Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

بابُ الجہاد (تابندہ ستارے۔677)

بابُ الجہاد

تابندہ ستارے ۔ حضرت مولانا محمدیوسفؒ کاندھلوی (شمارہ 677)

اللہ کی قسم! یہ کبھی بھی میرے جسم سے الگ نہ ہوگا۔ چنانچہ انتقال تک وہ ہار اُن کے گلے میں رہا۔ پھر انہوں نے (مرتے وقت) وصیت کی کہ یہ ہار اُن کے ساتھ قبر میں دفن  کردیا جائے اور وہ جب بھی حیض سے پاک ہوتیں تو وہ غسل کے پانی میں نمک ضرور ڈالتیں اور مرتے وقت یہ وصیت بھی کی کہ اُن کے غسل کے پانی میں نمک ضرور ڈالا جائے۔

حضرت حمید بن ہلال ؒ فرماتے ہیں کہ قبیلہ طفاوہ کے ایک شخص جن کی گزرگاہ ہماری طرف تھی( وہ آتے جاتے ہوئے) ہمارے قبیلہ سے ملتے اور ان کو حدیثیں سنایاکرتے تھے۔ انہوں نے ایک مرتبہ کہا کہ میںایک مرتبہ اپنے تجارتی قافلہ کے ساتھ مدینہ منورہ گیا، وہاں ہم نے اپنا سامان بیچا۔ پھر میں نے اپنے جی میں کہا کہ میں اس آدمی یعنی حضورﷺ کے پاس جاتا ہوں اور ان کے حالات لے کر اپنے پیچھے رہ جانے والوں کوجا کر بتائوں گا۔ جب میں حضورﷺ کے پاس پہنچا تو آپ ﷺنے مجھے ایک گھر دکھا کر فرمایا:اس گھر میں ایک عورت تھی، وہ مسلمانوں کے ساتھ ایک سریہ میںگئی اور وہ گھر میںبارہ بکریاں اور اپنا ایک کپڑا بننے کابرش جس سے وہ کپڑے بنا کر تی تھی چھوڑ کر گئی تواس کی ایک بکری اور وہ برش گم ہوگیا، وہ عورت کہنے لگی:یا رب! جو آدمی تیرے راستے میں نکلے اس کی ہر طرح حفاظت کا تونے ذمہ لیا ہوا ہے( اور میں تیرے راستہ میں گئی تھی،پیچھے) میری بکریوں میں سے ایک بکری اور کپڑا بننے والا برش گم ہوگیا ہے۔ میں تجھے اپنی بکری اور برش کے بارے میں قسم دیتی ہوں( کہ مجھے واپس فرمادے)

راوی کہتے ہیں کہ حضورﷺ اس طفاوی آدمی کوبتانے لگے کہ اس عورت نے کس طرح اپنے رب سے جو ش و خروش سے دعا کی۔حضورﷺنے فرمایا:اس کی وہ بکری اور اس جیسی ایک اور بکری اور اس کا وہ برش اور اس جیساایک اور برش اس کو( اللہ کے غیبی خزانہ سے ) مل گیا۔ یہ ہے وہ عورت اگر تم چاہو تو جا کر اس سے پوچھ لو۔ اس طفاوی آدمی نے کہا کہ میں نے حضورﷺ سے عرض کیا :نہیں( مجھے اس عورت سے پوچھنے کی ضرورت نہیں ہے ) بلکہ میں آپﷺ سے سن کر اس کی تصدیق کرتا ہوں( مجھے آپﷺ کی بات پر پورا یقین ہے)

’’بخاری ‘‘میں یہ روایت ہے کہ حضرت انس رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں کہ حضورﷺ حضرت( اُمّ حرام)بنتِ ملحان رضی اللہ عنہا کے گھر تشریف لے گئے اوران کے ہاں جا کر ٹیک لگاکر سو گئے اور مسکراتے ہوئے اُٹھے۔ انہوں نے عرض کیا:یا رسول اللہ! آپ کیوں مسکرارہے ہیں؟ آپﷺ نے فرمایا: ( میں نے خواب دیکھا ہے) کہ میری امت کے کچھ لوگ اللہ کے راستہ میں سمندر کا سفر کریں گے اور وہ ایسے ہوں گے جیسے بادشاہ تخت پر (بیٹھے) ہوتے ہیں۔ حضرت بنتِ ملحان رضی اللہ عنہانے عرض کیا:یا رسول اللہ! اللہ سے دعاء فرمادیں کہ اللہ مجھے ان لوگوں میں شامل فرمادے۔

حضورﷺ نے دعاء فرمائی: اے اللہ! اسے ان لوگوں میں شامل فرمادے۔ آپﷺ نے دوبارہ آرام فرمایااور مسکراتے ہوئے اُٹھے۔ حضرت بنتِ ملحان رضی اللہ عنہانے آپﷺ سے پھر وہی کہا،آپﷺ نے پھر وہی جواب دیا( کہ اس مرتبہ خواب میں امت کی دوسری جماعت دیکھی ہے) حضرت بنتِ ملحان نے پھر عرض کیا کہ اللہ سے دعاء کریں کہ اللہ تعالیٰ مجھے ان لوگوں میں بھی شامل فرمادے۔ آپﷺ نے فرمایا:تم پہلی جماعت میں سے ہوگی، دوسری جماعت میں نہیں ہوگی۔

 حضرت انس رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں کہ حضرت بنتِ ملحان رضی اللہ عنہانے حضرت عبادہ بن صامت رضی اللہ عنہ سے شادی کی( اور ان کے ساتھ جہاد میں گئیں) اور ( حضرت معاویہ رضی اللہ عنہ کی اہلیہ) حضرت بنتِ قرظہ کی معیت میں سمندر کاسفر کیا۔واپسی میں اپنے جانور پر سوار ہونے لگیں، وہ جانور بدکاتویہ اس سے گرگئیں اور وہاں( جزیرئہ قبر ص میں) ان کاانتقال ہوگیا۔

اللہ کے راستہ میں نکل کر عورتوں کا خدمت کرنا

 حضرت اُمّ سلیم رضی اللہ عنہافرماتی ہیں کہ انصار کی عورتیں حضورﷺ کے ساتھ غزوئہ میں جایا کرتی تھیں، بیماروں کو پانی پلایاکرتی تھیںاور زخمیوں کی مرہم پٹی کیا کرتی تھیں۔

 امام مسلم اور ترمذی نے روایت کی ہے کہ حضرت انس رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں کہ حضورﷺ حضرت اُمّ سلیم رضی اللہ عنہاکواور ان کے ساتھ انصار کی کچھ عورتوں کو غزوہ میں ساتھ لے جاتے تھے۔یہ عورتیں پانی پلایا کرتی تھیں اور زخمیوں کی مرہم پٹی کیاکرتی تھیں۔ امام ترمذی نے اس حدیث کو صحیح قراردیا ہے۔

 ’’بخاری‘‘ میں روایت ہے کہ حضرت ربیع بنتِ معوذرضی اللہ عنہا فرماتی ہے کہ ہم عورتیں حضورﷺ کے ساتھ غزوات میں جایا کرتیں، پانی پلایا کرتیںاور زخمیوں کی مرہم پٹی کیاکرتیں اورشہید ہونے والوںکو واپس لاتیں۔

’’بخاری‘‘ میں ان ہی سے دوسری روایت میں یہ ہے کہ ہم عورتیں حضورﷺ کے ساتھ غزوات میں جا کر لوگوں کو پانی پلاتیں اور ان کی خدمت کرتیں اورشہید ہونے والوں کو اور زخمیوں کومدینہ منورہ واپس لاتیں( جبکہ غزوہ مدینہ منورہ کے قریب ہوتا)

٭…٭…٭

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor