Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

معارفِ نبوی (کلام ہادی عالم) 546

معارفِ نبوی

کلام ہادیٔ عالمﷺ (شمارہ 546)

ان میں سے آٹھ ایسے ہوں گے کہ ایک پھوڑا ان کا قصہ پورا کردے گا، ان کے شانوں کے درمیان ایک پھوڑا نکلے گا اور پھوڑا ایسا ہوگا جیسا کہ کسی نے آگ کا چراغ جلادیا ہو، یعنی بدن میں نعوذ باللہ آگ لگی ہوئی ہوگی اور اس کی سوزش اور تپش سینے کو توڑ کر سینے میں ظاہر ہوگی جس سے وہ مریں گے، نعوذباللہ! جنت میں داخل نہیں ہوں گے بلکہ ان کو جنت کی ہوا بھی نہیں لگے گی۔

اور ایک حدیث میں آتا ہے کہ جنت کے قریب بھی پھٹکنے نہیں دیا جائے گا اور یہاں تک کہ اونٹ سوئی کے ناکے میں سے نکل جائے، یہ کسی چیز کو محال چیز سے معلق کرنے کے لئے آتا ہے، مطلب یہ ہے کہ جیسا کہ اونٹ کا سوئی کے ناکے سے گذرنا ناممکن ہے ایسا ہی ان لوگوں کا جنت میں جانا ناممکن ہے۔

 اب ان منافقین کے نام کی تعیین نہیں کی گئی، اللہ اور اس کا رسول ہی بہتر جانتے ہیں کہ یہ بارہ منافق کون تھے؟ یا کون ہوں گے؟ اس سے آنحضرتﷺ ہی کے زمانے کے بارہ منافق مراد ہیں یا یہ کہ قیامت تک وقتاً فوقتاً ایسے بارہ منافق پیدا ہوں گے کیونکہ بس یہ فرمایا کہ میری امت میں بارہ منافق ہیں۔

منافقین کے ساتھ سلوک

حضرت عبداللہ بن عمر رضی اللہ عنہما سے روایت ہے کہ آنحضرتﷺ نے ارشاد فرمایا: مجھے اختیار دیا گیا تو میں نے ایک صورت کو اختیار کرلیا اور اگر مجھے اس کا علم ہو کہ اگر میں ستر مرتبہ سے زیادہ استغفار کروں تو اس کی بخشش ہوجائے گی تو میں ستر بار سے زیادہ استغفار کر دیتا۔

تشریح:اس حدیث میں ہے کہ حضورﷺ نے عبداللہ بن ابی منافق کا جنازہ پڑھا تھا، پیچھے سے حضرت عمررضی اللہ عنہ نے آپﷺ کا دامن پکڑ لیا اور فرمایا:آپ کو یاد نہیں اس نے فلاں فلاں وقت میں فلاں فلاں کفریہ باتیں کہی تھیں؟یہ دشمن خدا، دشمن رسول، رئیس المنافقین ہے، آپﷺ اس کا نمازجنازہ پڑھتے ہیں؟ آپﷺ مسکرائے، حضرت عمر رضی اللہ عنہ نے اسی جلال میں فرمایا: کیا اللہ تعالیٰ نے جنازہ پڑھنے سے منع نہیں فرمایا؟ فرمایا: اللہ نے مجھے منع نہیں کیا بلکہ یوں فرمایا ہے:

استغفرلھم اولاتستغفرلھم،ان تستغفر لھم سبعین مرۃ فلن یغفر اللّٰہ لھم( التوبہ: ۸۰)

’’آپ ان کے لئے استغفار کریں یا نہ کریں، اگر آپ ان کے لئے ستر مرتبہ بھی استغفار کریں گے تو اللہ ان کی بخشش نہیں کرے گا۔‘‘

