Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

15 امریکیوں سمیت 125 ہلاک،45 چوکیاں فتح

(شمارہ 687)

15 امریکیوں سمیت 125 ہلاک،45 چوکیاں فتح

امریکی فوجیوں کو قندوز ، پکتیکا، لغمان اورہلمند میں طالبان نے نشانہ بنایا،کاپیسا میں وسیع علاقے پر مجاہدین کا قبضہ، بھاری مقدار میں فوجی سازوسامان بھی غنیمت،ہلمند میں دھماکے سے 3 ٹینک تباہ، 18 ہلاکتیں
کابل میں افسر سمیت 13اہلکار ہلاک ،درجنوں اہلکاروں نے ہتھیار ڈال دیئے،قندھار میںفدائی حملے میں11 اہلکار کام آئے،فقیر کلی پر بمباری میں مسجد شہید، متعدد گھر تباہ،گھر گھر تلاشی کے دوران لوٹ مار
فراہ میں گشتی پارٹی پر حملے میں14 ہلاکتیں ہوئیں،ہلمند میں  ہلکے بھاری ہتھیاروں اور لیزر گن سے حملے،کارروائی 5 گھنٹے تک جاری رہی،50فوجیوں اور پولیس اہلکاروں کو ٹھکانے لگایا گیا،درجنوں زخمی
بادغیس میں طالبان نے 58اہلکار رہا کر دیئے،بگرام میںمجاہدین امریکی ڈرون مار گرایا،15 کمانڈوز قتل،شکست خوردہ امریکی وافغان فوجی آپس میں لڑنے لگے،10روز میں 2جھڑپیں ہوئیں،نیویارک ٹائمز

