Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

شیخ الاسلام مفتی محمد تقی عثمانی پر قاتلانہ حملہ،اللہ کے خصوصی فضل سے محفوظ رہے،پولیس اہلکار اور گارڈ شہید

(شمارہ 687)

شیخ  الاسلام مفتی محمد تقی عثمانی پر قاتلانہ حملہ،اللہ کے خصوصی فضل سے محفوظ رہے،پولیس اہلکار اور گارڈ شہید

کراچی کے علاقے نیپاچورنگی میں 3 موٹرسائیکلوں پر سوار6 حملہ آوروںنے نشانہ بنایا،حملے کے وقت مفتی صاحب تلاوت کررہے تھے
خوفناک حملے میں محفوظ رہنا اللہ کا فضل ہے،مفتی تقی عثمانی،15خول فارنسک لیب روانہ،حملہ آوروں نے بچنے کے شبہے پر دومرتبہ گاڑی پر فائرنگ کی
فرقہ واریت کی آگ بھڑکاکر پاکستان کو عدم استحکام سے دوچار کرنے کیلئے مودی کے حکم پربھارتی خفیہ ایجنسی ’’را‘‘ کا وار تائیدِ ایزدی سے ناکام ہو گیا

کراچی(نیٹ نیوز)شیخ الاسلام مفتی تقی عثمانی پر قاتلانہ حملہ، معجزانہ طور پر بچ گئے، پولیس اہلکار اور گارڈ شہید جبکہ ڈرائیور زخمی ہوگئے ، حملے کے وقت مولانا تلاوت کررہے تھے، 3 موٹرسائیکلوں پر سوارہیلمنٹ پہنچے 6 حملہ آوروں نے نیپا چورنگی کے قریب فائرنگ کی، پہلے حملے میں بچ جانے کے شبہ پر ملزمان نے دوبارہ  آکر پھر مفتی تقی عثمانی صاحب کی گاڑی کو شدید فائرنگ کا نشانہ بنایا۔ مفتی صاحب کا کہنا ہے کہ خوفناک حملے میں بچ جانا اللہ کا  فضل ہے ۔ تفصیلات کے مطابق فرقہ واریت کی آگ بھڑکاکر پاکستان کو عدم استحکام سے دوچار کرنے کیلئے مودی کے حکم پربھارتی خفیہ ایجنسی ’’را‘‘ کا وار تائیدِ ایزدی سے ناکام ہو گیا۔  نیپا چورنگی کے پاس 3 موٹر سائیکل سوارحملہ آوروںنے ممتاز عالم دین اور وفاقی شرعی عدالت کے سابق جج مفتی تقی عثمانی اور ان کے دوست کی کاروں پر فائرنگ کر دی۔ دہشت گردانہ حملے میں مفتی تقی عثمانی ، ان کی اہلیہ و پوتے محفوظ رہے تاہم سیکورٹی پر مامور پولیس اہلکار و نجی سیکورٹی گارڈ شہید ہو گئے جبکہ مولانا شہاب و ڈرائیور زخمی ہوگئے۔  حکام کا کہنا ہے کہ حملے کا ہدف مفتی تقی عثمانی تھے اور واردات پاکستان کے امن کیخلاف سازش کے تحت کی گئی۔پولیس نے جائے وقوعہ سے نائن ایم ایم پستول کے15 خول تحویل میں لے کر فارنسک لیب بھجوا دیے ہیں۔ مفتی تقی عثمانی کا کہنا ہے کہ حملے کے وقت وہ تلاوت قرآن کر رہے تھے ، اس لئے یہ بھی علم نہیں تھا کہ حملہ کہاں ہوا۔ نیپا چورنگی فلائی اوور کے قریب یونیورسٹی روڈ پر 3موٹر سائیکلوں پر ہیلمٹ پہنے 6 دہشت گردوں نے ہنڈا سوک کار نمبر بی کے ای 748  پر فائرنگ کر دی۔اندھا دھند فائرنگ کا نشانہ بننے والی دوسری کار ٹویوٹا سیلون نمبرایٹی ایف908 قریب پہنچی تو دہشت گردوں نے اس پر بھی فائرنگ کر دی۔فائرنگ سے بھگدڑ مچ گئی اور کئی گاڑیاں آپس میں ٹکرا گئیں جس کے بعد ملزمان موقع سے فرار ہو گئے۔

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor