بھارت: ہندوئوں کی سازش، علی گڑھ یونیورسٹی کی مسلم شناخت کو خطرہ

(شمارہ 657)

بھارت: ہندوئوں کی سازش، علی گڑھ یونیورسٹی کی مسلم شناخت کو خطرہ

مودی سرکارکا نچلی ذات کے ہندو ؤںکو زبردستی داخلہ دینے کا حکم ، عملدرآمد نہ کرنے کی صورت میں تمام فنڈز منجمد کرنے کی دھمکی

نئی دہلی(نیٹ نیوز) بھارت میں واقع مسلمانوں کی قدیم درسگاہ علی گڑھ یونیورسٹی کی شناخت خطرے میں پڑ گئی۔ سرکار نے نچلی ذات کے ہندو شہریوں کو بھی زبردستی داخلہ دینے کا حکم جاری کردیا،حکم نامے پر عملدرآمد نہ کرنے کی صورت میں تمام فنڈز منجمد کر دئیے جائیں گے۔ بھارتی میڈیا کے مطابق  بھارت میں واقع مسلمانوں کی قدیم درسگاہ علی گڑھ یونیورسٹی کی شناخت خطرے میں پڑ گئی، سرکاری ادارے نے نچلی ذات کے ہندو شہریوں کو بھی زبردستی داخلہ دینے کا حکم جاری کردیا۔بھارتی میڈیا کی رپورٹ کے مطابق سرکاری قومی کمیشن نے انتظامیہ سے مطالبہ کیا ہے کہ دلت اور دیگر ذاتوں سے تعلق رکھنے والے ہندو طالب علموں کو بھی علی گڑھ یونیورسٹی میں داخلہ دیا جائے۔سرکاری ادارے نے مطالبے پر عملدرآمد نہ کرنے کی صورت میں یونیورسٹی کے تمام فنڈز روکنے کی بھی دھمکی دے ڈالی۔