کابل(نیٹ نیوز)امارت اسلامیہ میں مجاہدین کے اتحادی فورسز پر وسیع حملے، 15 امریکیوں سمیت 125 کو ٹھکانے لگا دیا، 45 چوکیاں فتح، 15 ٹینک اور امریکی ڈرون تباہ، امریکی فوجیوں کو قندوز، پکتیکا، لغمان اور ہلمند میں واصل جہنم کیاگیا، غزنی،ننگرہار ، قندوز میں امریکی بمباری سے بچوں اور خواتین سمیت 50 شہید ، مساجد ، طیاروں نے مدرسہ اور گھروں پر بم برسائے،شہدا میں 6حفاظ شامل،گورنرہلمند زخمی،ہزاروں افراد سڑکوں پر پر نکل آئے،کاپیسا میں وسیع علاقے پر مجاہدین کا قبضہ،، بھاری مقدار میں فوجی سازوسامان بھی غنیمت،کابل میں افسر سمیت 13اہلکار ہلاک ،درجنوں اہلکاروں نے ہتھیار ڈال دیئے،قندھار میںفدائی حملے میں11 اہلکار کام آئے،فقیر کلی پر بمباری میں مسجد شہید، متعدد گھر تباہ،گھر گھر تلاشی کے دوران لوٹ مار،بادغیس میں طالبان نے 58اہلکار رہا کر دیئے،بگرام میںمجاہدین امریکی ڈرون مار گرایا،15 کمانڈوز قتل،شکست خوردہ امریکی وافغان فوجی آپس میں لڑنے لگے۔ تفصیلات کے مطابق وز میں لڑائی کے دوران طالبان نے 2امریکی فوجی مار دیئے۔ لڑائی میں متعدد افغان فوجی بھی ہلاک ہوئے۔ امریکی حکام نے ہلاک ہونے والے دو فوجیوں کی شناخت بتانے سے گریز کررہی ہے۔  صوبہ ہلمند کے دارالحکومت لشکر گاہ کے اسٹیڈیم میں ’یوم کسان‘ کی مناسبت سے منعقدہ سرکاری تقریب میں 2 بم دھماکوں میں 4 افراد ہلاک اور 31 زخمی ہوگئے، تقریب  کے مہمان خصوصی ہلمند کے گورنر محمد یاسین خان بھی زخمیوں میں شامل ہیں.امریکی فضائیہ نے غزنی اور ننگرہار میں مساجد ، مدرسہ اور گھروں پر بمباری کر دی جس کے نتیجے میں مزید30افغان شہری شہید ہو گئے۔ شہدا میں 6 حفاظ،بچے اور خواتین شامل ہیں۔امریکی حملوں کے خلاف قندوز، ننگر ہار اور غزنی میں ہزاروں افراد نے شہری شہادتوں پر شدید احتجاج کیا اور امریکا سے حملے بند کرنے کامطالبہ کیا۔ادھر افغانستان کے صوبہ بادغیس میں طالبان نے انسانی ہمدردی کے تحت 58اہلکار رہا کر دیئے۔ طالبان نے مورچاق کے علاقے میں آپریشن کا آغاز کیا تھا جس کے نتیجے میں متعدد یونٹ، فوجی مراکز اورسینکڑوں دفاعی چوکیوں پر قبضہ کرلیا جبکہ طالبان حملے میں 90 سے زائد اہلکار ہلاک اور106 گرفتار ہوئے۔طالبان نے مختلف فوجی سازوسامان بھی قبضے میں لیا تاہم طالبان کے مرکزی امیر کے حکم پر طالبان نے 58 اہلکاروں کو رہا کرکے اور ان کے خرچ دے کرآزاد کردیا۔علاوہ ازیں امریکی ڈرون طیارے کو امارت اسلامیہ کے مجاہدین نے صوبہ پروان ضلع بگرام میں مار گرایا۔ بگرام ایئربیس کے قریب مجاہدین نے جارح امریکی فوجوں کے ڈرون طیارے کو مار گرایا۔ جارح امریکی و کٹھ پتلی کمانڈو اور مقامی جنگجوؤں پر امارت اسلامیہ کے مجاہدین نے قندوز،پکتیکا اور لغمان صوبوں میں حملہ کیا۔اطلاعات کے مطابق جارح امریکی و کٹھ پتلی کمانڈو نے صوبہ قندوز کے صدر مقام قندوز شہر کے تیلاوکی کے مقام پر چھاپہ مارا، جنہیں شدید مزاحمت کا سامنا ہوا اور لڑائی چھڑگئی.جس میں 3 امریکی اور 9 کمانڈو ہلاک جب کہ متعدد زخمی ہوئے ہیں۔ذرائع کے مطابق جارح صلیبی و کٹھ پتلی فوجوں نے بی 52 وغیرہ طیاروں اور بھاری ہتھیاروں سے علاقے کو نشانہ بنا رکھا ہے،جس میں عوام کو بھاری نقصانات کا سامنا ہورہا ہے۔