Bismillah

656

۲۸ذوالقعدہ تا ۴ ذوالحجہ ۱۴۳۹ھ  بمطابق    ۱۷تا۳۰اگست۲۰۱۸ء

مقتل میں بصد شوق قدم رکھا ہے (نظم ۔ پروفیسر انور جمیل)

مقتل میں بصد شوق قدم رکھا ہے

قطعات

اپنے شانوں پہ شجاعت کا علَم رکھا ہے

دین و ملت کی محبت کا بھرم رکھا ہے

ہم کو جینے سے کہیں بڑھ کے ہے مرنا آساں

ہم نے مقتل میں بصد شوق قدم رکھا ہے

٭…٭…٭

ہم نے پھولوں کی جانب نظر تک نہ کی

تھا جو کانٹوں سے آراستہ ، چن لیا

وہ جو مقتل کو جاتا تھا ویران سا

ہم نے ہنس کر وہی راستہ چن لیا

٭…٭…٭

سندِ اعزاز اُن کو ملتی ہے

امتحاں سے جو سرخرو آئیں

سجدۂ عشق ہے قبول ان کا

وہ جو مقتل سے باوضو آئیں

٭…٭…٭

آسرِ بزم ذرا کھل کے کوئی بات کریں

بند کمرے کی ملاقات ، ملاقات نہیں

تو ہی اے عشق ہمیں جانبِ مقتل لے چل

سینہ عقل میں سنتے ہیں کہ جذبات نہیں

٭…٭…٭

(پروفیسر انور جمیل)

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
TAKWIR Web Designing (www.takwir.com) Copyrights Alqalam Weekly Online