خونریز جھڑپوں میں13بھارتی فوجی ہلاک، 4 کشمیری شہید

(شمارہ 684)

خونریز جھڑپوں میں13بھارتی فوجی ہلاک، 4 کشمیری شہید

حریت رہنماؤں کی پکڑ دھکڑ کا معاملہ تیز،میر واعظ کے گھر چھاپہ، موبائل فون،لیپ ٹاپ، دفتر کا ریکارڈ،جامع مسجد سری نگر کی ضروری فائلیں اور دیگر اشیاء ضبط
کپواڑا میں سرچ آپریشن کے دوران بھارتی فوج پرقیامت ٹوٹ پڑی، شدیدزخمی کشمیری مجاہد نے 4بھارتی فوجی بھون ڈالے،2فوجی ہندواڑہ میں مار گئے
جماعت اسلامی کے بعد حریت کانفرنس پر بھی پابندی لگانے کابھارتی منصوبہ،جماعت اسلامی کے 400کارکنان گرفتار ،وادی بھر میں احتجاج کا سلسلہ جاری
شہیدکشمیری نوجوانوں کی نماز جنازہ میں ہزاروں افراد کی شرکت،ہندواڑہ میں 3روز سے کشمیریوں سے جھڑپ جاری ،دشمن کو بھاری نقصان کا سامنا

سرینگر(نیٹ نیوز)پلوامہ حملے کے بعد بھارت اوچھے ہتھکنڈوں پر اتر آیا، جماعت اسلامی  پر پابندی عائد کرکے سینکڑوں کارکنان کو گرفتارکرلیا جبکہ دوسری جانب مقبوضہ وادی میں بھارتی مظالم کا سلسلہ جاری ہے ، سرچ آپریشن کے دوران خونریز جھڑپ میں 13بھارتی فوجی ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے جبکہ 4 کشمیری نوجوانوں نے جام شہادت نوش کیا۔حریت رہنماؤں کی پکڑ دھکڑ کا معاملہ تیز،میر واعظ کے گھر چھاپہ، موبائل فون،لیپ ٹاپ، دفتر کا ریکارڈ،جامع مسجد سری نگر کی ضروری فائلیں اور دیگر اشیاء ضبط،شہیدکشمیری نوجوانوں کی نماز جنازہ میں ہزاروں افراد کی شرکت،ہندواڑہ میں 3روز سے کشمیریوں سے جھڑپ جاری ،دشمن کو بھاری نقصان کا سامناکرنا پڑا۔ تفصیلات کے مطابق مقبوضہ کشمیر میں حریت پسند کشمیری جماعتوں کیخلاف کریک ڈاؤن مزید تیز کر دیا گیاہے۔بھارتی تحقیقاتی ادارے این آئی اے نے حریت کانفرنس (ع) کے سربراہ میر واعظ عمر فاروق کے گھر پر بھی چھاپہ مارا ہے۔ادھر تحریک حریت جموں کشمیر کے چیئرمین محمد اشرف صحرائی اور میر واعظ عمر فاروق نے مقبوضہ کشمیر میں جاری گرفتاریوں کی شدید مذمت کی ہے۔ جموں کشمیر لبریشن فرنٹ کے چیئرمین محمد یٰسین ملک اس سے پہلے ہی حراست میں ہیں اور این آئی اے نے انہیں مائسمہ میں ا ن کی رہائش گاہ سے گرفتار کیا تھا۔ سری  نگر اور پونچھ کے اضلاع میں بھارتی جنگی طیارے رات کو پرواز کرتے رہے جس سے لوگ خوفزہ ہو گئے۔ رپورٹ کے مطابق بھارتی فوج اور سی آر پی ایف نے نام نہاد سرچ آپریشن کے دوران دو کشمیریوں کو شہید کرنے کے ساتھ ساتھ گھروں میں گھس کر توڑ پھوڑ بھی کی گئی۔شہید کشمیری نوجوانوں کو ان کے آبائی علاقے سعدہ پورہ میں سپرد خاک کیا گیا ہے۔ کپواڑہ ضلع میں شدیدزخمی کشمیری مجاہد کے حملے میں 4بھارتی فوجی مارے گئے جبکہ10سے زائد اہلکار زخمی ہوئے۔بھارتی فوج اور سی آر پی ایف اہلکار اپنے تئیں شہید کئے گئے دو کشمیری نوجوانوں کی لاشیں قبضہ میں لینے کیلئے قریب گئے تو ایک مجاہد اچانک کھڑا ہو گیا اور فوجیوں پر اندھا دھند فائرنگ کر دی جس سے انہیں سنبھلنے کا موقع ہی نہیں مل سکا اور وہ درختوں کی کٹی ٹہنیوں کی طرح زمین پر گرنے لگے۔بھارتی میڈیا کے مطابق فوج اور سی آر پی ایف کی بھاری نفری نے کپواڑہ میں ہندواڑہ کے لنگیٹ علاقہ میں نام نہاد سر چ آپریشن شروع کیا اور دو کشمیری مجاہدین پر گولیاں برسائی گئیں جس پر دونوں زمین پر گر گئے۔ اس دوران بھارتی فوجیوں نے جیسے ہی ان کی نعشیں قبضے میں لینا چاہیں اور وہ ان کے قریب گئے تو ایک نے اچانک کھڑے ہو کر گن سیدھی کی اور بھارتی فوجیوں کو گولیوں سے بھون ڈالا۔2فوجی ہندواڑہ میں مارے گئے۔مقبوضہ کشمیر میں 8 بھارتی فوجیوں کی ہلاکت اور 32 کے زخمی ہونے کی اطلاعات ہیں۔بھارتی میڈیا کے مطابق ایم ایس ڈسٹرکٹ ہسپتال راجوڑی نے ہسپتال میں 8 جوانوں کی لاشیں لائے جانے کی تصدیق کی ہے تاہم یہ واضح نہیں کہ ہلاکتیں کس واقعہ میں ہوئی ہیں۔کشمیری میڈیا کے مطابق آپریشن میں بھارتی فوج کو پسپائی کا سامنا ہے۔بوکھلاہٹ کی شکار بھارتی فوج نے تین گھر اور دو مویشیوں کے باڑے گرا دئیے۔ضلع کپواڑا کے علاقے ہندواڑا میں سرچ آپریشن کے پہلے روز (جمعہ) کو بھی 2 کشمیری نوجوانوں کی شہادت ہوئی تھی۔ادھر  مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فورسز نے جموں کشمیر میں جماعت اسلامی کے درجن سے زائدمزید رہنماؤں ، کارکنوں اورعلمائدین کو گرفتارکرلیا۔ کشتواڑ ، ڈوڈہ ، رام بن ، پونچھ ، راجوری اور جموں کے اضلاع میں جماعت اسلامی کے دفاتر اور پارٹی رہنماؤں اور کارکنوں کے گھروں پر بھی دن بھر چھاپے جاری رہے اور اس دوران بڑی تعداد میں دستاویزات ضبط کرلی گئی ہیں جبکہ6 اکاؤنٹ بھی منجمد کرلیے گئے ہیں۔ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی ریاستی دہشتگردی کا سلسلہ جاری ،ضلع شوپیاں میں قابض بھارتی فورسز نے سرچ آپریشن کے دوران دوکشمیری نوجوانوں کو شہید کردیا، وادی بھر میں ہڑتال جاری۔کشمیرمیڈیا سروس کے مطابق مقبوضہ کشمیر کے ضلع شوپیاں میں قابض بھارتی فورسز نے ایک بار پھر بربریت کا مظاہرہ کرتے ہوئے سرچ آپریشن کی آڑ میں دوکشمیری نوجوانوں کو شہید کردیا۔قابض بھارتی فورسز کی جانب سے جگہ جگہ چھاپے مارے جارہے ہیں تاہم وادی بھر میں ہڑتال جاری ہے۔ دوروزہ ہڑتال کی کال حریت رہنماوں کی جانب سے دی گئی۔