دوسری جانب  ہلکے وبھاری ہتھیاروں سے لیس مجاہدین نے صوبہ لغمان ضلع علیشنگ کے اسلام آباد کے علاقے میں واقع جنگجوؤں کی چوکی پر حملہ کیا،جس کے نتیجے میں اللہ تعالی کی نصرت سے چوکی فتح اور وہاں تعینات شرپسندوں میں سے 2 ہلاک جب کہ 4 زخمی اور دیگر فرار ہونے میں کامیاب ہوئے۔دریں اثناء  مجاہدین نے تازہ دم اہلکاروں کو بھی نشانہ بنایا اور حاجی صاحبان کے مقام پر بم دھماکہ سے فوجی ٹینک تباہ اور اس میں سوار اہلکاروں میں سے ایک ہلاک جب کہ 3 زخمی ہوئے۔اسی طرح صوبہ پکتیکا ضلع وازیخوا کے گوشتہ کے علاقے میں مجاہدین کے حملے میں 3 فوجی زخمی ہوئے۔ادھر  جارح امریکی فوجوں اور کٹھ پتلی کمانڈو نے صدر مقام قندوز شہر کے تیلاکی کے مقام پر چھاپہ مارا،جنہیں مجاہدین کی شدید مزاحمت کا سامنا ہوا اور لڑائی چھڑگئی،جس میں دن کے اختتام تک 5 امریکی اور 13 کمانڈو ہلاک جب کہ 7 امریکی اور 11 کمانڈو زخمی ہوئے ہیں۔ ادھر  الخندق آپریشن کے سلسلے میں صوبہ ہلمند ضلع سنگین میں فوجی چوکیوں پر حملہ ہوا  موبائل کمبے اور مجید چورنگی کے علاقوں میں واقع فوجی چوکیوں پر ہلکے بھاری ہتھیاروں اور لیزر گن سے حملہ ہوا، جو پانچ گھنٹے تک جاری رہا، جس سے 2 چوکیاں فتح، ٹینک تباہ، 52 فوجی وپولیس اہلکار ہلاک، جبکہ 11 مزید زخمی ہوئے۔ الخندق آپریشن کے سلسلے میں امارت اسلامیہ کے مجاہدین نے صوبہ کاپیسا ضلع نجرآب میں کٹھ پتلی دشمن کے خلاف وسیع کاروائی کا آغاز کیا۔ہلکے وبھاری ہتھیاروں سے لیس مجاہدین نے مذکورہ ضلع کے غین، افغانیہ اور پچغان دروں میں دشمن کے خلاف وسیع کاروائی کا آغاز کیا، جس کے نتیجے میں اللہ تعالی کی نصرت سے تمام علاقے اور 45 چوکیاں فتح ہونے کے علاوہ 18 سیکورٹی اہلکار ہلاک جب کہ 13 زخمی اور دیگر فرار ہونے میں کامیاب ہوئے اور مجاہدین نے ایک فوجی ٹینک، دو گاڑیاں اور کافی مقدار میں مختلف النوع ہلکے و بھاری ہتھیار غنیمت کرلی۔ضلع گرمسیر سے اطلاع دی کہ قلعہ نبی کے علاقے میں واقع چوکی پر اسی نوعیت کا حملہ ہوا، جس سے 2 اہلکار موقع پر ہلاک ہوئے۔ذرائع نے ضلع نادعلی سے کہ ماتکئی، پارچاؤں اور بیلر کے علاقوں میں واقع پولیس چوکیوں پر مجاہدین نے حملہ کیا، جس سے رینجر گاڑی تباہ اور 9 اہلکار ہلاک وزخمی ہوئے۔ ادھر افغانستان کے دارالحکومت کابل میں طالبان حملوں افسر سمیت 13اہلکار ہلاک ہوگئے جبکہ درجنوں اہلکاروں نے طالبان کے سامنے ہتھیار ڈال دیئے۔تفصیلات کے مطابق کابل انتظامیہ کے اعلی عہدیداروں اور کمانڈروں نے بغ لان، بلخ اور جوزجان صوبوں میں طالبان کے سامنے ہتھیار ڈال دیئے۔صوبہ بغ لان ضلع تالہ وبرفک کے سابق جہادی کمانڈروں زمان کنڈک، سالم اور فوجی کمانڈر نصرت اللہ طالبان سے آملے جنہوں نے 50 عدد ہلکے وبھاری ہتھیار بھی طالبان کے حوالے کردیئے۔ ضلع مرکزی بغ لان کے جرخشک کے علاقے میں فوجی کاروان پر ہونے والے حملے میں دو گاڑیاں تباہ ہونے کے علاوہ 5 اہلکار ہلاک جبکہ 4 زخمی ہوگئے۔ضلع پل خمری کے مرکز میں انٹیلی جنس آفس کے سامنے بم دھماکے سے پولیس افسر نصراللہ سمیت 3 اہلکار ہلاک جبکہ 2 زخمی ہوگئے۔ ادھر صوبے ہلمند کے مقامی اسٹیڈیم میں یوم کسان کی مناسبت سے منعقدہ سرکاری تقریب میں 2 بم دھماکوں میں 4 افراد ہلاک اور 31 زخمی ہوگئے، تقریب کے مہمان خصوصی ہلمند کے گورنر محمد یاسین خان بھی زخمیوں میں شامل ہیں جنہیں قریبی اسپتال منتقل کیا گیا۔

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor