Bismillah

577

۲۱ تا۲۷ربیع الثانی۱۴۳۸ھ  ۲۰تا۲۶جنوری۲۰۱۷ء

ہر آں چہ ہستی باز آ (دامن تھام صحابہ کا۔ پروفیسر حمزہ نعیم)

ہر آں چہ ہستی باز آ

دامن تھام صحابہ کا۔ پروفیسر حمزہ نعیم (شمارہ 576)

آیت ۱۹۲ ’’ پھر اگر وہ باز آ جائیں تو اللہ غفور رحیم ہے۔‘‘

اَصحاب رسول علیہ و علیہم الصلوۃ و السلام کو خطاب چل رہا ہے۔ مخالفینِ اسلام، اعدائے صحابہ کے بارے میں یہ آیت نازل ہوئی ۔ حکم ہوا اے اصحاب نبی ! سنو یہ جو تمہارے مخالفین ہیں، یہ جنہوں نے تم پر بے حد ظلم ڈھائے ہیں۔ ہم یہ اعلان کر رہے ہیں کہ اگر آج بھی یہ باز آ جائیں ۔ تمہارے نبی پر ایمان لا کر تمہارے ساتھی بن جاویں، تمہارے ساتھ اپنے سابقہ رویے سے معذرت اور توبہ کر لیں تو ہم غفور رحیم ہیں۔ ان کے لئے ابھی مہلت کی گھڑی موجود ہے۔ ابھی رحمت للعالمین خاتم المعصومین ﷺ ان کے سامنے موجود ہیں۔ ان سے اپنے لیے حاضر ہو کر اللہ کی بارگاہ میں دعا کروالیں تو اے اصحاب رسول! نبی پاک ﷺ کی موجودگی کی برکت سے ان کوبھی صحابیت رسول علیہ السلام کا بے مثل تمغہ مل جائیگا۔ اللہ کریم ان کی توبہ قبول کر لے گا۔ اس میں شک نہیں کہ وہ بڑا بخشنے والا بڑی رحمتوں والا ہے۔

نبی مکرم ﷺ کی ۶۳ سالہ مختصر زندگی میں صرف ۲۳ سال دعوت و تبلیغ کے ہیں۔ ان ۲۳ سالوں میں کسی خوش نصیب نے پہلے نمبر اسلام قبول کیا۔ کس نے دوسرے روز اسلام قبول کیا۔ ہاں یہ بھی عجیب بات ہے کہ ثانی رسول سیدنا صدیق اکبر رضی اللہ عنہ پہلے نمبر پر اسلام لائے۔ مشہور یہی ہے مگر محقق علماء نے لکھا ہے کہ یہ بات بعثت رسالت کے وقت کی ہے۔ اس سے بہت پہلے بیرون ملک تجارت کے سفروں کے دوران سیدنا ابو بکر الصدیق رضی اللہ عنہ کو اس زمانے کے مسیحی علمائے شام اور علمائے یمن نے ان کو واضح کر دیا تھا کہ آخری رسول کی بعثت عنقریب مکہ میں ہونے والی ہے اور تمہارے اندر وہ علامات موجود ہیں جو بتا رہی ہیں کہ تم اس پر سب سے پہلے ایمان لاؤ گے۔ اس طرح وہ یقین کر چکے تھے کہ ان کے صاحب خاتم النبیین ہیں۔ تاہم پہلے پہلے اسلام لانے والے حضرات سابقون الاولون ہوں، اسی دنیا میں جنت کی بشارت پانے والے عشرہ مبشرہ ہوں، یوم فرقان غزوہ بدر کے غازی اور شہداء ہوں جن کو بتا دیا گیا کہ اے بدر والو!’’ اب تم جو کچھ بھی کرو میں نے تمہاری مغفرت کر دی ہے۔‘‘ عشرہ مبشرہ میں خلفائے ثلاثہ ابو بکر ، عمر، عثمان رضی اللہ عنہم کے علاوہ سیدنا حضرت علیؓ، سیدنا طلحہ، سیدنا زبیر بھی شامل ہیں اور یہ حضرات اصحاب بدر میں بھی ہیں۔ ام المومنین سیدنا عائشہ بھی اصحاب بدر میں شامل ہیں جن کا مقدس دوپٹہ غازیانِ بدر کے سروں پر پہلا علم اسلام بن کر لہرایا تھا۔ پھر وہ چودہ سو غازیان اسلام جو بیعت رضوان صلح حدیبیہ کے موقع پر رضوان سرٹیفیکیٹ سے سرفراز ہوئے اور ان کے ساتھ فاران کی چوٹیوں سے آخری ہادی و مہدی امام الانبیاء حضرت محمد ﷺ کے ہمراہ اترنے والا دس ہزار قدسیوں کا لشکر ہو۔ فتح مکہ سے قبل ایمان لانے والے عم رسول سیدنا عباس بن عبد المطلب ہوں یا ان کے سفارش یافتہ قائد قریش اور قائد اہل مکہ سیدنا ابو سفیان بن حرب ہوں۔ یا بعد فتح مکہ ایمان لانے والے سردار بنی ہاشم ابن عم رسول سیدنا ابو سفیان بن حارث اور عقیل بن ابی طالب ہوں۔ سادات مکہ ہوں یا ان سرداران ام القری کے غلام اور باندیاں، زید، بلال، عامر بن فہیرہ، یاسر، سمعیہ، زنیرہ اور ام شریک رضی اللہ عنہم ۔

نبی مکرم ﷺ کی زبان وحی ترجمان سے دو مختلف مواقع پر مرحبا کا منفرد خطاب پانے والے دو ماں بیٹا خوشدامنِ رسول سیدنا ہند بنت عتبہ اور خال المومنین سیدنا امیر معاویہ بن ابی سفیان رضی اللہ عنہما حتی کہ نبی کی ایک نظر سے سرفرازحکماً دور رہنے والے جناب وحشی بن حرب… یہ سب لوگ اپنے اپنے مقدر کی نیک ساعات میں کلمہ اسلام سے سرفراز ہو کر صحبت رسول کی بے مثل و بے بہا مقدس چادر میں آ کر ان میں سے کسی کے عیوب اگر ہوں بھی تو وہ جواہر نیرہ میں گئے کیونکہ کلا وعد اللہ الحسنیٰ ۔ اللہ نے جنت کا وعدہ سب سے کر لیا ہے۔ اور حقیقت میں تو وہ سب ازلی ابدی قدسی وجود تھے کہ بہ قول علامہ خالد محمود تربیتی عرصے کی غلطیاں قابل گرفت نہیں ہوتیں۔

یہ ایک لاکھ چوبیس ہزار مقدس وجود اپنے اپنے وقت میں نجوم و اقمار بن کر شمس ختم نبوت کے گرد جگہ پا کر ہادیانِ عالم بن گئے۔ قرآن کریم کلام قدیم میں جگہ جگہ انہی خوش نصیبوں کو رہنما مان کر دونوں جہان کی کامیابی پانے کی دعوت دی جا رہی ہے۔

تو دامن تھام صحابہ کا

لے شوق سے نام صحابہ

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
TAKWIR Web Designing (www.takwir.com) Copyrights Alqalam Weekly Online