فرمایا کہ مجھے منع تو نہیں کیا، مجھے اختیار دیا گیا ہے، بخشش مانگویا نہ مانگو ،میں مانگ رہا ہوں،اور یوں فرمایا کہ ستر بار مانگو تو بخشش نہ ہوگی اور گر مجھے یہ معلوم ہوتا کہ ستر بار سے زیادہ کرنے سے بخشش ہوجائے گی تو ستر سے زیادہ کرلیتا۔ اس کے بعد اللہ تعالیٰ نے اس سے منع فرما دیا۔

 منافقانہ خصلتیں اور عادتیں

حضرت عبداللہ بن عمررضی اللہ عنہما سے روایت ہے کہ آنحضرتﷺ نے ارشاد فرمایا: چار باتیں ہیں جس شخص میں یہ ہوں گی وہ خالص منافق ہوگا اور جس شخص میں ان باتوں میں سے ایک بات پائی جائے گی اس شخص میں ایک بات نفاق کی پائی جاتی ہے، یہاں تک کہ اس کو چھوڑ دے۔

۱)جب اس کے پاس امانت رکھی جائے تو خیانت کرے۔

۲)جب بات کرے تو جھوٹ بولے۔

۳)جب معاہدہ کرے تو معاہدے کی خلاف ورزی کرے۔

۴)جب وہ کسی سے جھگڑ ا کرے تو بدگوئی سے کام لے۔‘‘

تشریح: اس حدیث میں ارشاد ہے کہ:چار باتیں ایسی ہیں کہ جس شخص کے اندر یہ چار باتیں پائی جائیں وہ پکا منافق ہوگا ، خالص منافق اور اگر ان چارچیزوں میں سے ایک چیز اس میں پائی جاتی ہے تو گویا اس میں ایک چیز نفاق کی پائی جاتی ہے الّایہ کہ وہ اس کو چھوڑ دے۔ تو چار باتوں کے ساتھ نفاق یعنی منافقت کانصاب مکمل ہوجاتا اور پھر اس آدمی کے منافق ہونے کے لئے کسی اور چیز کے تلاش کرنے کی ضرورت نہیں۔

وہ  چار باتیں یہ ہیں:

۱)اس کے پاس امانت رکھی جائے تو اس میں خیانت کرے۔

۲)دوسری بات یہ کہ جب بات کرے تو جھوٹ بولے۔

تیسری بات یہ ہے کہ اگر کوئی معاہدہ کرلے تو اس معاہدے کی خلاف ورزی کرے، عہد شکنی کرے۔

 ۴)چوتھی بات یہ کہ اگر کسی کے ساتھ لڑائی جھگڑا، بحث ہوجائے تو بدگوئی کرے اور بدزبانی سے کام لے۔

 معلوم ہوا کہ چار باتیں مسلمان کے شایان شان نہیں ہیں، امانت رکھی جائے اور اس میں خیانت کرے۔ یہ قصہ میں نے والد صاحبؒ سے بھی سنا ہے اور حضرت شیخ نور مرقدہ کی’’آپ بیتی‘‘ میں بھی ہے کہ ایک بادشاہ کی ایک ملاح کے ساتھ دوستی تھی، ملاح کشتی چلاتا دریا میں، بادشاہ کے پاس آتا جاتا رہتا تھا، بادشاہ کا انتقال ہوگیا تو اس کا بیٹا تخت پر بیٹھا، وہ اس کے پاس بھی بدستور جاتا رہا، ایک صاحبزادہ شہزادہ جو بادشاہ بن گیا اب وہ اس سے کہنے لگا: تم نے میرے باپ کا زمانہ بھی پایا ہے میرازمانہ بھی پایا ہے اس وقت کی رعایا کو بھی تم نے دیکھا، اب کی رعایا کو بھی دیکھا، اس وقت کے بھی حالات تمہارے سامنے ہیں ،اس وقت کے بھی حالات تمہارے سامنے ہیں، سچ سچ بتائو کہ میرے باپ کا زمانہ اچھا تھا یا میرازمانہ اچھا ہے؟

 

٭…٭…٭

 

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor