Bismillah

689

۶تا۱۲شعبان المعظم۱۴۴۰ھ  بمطابق ۱۲تا۱۸۱اپریل۲۰۱۹ء

شہدائے نیوزی لینڈ…صلیبی دہشت گردی کا نیا اَلارم (اداریہ)

شہدائے نیوزی لینڈ…صلیبی دہشت گردی کا نیا اَلارم

اداریہ (شمارہ 686)

نیوزی لینڈکے شہر کرائسٹ چرچ میں دو مساجد پر ایک صلیبی دہشت گردی کے منظم قاتلانہ حملے نے پوری دنیا کو سوگ میں مبتلا کردیا ہے، خصوصاً دنیا بھر کے مسلمان اس واقعہ پر غم زدہ ہیں، اور اس کے بعد پورے یورپ میں مسلمانوں کے خوف و ہراس کی فضا میں اضافہ ہوچکاہے، اور کئی دیگر مقامات پر بھی اس حوالے سے ناخوشگوار واقعات پیش آچکے ہیں، جس کی وجہ سے تشویش مزید بڑھ جاتی ہے۔

تفصیلات کے مطابق نیوزی لینڈ کے شہرکرائسٹ چرچ میں ایک عیسائی صلیبی دہشت گردنے نماز جمعہ سے قبل ڈین ایوینیو واقع میں واقع مسجد النور میں گھس کر اندھا دھند فائرنگ کردی۔مسلمانوں کے قتل عام کے ہولناک مناظرآسٹریلوی شہری گورے دہشت گرد برینٹن ٹیرنٹ کی جانب سے بنائی گئی ویڈیو کے ذریعے سامنے آئے جو اس نے فیس بک پر براہ راست نشر کی۔ 16 منٹ سے زیادہ طویل اس ویڈیو میں نظر آتا ہے کہ سفید فام دہشت گرد ایک سیون سیٹر گاڑی میں روانہ ہوتا ہے۔ اس کی پسنجر سیٹ پر تین خودکار بندوقیں رکھی ہیں،جن پر سفید رنگ سے کچھ لکھا ہے۔ فوجی دھنیں سنتے ہوئے وہ ڈین ایونیو پر واقع مسجد النور کی بغلی گلی میں پہنچتا ہے۔ویڈیو بنانے کے لیے کیمرہ عیسائی دہشت گرد نے اپنے سر پر لگا رکھا تھا۔ گورے دہشت گرد نے گاڑی بغلی گلی میں چھوڑی اور ایک آٹو میٹک رائفل ہاتھ میں لیے مسجد کے احاطے میں داخل ہوگیا،مختصر راہداری اور بغلی کمروں میں نمازیوں کو شہید کرنے کے بعد عیسائی دہشت گرد مرکزی ہال میں آیا اور نشانہ لے لے کر لوگوں پر فائرنگ شروع کردی۔ گورے دہشت گرد نے نمازی خواتین اور بچوں کو بھی شہید کیا۔ مسجد سے باہر نکلتے ہوئے اسے سڑک کی طرف مسجد کے ایک کونے پر برقع پوش خاتون نظر آئی جسے اس نے دور سے ہی نشانہ لے کر گولی ماردی۔ النور مسجد سے نکلنے کے چار منٹ بعد یہ ویڈیو ختم ہوجاتی ہے۔النور مسجد پر حملے کے دوران ہی لین ووڈ کی مسجد میں بھی گورے عیسائی دہشت گرد نے گھس کراندھا دھند فائرنگ کی۔ النور مسجد میں 41 اور لین ووڈ مسجد میں 9نمازی شہید ہوئے جن میں خواتین اور بچے بھی شامل ہیں۔

اس واقعے پر عالَم اسلام کو جس بیدار مغزی اور اتحاد و اتفاق کا مظاہرہ کرنا چاہیے تھا، افسوس سے یہ بات کہی جاسکتی ہے، ویسا کچھ بھی سامنے نہیں آسکا، خود ہمارے مملکت پاکستان کے افراد تک اس سانحے میں شہید ہوئے مگر سرکاری سطح پر اس حوالے سے کوئی بھی حوصلہ افزاء قدم نہیں اٹھایاگیا، جس سے ان صلیبی دہشت گردوں کو مزید شہہ ملنے کی راہ ہموار ہوتی نظر آرہی ہے کہ وہ آئندہ بھی اگرایسی کارروائیاں کریں تو ان کے لیے کوئی بڑی رکاوٹ پیش نہ آئے گی ۔ یہ صورت حال امت مسلمہ سے تقاضا کرتی ہے کہ وہ یورپی دنیا کے دہشت گرد چہرے کو اچھی طرح پہچانے، عالَمِ اسلام کے خلاف ان کی بیرونی اور اندرونی دہشت گردی کی روک تھام کے لیے شرعی جہاد کو سامنے رکھے، تاکہ حقیقی دہشت گردی کا سدباب ممکن ہو۔

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
TAKWIR Web Designing (www.takwir.com) Copyrights Alqalam Weekly Online