Bismillah

689

۶تا۱۲شعبان المعظم۱۴۴۰ھ  بمطابق ۱۲تا۱۸۱اپریل۲۰۱۹ء

بابُ الجہاد (تابندہ ستارے۔678)

بابُ الجہاد

تابندہ ستارے ۔ حضرت مولانا محمدیوسفؒ کاندھلوی (شمارہ 678)

’’مسنداحمد‘‘ اور ’’مسلم‘‘ اور ’’ابن ماجہ‘‘ میں حضرت اُمّ عطیہ انصاریہ رضی اللہ عنہا سے روایت ہے کہ وہ فرماتی ہیں کہ میں سات غزوات میں حضورﷺ کے ساتھ گئی( یہ حضرات تو میدانِ جنگ میں چلے جاتے)میں پیچھے ان کی قیام گاہوں میں رہتی اور ان کے لیے کھانا تیار کرتی اور زخمیوں کی دوادارو کرتی اورمستقل بیماروں کی خدمت کرتی۔

حضرت لیلیٰ غفاریہ رضی اللہ عنہ فرماتی ہیں کہ میں حضورﷺ کے ساتھ غزوہ میں جاکر زخمیوں کی مرہم پٹی کیاکرتی ۔

حضرت انس رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں کہ غزوئہ احد کے دن مسلمان کوشکست ہوگئی اور وہ حضورﷺ کے ساتھ نہ رہ سکے۔میںنے حضرت عائشہ بنتِ ابی بکر رضی اللہ عنہا اور حضرت اُمّ سلیم رضی اللہ عنہا کو دیکھا کہ دونوں نے چادریں اوپر چڑھائی ہوئی ہیں اور مجھے ان کی پنڈلیوں کی پازیب نظر آرہے تھے۔ وہ مشکیزے لیے ہوئے تیزی سے دوڑتی ہوئی آتیں، دوسرے راوی نے یہ مضمون نقل کیا ہے کہ یہ دونوں اپنی کمر پر مشکیزے اٹھا کر لاتیں اور زخمی لوگوں کے منہ میں پانی ڈالتیں پھر واپس چلی جاتیں، پھر مشکیزے بھر کر لاتیں اور زخمی لوگوں کے منہ میں پانی ڈالتیں۔

حضرت ثعلبہ بن ابی مالک رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں کہ حضرت عمر بن خطاب رضی اللہ عنہ نے ایک مرتبہ مدینہ کی عورتوں میں اونی چادریں تقسیم فرمائیں تو ایک چادر بچ گئی، تو ایک آدمی جو آپ کے پاس بیٹھا ہوا تھا اس نے کہا:اے امیر المومنین ! حضورﷺ کی نواسی جوآپ کے نکاح میں ہے، یہ چادر اسے دے دیں یعنی حضرت علی رضی اللہ عنہ کی صاحب زادی حضرت اُم کلثوم رضی اللہ عنہا کو۔

 حضرت عمررضی اللہ عنہ نے فرمایا کہ حضرت اُم سلیط رضی اللہ عنہا اس چادر کی زیادہ حق دار ہیں۔ حضرت اُم سلیط انصار کی ان عورتوں میں سے تھیں جنہوں نے حضورﷺ سے بیعت کی تھی ، حضرت عمررضی اللہ عنہ نے فرمایا: حضرت اُم سلیط غزوئہ احد میں ہمارے لیے مشکیزے لایا کرتی تھیں یاسیا کرتی تھیں۔

’’ابو دائود‘‘ میں یہ روایت ہے کہ حضرت حشرج بن زیاد کی دادی رضی اللہ عنہا فرماتی ہیں کہ عورتیں بھی حضورﷺ کے ساتھ غزوئہ خیبر میں گئی تھیں، اس حدیث میں یہ بھی ہے کہ حضورﷺ نے عورتوں سے اس غزوہ میں جانے کے بارے میں پوچھا کہ وہ کیا ساتھ جا رہی ہیں؟تو ان عورتوں نے کہا:ہم اس لیے ساتھ نکلی ہیں کہ ہم بالوں کی رسیاں بنائیں گی جس سے اللہ کے راستے میں نکلنے میں مدد کریں گی اور ہم زخمیوں کا علاج کریں گی اور تیر پکڑائیں گی اور ستو گھول کر پلائیں گی۔

حضرت زہریؒ فرماتے ہیں کہ عورتیں بھی حضورﷺ کے ساتھ غزوات میں جایاکرتی تھیں، لڑنے والوں کو پانی پلایا کرتی تھیں اور زخمیوں کی مرہم پٹی کیا کرتی تھیں۔

 عورتوں کا اللہ کے راستہ میں نکل کر لڑائی کرنا

حضرت سعید بن ابی زید انصاری رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں کہ حضرت اُم سعد بنت سعدبن ربیع رضی اللہ عنہا فرمایا کرتی تھیں کہ میں حضرت اُم عمارہ رضی اللہ عنہا کے پاس گئی اور میں نے ان سے کہا:اے خالہ جان! مجھے اپنی بات بتائیں۔انہوں نے کہا کہ میں دن کے شروع میں صبح صبح نکل کر دیکھنے لگی کہ مسلمان کیاکر رہے ہیں؟میرے پاس پانی کا ایک مشکیزہ تھا، میں چلتے چلتے حضورﷺ تک پہنچ گئی۔ آپﷺ اپنے صحابہؓکے بیچ میں تھے اس وقت مسلمان غالب آرہے تھے اور ان کے قدم جمے ہوئے تھے۔ پھر جب مسلمانوں کوشکست ہونے لگی تو میں سمٹ کر حضورﷺ کے پاس آگئی اور ( آپﷺکے سامنے) کھڑے ہو کر لڑنے لگی اور تلوار کے ذریعے کافروں کو حضورﷺ سے دور ہٹانے لگی اور کمان سے تیر بھی چلانے لگی، مجھے بھی بہت سے زخم لگے۔

حضرت اُم سعد فرماتی ہیں کہ میں نے ان کے کندھے پر ایک زخم دیکھا جو اندر سے بہت گہر ا تھا۔میں نے حضرت اُم عمارہ رضی اللہ عنہاسے پوچھا کہ یہ زخم آپ کو کس نے لگایا تھا؟انہوں نے کہا:ابن قَمِئہ کافر نے۔ اللہ اسے ذلیل کرے! اس کی صورت یہ ہوئی کہ جب مسلمان حضورﷺ کو چھوڑ کر بھاگنے لگے تو ابن قَمِئہ یہ کہتا ہوا آگے بڑھا کہ مجھے بتائو کہ محمد (ﷺ )کہا ں ہیں؟اگر وہ بچ گئے تو پھرمیں نہیں بچ سکتا ہوں( یعنی وہ نہیں یامیں نہیں) پھر میں اور حضرت مصعب بن عمیر رضی اللہ عنہ اور کچھ اور صحابہ جو آپﷺ کے ساتھ جمے ہوئے تھے اس کے سامنے آگئے۔ اس وقت اس نے مجھ پر تلوار کا وار کیا تھا جس سے مجھے یہ زخم آگیا تھا، میں نے بھی اس پر تلوار کے کئی وار کیے تھے لیکن اللہ کے دشمن نے دوزرہیں پہنی ہوئی تھیں۔

حضرت عمارہ بنت غزیہ ؒسے روایت ہے کہ ان کی والدہ حضرت اُم عمارہ رضی اللہ عنہانے غزوئہ احد کے دن ایک گھڑ سوار مشرک کوقتل کیا تھا اور دوسری روایت میں یہ ہے کہ حضرت عمررضی اللہ عنہ فرماتے ہیں کہ میں نے حضورﷺ کو فرماتے ہوئے سنا کہ جنگ احد کے دن دائیں بائیں جس طرف بھی میں منہ کرتا مجھے اُم عمارہ بچانے کے لیے اس طرف لڑتی ہوئی نظر آتی۔

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
TAKWIR Web Designing (www.takwir.com) Copyrights Alqalam Weekly Online