Bismillah

663

۱تا۷صفر المظفر۱۴۴۰ھ  بمطابق    ۱۲تا۱۸اکتوبر۲۰۱۸ء

عید الفطر …مسلمانوں کے لیے اِنعام کا دن (اداریہ)

عید الفطر …مسلمانوں کے لیے اِنعام کا دن

اداریہ (شمارہ 648)

رمضان المبارک کے آخری دن تیزی سے گزر رہے ہیںاور مسلمانوں کی اجتماعی خوشی کا دن عید الفطر کی آمد آمد ہے ۔

رمضان کے لمحات کو قدر دانی اور دانش مندی کے ساتھ گزارنے والوں کو خوشیوں کے یہ لمحات مبارک ہوں ۔ اللہ کرے کہ یہ عید ہمارے لیے دنیا و آخرت کی مسرتوں اور بہاروں کی نوید بن جائے ۔( آمین) تہوار ، خواہ کسی بھی قوم کے ہوں ، وہ ان کی اجتماعی زندگی میں بہت زیادہ اہمیت رکھتے ہیں اور پھر یہ تہوار محض کھیل کود نہیں ہوتے بلکہ ہر قوم کی شناخت ہوتے ہیں اور یہی تہوارلوگوں کے بکھرے ہوئے افراد کی شیرازہ بندی کر کے ان کو ایک لڑی میںپرو دیتے ہیں ۔

مسلمانوں کے تہواروں میں یہ خصوصیت ہے کہ ان میں خوشی کا بے بہا سامان بھی ہوتا ہے اور ایمان و دین کی تکمیل اظہار بھی۔ اللہ تعالیٰ سے ربط و تعلق کا اعلان بھی ہوتا ہے اور بندوں سے پیار و ہمدردی کا اظہار بھی۔

عید الفطر کو ہی دیکھ لیں ، اس میں یہ دونوں باتیں موجود ہیں۔ یہ جہاں بہت سی خوشیوں کا مجموعہ ہے وہیں مسلمان اجتماعی طور پر اپنے ایمانی شعار نماز و دعاء کا اظہار بھی اس دن بڑے اہتمام سے کرتے ہیں۔اس دن کئی خوشیاں جمع ہوتی ہیں: ایک رمضان المبارک کے روزوں کی خوشی، دوسری قیام شب ہائے رمضان کی خوشی، تیسری نزول قرآن، چوتھی لیلۃ القدر اور پانچویں اللہ تعالیٰ کی طرف سے روزہ داروں کے لئے رحمت و بخشش اور جہنم سے آزادی کی خوشی۔ پھر ان تمام خوشیوں کا اظہار صدقہ و خیرات جسے صدقہ فطر کہا جاتا ہے، کے ذریعے کرنے کا حکم ہے تاکہ عبادت کے ساتھ انفاق و خیرات کا عمل بھی شریک ہو جائے۔ یہی وہ وجوہات ہیں جن کی بناء پر اسے مومنین کے لئے خوشی کا دن قرار دیا گیا۔

رمضان المبارک کے بعد نصیب ہونے والا خوشیوں اور مسرتوں کا یہ دن ، صرف ایک رسمی تہوار ہی نہیں بلکہ اہل ایمان کو اپنی خوشیاں منانے کا ایک ڈھنگ بھی سکھاتا ہے ۔ اس کے آنے سے پہلے تمام صاحب استطاعت لوگوں پر لازم کر دیا جاتا ہے کہ وہ صدقہ فطر کی شکل میں اپنے ضرورت مند بھائیوں کو ان خوشیوں میں شریک کریں ۔ گویا اسلام نے اہل ثروت مسلمان کو یہ درس دیا کہ وہ خوشی کوئی خوشی نہیں جس میں ایک گھر میں شادیانے بج رہے ہوں اور دوسرے گھر میں کھانے پینے کی اشیاء بھی میسر نہ ہوں۔

آج جب ہم اپنے گھروں میں اپنے اہل خانہ کے ساتھ عید منانے جا رہے ہیں تو ہمیں یہ نہیں بھولنا چاہیے کہ مسلمانوں ایک بہت بڑا حصہ ایسا بھی ہے جو اس وقت کفار کے ظلم و ستم اور اپنوں کی بے حسی کا شکارہے۔ ہم اپنی خوشی کے ان لمحات میں اللہ تعالیٰ کا شکر بھی اداء کریں اور اپنے ان مظلوم بھائیوں کو یاد رکھیں اور جہاں تک بس چلے انہیں اپنے مال و زبان سے اپنی خوشیوں میں شریک بنانے کی کوشش کریں۔

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
TAKWIR Web Designing (www.takwir.com) Copyrights Alqalam Weekly Online