہ دل پتھر نہیں ہوتا‘‘

بنی آدم مکرم ہیں، مساوی ہیں بُجز تقویٰ

کوئی برتر نہیں ہوتا، کوئی کم تر نہیں ہوتا

نبی شمعِ محبت اور ہم اس کے ہیں پروانے

ہے وہ کیا زندگی جس کا کوئی محور نہیں ہوتا؟

وہ حاکم ہو فاتح ہو، مزاجاً عفو و رحمت ہے

ستم سہتا تو ہے مومن، ستم پرور نہیں ہوتا

عدو مزائیلوں سے اور بموں سے کیا ڈرائے گا

خدا سے ڈرنے والوں کو کسی کا ڈر نہیں ہوتا

سر میدان کٹ جاتا ہے فخر و ناز سے مومن

کبھی دشمن کے آگے وہ خمیدہ سر نہیں ہوتا

مسافر ہے یہاں لیکن وہ ہے فردوس کا باسی

مجاہد کا ادھر دنیا میں کوئی گھر نہیں ہوتا

محبت ’’عدل‘‘ امن و راستی منشور ہے اس کا

مثالِ جیش ایسا کوئی بھی لشکر نہیں ہوتا

عبث الزام ہم پہ سنگدل ہونے کا ہے انور

نبی کا عشق ہو جس میں وہ دل پتھر نہیں ہوتا

٭…٭…٭

(پروفیسر انور جمیل)

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
TAKWIR Web Designing (www.takwir.com) Copyrights Alqalam Weekly Online