Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

ایک ہی علاج (السلام علیکم ۔ طلحہ السیف)

Assalam-o-Alaikum 563 (Talha-us-Saif) - Aik hi Ilaaj

ایک ہی علاج

السلام علیکم..طلحہ السیف (شمارہ 563)

پاکستان کی خارجہ پالیسی مکمل ناکام ہو چکی ہے۔ یہ ملک ہر طرف سے خطرات میں گِھر چکا ہے۔ انڈیا ، ایران اور افغانستان کا ٹرائیکا اسے گھیرے میں لے چکا ہے۔ ہر طرح کی جنگ اس کے خلاف بھڑکائی جا چکی ہے۔ اندرونی طور پر علیحدگی پسند قوتوں کو مضبوط کر کے اسے غیر مستحکم کیا جا رہا ہے جبکہ افغان بارڈر کے ساتھ متصل علاقے اگر طالبان کے زیر قبضہ نہ ہوتے تو افغانستان کی حکومت اب تک یہاں تباہی و بربادی کی وہ داستانیں رقم کرچکی ہوتی جن کا تصور بھی رونگٹے کھڑے کر دیتا ہے ۔ ایران مشرق وسطی کی طرح پاکستان کو بھی اپنی لابی کے ذریعے ہر نقصان پہنچا رہا ہے لیکن ہماری حکومت اور ادارے زبان سے اس کا نام نہیں لے سکتے۔پاکستان کی تمام سرحدیں غیر محفوظ ہیں۔ ایسے میں آپ کی حکومت اس صورتحال سے نمٹنے کے لئے کیا اقدامات کر رہی ہے؟…

جی ہم نے نام بدل کر کام کرنے والی تنظیموں کے خلاف شدید کریک ڈاؤن کا اعلان کر دیا ہے۔انہیں بالکل کام نہیں کرنے دیا جائے گا۔ ان کے فنڈز کے ذرائع مسدود کئے جائیں گے اور ان سے متعلق تمام اَفراد کو پابند سلاسل کر دیا جائے گا…

پاکستان کی معیشت تباہ حال ہے۔ ہماری معیشت میں ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت زراعت کو حاصل ہے مگر زراعت کی تباہ حالی کا اندازہ لگانا بھی اب ممکن نہیں رہا۔ تمام اعداد و شمار صرف بربادی در بربادی کی کہانی سنا رہے ہیں۔ کپاس جو ہماری سب سے مہنگی برآمدات میں شمار ہوتی تھی اب ناپید ہو چکی ہے۔ زرعی رقبہ مسلسل گھٹ رہا ہے۔ کسان زراعت ترک کر کے زمینیں فروخت کر رہے ہیں جس سے خوارک اور اجناس کے بحران کا خطرہ سروں پر منڈلا رہا ہے۔ زراعت کی تباہی کے سبب لائیو سٹاک میں خطرناک حد تک کمی آ چکی ہے۔یوں بیک وقت کئی معائشی سیکٹر ڈوب رہے ہیں۔ صنعت کا حال اس سے بھی گیا گذرا ہے۔ اہم ترین برآمدات صنعت چمڑے کی صنعت تھی وہ مکمل تباہ ہو چکی۔ بجلی اور گیس کے بحران تھمنے کی بجائے روز افزوں ہیں اور اس حوالے سے اب تک کے تمام دعوے جھوٹے ثابت ہوئے ہیں۔ شاٹ فال ہر دن اونچا ہو رہا ہے ، ذخائر مسلسل گھٹ رہے ہیں ، بجلی بنانے کے تمام نئے پراجیکٹ فیل نکلے اور ان میں سوائے میگا کرپشن سکینڈلز کے اب تک کوئی اور پروڈکٹس نہیں ہوئی۔ سروے رپورٹس ملک میں بدترین معاشی بحران کی نشاندہی کر رہی ہیں جبکہ قرض کی شرح روز بروز اونچی ہو رہی ہے۔ اس صورتحال سے نمٹنے کے لئے حکومت کو ہنگامی بنیادوں پرکچھ کرنے کی ضرورت ہے۔ حکومت اس بارے میں کیا کر رہی ہے؟…

جی بالکل آپ نے جن حالات و خطرات کی نشاندہی کی ان کا بغور جائزہ ومشاہدہ کرنے کے بعد حکومت نے ہنگامی طور پر اعلان کیا ہے کہ کالعدم تنظیموں اور نام بدل کر کام کرنے والی جماعتوں کے خلاف سخت کریک ڈاؤن کیا جائے گا۔ فورتھ شیڈول کے قانون کو مزید سخت کیا جائے گا اور اسے موثر بنانے کے لئے ہنگامی بنیادوں پر سخت فیصلے کئے گئے ہیں۔

جناب ملک میں کرپشن آخری حدیں پار کر چکی ہے۔ ہر سیکٹر بری طرح اس کی زد میں ہے۔ اداروں میں میگا سکینڈلز ہیں جن کی مالیت اربوں ڈالر میں ہے اور اب تو نچلی سطح پر بد عنوانی ہمارے معاشرے کا شعار بن چکی ہے۔ ہم بد عنوان قوموں کی ریٹنگ میں ہر سال چند درجے اور چڑھ جاتے ہیں۔ ہر شعبہ برباد ہو چکا ہے ۔ایک معمولی کاروباری سے لے کر کمپنی تک سب کرپشن میں لت پت ہیں۔ حرام بیچا جا رہا ہے۔ حرام کھلایا جا رہا ہے۔ ہر شخص کہیں سے لٹ رہا ہے اور کہیں لوٹ رہا ہے۔ عدالتی نظام برباد ہو چکا ہے۔ جیل میں ایک بے گناہ شخص مر گیا۔ ۱۹ سال بعد اس کی میت کو بے گناہی کی سند دی جا رہی ہے۔ نا انصافی نے جرائم کو بڑھاوا دیا ہے۔ کریمنل ریٹ آسمانوں کو چھو رہا ہے۔ ظلم اپنی ساری حدیں پار کرتا جا رہا ہے۔ معاشرے کو ہر سطح پر کرپشن سے پاک کرنے اور خرابیاں دور کرنے کے لئے حکومت کو اپنی ذمہ داری نبھانا ہو گی۔ حکومت اس سلسلے میں کیا کر رہی ہے؟…

جی آپ نے جس صورتحال کی منظر کشی کی ہم اسے اس سے بھی زیادہ خطرناک حالت میں دیکھ رہے ہیں۔ اس لئے ہم نے فوری طور پر فیصلہ کیا ہے کہ کالعدم تنظیموں اور نام بدل کر کام کرنے والی جماعتوں کے خلاف سخت کریک ڈاؤن کیا جائے گا۔ فورتھ شیڈول کے قانون کو مزید سخت کیا جائے گا اور اسے موثر بنانے کے لئے ہنگامی بنیادوں پر سخت فیصلے کئے گئے ہیں۔

اچھا سر یہ بتائیے گا کہ وہ پانامہ لیکس والے ایشو پر حکومت کی بہت جگ ہنسائی ہوئی، آف شور کمپینیز سامنے آنے پر بھی کافی سبکی ہوئی، عمران خان مسلسل مطالبہ کر رہے ہیں کہ حکومت مستعفی ہو یا جواب سامنے لائے، اس حوالے سے حکومت اپنی پوزیشن کلیئر کرے گی؟…

جی حکومت نے اپنی پوزیشن کلیئر کرنے کے لئے ہی فیصلہ کیا کہ کالعدم تنظیموں کو نام بدل کر کام ہرگز نہیں کرنے دیا جائے اور ان کی فنڈنگ کے تمام ذرائع بند کر دئیے جائیں گے۔

ہندوستان سرحدوں پر جارحیت کر رہا ہے۔ مسلسل گولہ باری جاری ہے، جنگ کی دھمکیاں بھی دی جا رہی ہیں جبکہ لانگ ٹرم پلاننگ کے طور وہ امریکہ سے اپنے دفاعی تعلقات بڑھا رہا ہے۔ اسلحہ کی بہت بڑی بڑی ڈیلز اس نے کنفرم کی ہیں اور جنگی بجٹ میں کئی گنا اضافہ عمل میں لایا ہے۔ پاکستان کے تئیں اس کے جارحانہ رویے میں مزید سختی آئی ہے اور اس کے وزراء نے کھلے عام پاکستان میں دہشت گردی کرانے کا عندیہ دیا ہے۔ ان اقدامات کے جواب میں حکومت کیا قدم اٹھا رہی ہے؟…

دیکھئے ہندوستان کے ان تمام اقدامات پر ہماری گہری نظر ہے اور ہم نے ان کے مقابل فوری طور پر فیصلہ کیا ہے کہ کالعدم تنظیموں اور نام بدل کر کام کرنے والی جماعتوں کے خلاف سخت کریک ڈاؤن کیا جائے گا۔ فورتھ شیڈول کے قانون کو مزید سخت کیا جائے گا اور اسے موثر بنانے کے لئے ہنگامی بنیادوں پر سخت فیصلے کئے گئے ہیں۔

کشمیر کی صورتحال آپ کے سامنے ہے۔ تین ماہ سے زائد عرصہ گزر گیا کرفیو جاری ہے۔ سینکڑوں لوگ شہید کر دئیے گئے ہیں۔ جو زندہ ہیں کربناک صورتحال سے دوچار ہیں۔ پیلٹ گنوں کی تباہ کاریاں جاری ہیں۔ پرسوں ایک بارہ سالہ بچہ شہید کر دیا گیا پھر اس کے جنازے پر چار لوگ مزید شہید ہوئے۔ کشمیری دب نہیں رہے نہ ہندوستان کی دھونس دھمکی سے متاثر ہو رہے ہیں اور نہ لالچ سے۔ ایسے میں یقیناً ان کی توقعات پاکستان سے بھی وابستہ ہوں گی۔ کیا یہ ایک مناسب وقت نہیں کہ پاکستان اس تحریک کے حوالے سے گومگو اور نفاق کی کیفیت سے نکل آئے اور اقدامی پالیسی اپنا کر اس موقع پر کشمیر کی آزادی کے لئے اپنا حقیقی کردار ادا کرے؟؟… حکومت اس سلسلے میں کیا کر رہی ہے؟…

جی آپ نے درست کہا ۔ کشمیر کی صورتحال پر ہماری گہری نظر ہے اور ہم بغور ہر لمحہ جائزہ لے رہے ہیں۔ ہم نے کشمیریوں کے ساتھ یکجہتی کے طور پر فیصلہ کیا ہے کہ کشمیر کا نام لینے والی جیش محمد، اس کے امیر مولانا محمد مسعود ازہر اور دیگر تمام ایسی جماعتوں اور افراد کے خلاف کڑے اقدامات کریں۔ سخت کریک ڈاؤن کریں۔ ان کی گرفتاریاں عمل میں لائیں۔ کشمیر کے نام پر کسی کو کام کی اجازت نہ دیں۔ ایسی تمام جماعتوں پر شکنجہ سخت کریں۔ ان کے فنڈنگ کے ذرائع مسدود اور ان کی سرگرمیاں محدود کریں۔

بتائیے ہم کشمیریوں کے لئے مزید کیا کر سکتے ہیں؟؟؟…

٭…٭…٭

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor