Bismillah

677

۱۱ تا۱۷جمادی الاولیٰ۱۴۴۰ھ  بمطابق ۱۸تا۲۴جنوری۲۰۱۹ء

درود شریف …احسان ہی احسان (نشتر قلم۔زبیر طیب)

درود شریف …احسان ہی احسان

نشتر قلم۔۔زبیر طیب (شمارہ 676)

اللہ تعالیٰ کا لاکھ ہا احسان کہ اس نے ایسی امت میں پیدا فرمایا جس کو درودشریف کی عظیم الشان نعمت نصیب ہوئی۔ اللہ تعالیٰ اس کی قدر کرنے اور اسے اپنی زندگی میں اپنانے کی توفیق نصیب فرمائے۔ آمین

اللہ تعالیٰ حضرت امیر محترم حفظہ اللہ کو اپنے شایان شان جزائے خیر عطاء فرمائیں کہ وقتاً فوقتاً مختلف اور نایاب خزانوں سے متعارف کرواتے رہتے ہیں۔ زندگی میں شاید کبھی ان عجیب نعمتوں کی طرف توجہ بھی نہ جاتی اگر حضرت امیر محترم ان کے بارے میں ذکر نہ فرماتے۔ کبھی افضل الذکر لا الہ الا اللہ کے عجیب فضائل کا بیان ، کبھی سورت الفاتحہ کی نعمتوں کا ذکر، کبھی استغفار کی برکات، کبھی آیۃ الکرسی کی شاندار اور عجیب فوائد کا تذکرہ ۔ اسی طرح آیات سکینہ ، دعائے کافیہ ، دعائے عافیت کے عجیب والہانہ تذکرے۔ اللہ … اللہ …اللہ

 اللہ تعالیٰ حضرت جی کو خوب خوب اجر عظیم سے نوازیں۔ آمین

درود شریف کی مزید چند باتیں سب سے پہلے خود اپنے لئے اور باقی قارئین کے لئے پیش خدمت ہیں۔

درود شریف دعا ہے

حضرت استاد جی شیخ الاسلام مفتی تقی عثمانی حفظہ اللہ فرماتے ہیں کہ:

میرے شیخ حضرت ڈاکٹر عبدالحی  صاحب رحمۃ اللہ علیہ نے ایک مرتبہ فرمایا کہ جب آدمی کو کوئی دکھ اور پریشانی ہو، یا کوئی بیماری ہو،یاکوئی ضرورت اور حاجت ہوتو اللہ تعالیٰ سے دعا تو کرنی چاہئے کہ یا اللہ! میری اس حاجت کو پورا فرما دیجئے۔ میری اس پریشانی اور بیماری کو دور فرمادیجئے۔ لیکن ایک طریقہ ایسا بتاتا ہوں کہ اس کی برکت سے اللہ تعالیٰ اس کی حاجت کو ضرور ہی پورا فرما دیں گے۔ وہ یہ ہے کہ کوئی پریشانی ہو، اس وقت درود شریف کثرت سے پڑھیں ، اس درود شریف کی برکت سے اللہ تعالیٰ اس پریشانی کو دور فرمادیں گے۔دلیل اس کی یہ ہے کہ سیرتِ طیبہ میں یہ بات لکھی ہوئی ہے کہ جب کوئی شخص حضور اقدس ﷺ کی خدمت میں کوئی ہدیہ لاتا تو آپ اس بات کی کوشش فرماتے کہ اس کے جواب میں اس سے بہتر تحفہ اس کی خدمت میں پیش کریں ، تاکہ اس کی مکافات ہوجائے، ساری زندگی آپ ﷺ نے اس پر عمل فرمایا۔ یہ درودشریف بھی حضور اقدس ﷺ کی خدمت میں ہدیہ ہے، اور چونکہ ساری زندگی میں آپ کا یہ معمول تھا کہ جواب میں اس سے بڑھ کر ہدیہ دیتے تھے، تو آج جب ملائکہ درود شریف آپ کی خدمت میں پہنچائیں گے کہ آپ کے فلاں امتی نے آپ کی خدمت میں درود شریف کا یہ تحفہ بھیجا ہے تو غالب گمان یہ ہے کہ حضور اقدس ﷺ اس ہدیہ کا بھی جواب دیں گے۔ وہ جوابی ہدیہ یہ ہوگا کہ وہ اللہ تعالیٰ سے دعا کریں گے کہ جس طرح اس بندے نے مجھے ہدیہ بھیجا، اے اللہ، اس بندے کی حاجتیں بھی آپ پوری فرمادیں۔

اب اس وقت ہم لوگ حضور اقدس ﷺ کی خدمت میں جاکر یہ نہیں کہہ سکتے کہ آپ ہمارے حق میں دعا فرمادیجئے، دعا کی درخواست کرنے کا تو کوئی راستہ نہیں ہے۔ ہاں ، ایک راستہ ہے، وہ یہ کہ ہم درودشریف کثرت سے بھیجیں ، جواب میں حضور اقدس ﷺ ہمارے حق میں دعا فرمائیں گے لہٰذا درودشریف پڑھنے کا یہ عظیم فائدہ ہمیں حاصل کرنا چاہئے۔

اسی وجہ سے بہت سے بزرگوں سے منقول ہے کہ وہ بیماری اور دکھ کی حالت میں درود شریف کی کثرت کیا کرتے تھے۔ اس لئے دن بھر میں کم از کم سومرتبہ درودشریف پڑھ لیا کریں ۔ اگر پورا درود ابراہیمی پڑھنے کی توفیق ہوجائے تو بہت اچھا ہے، ورنہ مختصر درود پڑھ لیں ۔(اصلاحی خطبات ، جلد 6،صفحہ93)

درود شریف عربی کا نہیں فارسی کا لفظ ہے۔ عربی میں اس کا متبادل لفظ ’’ الصلاۃ علی النبی‘‘ ہے۔ اگر درود شریف کا جائزہ لیا جائے تو یہ امر کھل کے واضح ہوجاتا ہے کہ یہ اپنے معنوں اور حقیقت دونوں کے اعتبار سے ایک دعا ہے. ایک ایسی دعا جس میں ہم رب کائنات سے یہ التجا کرتے ہیں کہ وہ حضور اقدسﷺ پر مزید رحمتیں اور برکتیں نازل فرمائیں۔ دعا ہمیشہ مانگی جاتی ہے پڑھی نہیں جاتی۔ افسوس یہ ہے کہ ہمیں درود پڑھنا تو سکھا دیا گیا لیکن مانگنا کسی نے نہ سکھایا۔ ضرورت ہے اس امر کی کہ درود کے الفاظ ادا کرتے ہوئے یہ حقیقت ملحوظ رہے کہ ہم اپنے پروردگار سے دعا مانگ رہے ہیں۔یہ سوچ ان الفاظ میں اپ کی دلچسپی اور لطف دونوں بڑھا دے گی۔

ﷺ…ﷺ…ﷺ

درود شریف کی عجیب برکت

دلائل خیرات (درود شریف کی کتاب) کے مؤلف حضرت محمد بن سلیمان جزولی رحمۃ اللہ علیہ کے وصال کے ستہتر( (77برس بعد آپ کا جسم قبر سے نکالا گیا اور مراکش منتقل کیاگیا آپ کے جسد مبارک کو دیکھا گیا کہ بالکل تازہ کفن بھی اتنے برس گزرنے کے باوجود بوسیدہ نہیں، آپ ایسے صحیح سالم تھے جیسے آج ہی لیٹے ہیں ،نہ آپ کی حالت بدلی نہ کوئی فرق پڑا۔ ایک شخص نے آپ کے رخسار پر انگلی رکھ کر دبایا تو اس جگہ سے خون ہٹ گیا اور انگلی کی جگہ سفید ہوگئی جیسے زندہ لوگوں کا ہوتاہے یہ تھی ساری بھاریں درود شریف کی برکت کی۔ (مطالع المسرت)

حضرت سفیان ثوری رحمتہ اللہ علیہ نے حج کے موقعے پر طواف کے دوران ایک نوجوان کو دیکھا جو قدم قدم پر صرف درود پاک پڑھ رہا تھا ۔ اس پر آپ رحمتہ اللہ علیہ نے اس سے کہا اے نوجوان !ہر جگہ کی اپنی دعائیں اور نوافل و اذکار ہیں لیکن تم ہر جگہ صرف درود پاک ہی کیوں پڑھ رہے ہو ؟اس نے بتایا کہ میں اور میرا والد گھر سے حج کے ارادے سے نکلے لیکن راستے میں میرا والد شدید بیمار ہو گیا اور انتقال کر گیا ۔ موت کے بعد ان کا چہرا سیاہ ہو گیا ۔غم سے میری عجیب حالت ہو گئی ۔ اسی وقت میری آنکھیں بوجھل ہوئیں اور مجھے نیند آ گئی

میں نے خواب دیکھا کہ ایک حسین و جمیل شخص جس کا حسن لاجواب و بے مثال ہے اور جس کے وجود سے خوشبو کی لپٹیں آ رہی ہیں میرے والد کے پاس آیا اور اس کے چہرے سے کپڑا ہٹا کر اپنا ہاتھ پھیرا جس سے میرے والد کا چہرا روشن ہو گیا ۔ میں نے آگے بڑھ کر ان کا دامن تھام لیا اور پوچھا آپ کون ہیں ؟

انھوں نے فرمایا:’’تم مجھے نہیں پہچانتے ؟ میں تمہارا نبی محمد بن عبداللہ ( صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم ) ہوں ۔تمہارا باپ بہت گناہ گار تھا لیکن مجھ پہ کثرت سے درود پڑھتا تھا ۔اب جب اس پر مصیبت نازل ہوئی تو اس نے مجھ سے فریاد کی اور جو ہم سے فریاد کرے تو وہ مایوس نہیں رہتا ۔( مکاشفۃ القلوب )

ﷺ…ﷺ…ﷺ

درود شریف سے انعامات

دن میں صرف ایک وقت ہم درود پاک پہ لگادیں اللہ کی قسم! کائنات میں سکون آجائیگا،راحت آجائیگی، ہمارے گھرمنور ہوجائیں گے۔ ہماری زندگی بابرکت ہوجائے گی۔ ہماری نسلیں روشن ہوجائیں گی۔ درود پاک پڑھنے والوں کوغم نہیں آتا، آتے ہیں تو ٹل جاتے ہیں۔ درود پاک پڑھنے والو کومصیبتیں نہیں آتی، آتی ہیں توٹل جاتی ہیں، درود پاک پڑھنے والے کی نسلیں بابرکت ہوتی ہیں۔ اللہ فقر، غربت، تنگدستی، فاقوں اور پریشانیوں سے بچاتا ہے۔ درود پاک پڑھنے والوں کو زندگی میں راحتیں، برکتیں، عزتیں، شان وشوکتیں ملتی ہیں۔درود پاک پڑھنے والوں کی نسلیں ویران نہیں ہوتی، عمروں میں برکت ہوتی ہیں۔ درود پاک پڑھنے والوں کی قبروں میں روشنی ہوتی ہے۔درود کے ساتھ زندگی کی سانسیں ہیں، زندگی کانظام ہے۔

درود و سلام اللہ تعالیٰ کی ان با برکت نعمتوں میں سے ہے جو اپنے دامن میں بے پناہ فیوض و برکات سمیٹے ہوئے ہیں۔ یہ ایسی لازوال دولت ہے کہ جسے مل جائے اس کے دین و دنیا سنور جاتے ہیں۔ درود و سلام محبوبِ خدا صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کی تعریف، اللہ تعالیٰ کی رحمت کا خزانہ، گناہوں کا کفارہ، بلندیِ درجات کا زینہ، قربِ خداوندی کا آئینہ، خیر و برکت کا سفینہ ہے۔ مجلس کی زینت، تنگ دستی کا علاج، جنت میں لے جانے والا عمل، دل کی طہارت، بلاؤں کا تریاق، روح کی مسرت، روحانی پریشانیوں کا علاج، غربت و افلاس کا حل، دوزخ سے نجات کا ذریعہ اور شفاعت کی کنجی ہے۔درود شریف دلوں کا نور ہے گناہوں کا کفارہ ہے۔ زندہ اور مردوں دونوں کیلئے رحمت ہے۔ درود دعا بھی ہے اور دوا بھی۔ درود سوغات بھی ہے۔ درود اللہ اور ملائکہ کی سنت بھی اور قبولیت دعا کا سبب بھی۔

ﷺ…ﷺ…ﷺ

٭…٭…٭

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
TAKWIR Web Designing (www.takwir.com) Copyrights Alqalam Weekly Online