Bismillah

664

۸تا۱۴صفر المظفر۱۴۴۰ھ  بمطابق    ۱۹تا۲۵اکتوبر۲۰۱۸ء

اللہ تبارک وتعالیٰ کی تسبیح(آخری قسط) (سنگ میل۔ عبد الحفیظ امیر پوری)

اللہ تبارک وتعالیٰ کی تسبیح(آخری قسط)

سنگ میل ۔  عبد الحفیظ امیر پوری (شمارہ 629)

تسبیح کہتے ہیں، اللہ پاک کی پاکی بیان کرنے کو، جس کا خوبصورت طریقہ ’’سبحان اللہ‘‘ پڑھنا ہے۔ اللہ تبارک و تعالیٰ کا ارشاد گرامی ہے:

تسبّح لہ السمٰوٰت والارض ومن فیہنّ وان من شیئٍ اِلاّ یُسبح بحمدہ ولکن لا تفقہون تسبیحہ۔ (الاسرائ)

ترجمہ: ساتوں آسمانوں اور زمین اور جو لوگ ان میں ہیں سب اسی کی تسبیح کے ساتھ تسبیح کرتے ہیں لیکن تم ان کی تسبیح کو نہیں سمجھتے۔

تعریف کے ساتھ تسبیح کا بہترین جملہ ’’سبحان اللہ وبحمدہ سبحان اللہ العظیم‘‘ ہے۔ امام بخاریؒ نے اسی جملے پر اپنی مستند اور بابرکت کتاب بخاری شریف ختم فرمائی ہے۔ حدیث پاک کے مطابق یہ دو جملے جو زبان پر آسان ہیں۔ اللہ تعالیٰ کو بہت محبوب ہیں اور قیامت کے دن نامۂ اعمال میں بہت بھاری ہیں۔

حضرت ابراہیم علیہ السلام نے حضور پاک صلی اللہ علیہ وسلم کو اس امت کے لئے پیغام دیا کہ جنت کی زمین پر درخت اور پودے اگانے کے لئے ’’سبحان اللہ والحمدﷲ ولا الہ الا اللہ واللہ اکبر‘‘ کا ورد کریں۔

حضرت نوح علیہ السلام نے اپنے بیٹے کو نصیحت فرمائی کہ ’’سبحان اللہ وبحمدہ‘‘ کو نہ چھوڑے کہ اس کلمے کی برکت سے تمام مخلوق کو روزی ملتی ہے۔

حضرت یونس علیہ السلام نے مچھلی کے پیٹ میں اسی لفظ کا سہارا لے کر رابطہ کیا ’’لا الہ الا انت سبحانک انی کنت من الظالمین۔

تمام مخلوق تسبیح کرتی ہے۔ تمام انبیاء علیہم السلام تسبیح فرماتے تھے۔ ’’سبحان اللہ‘‘ اللہ تعالیٰ کے ہاں بہت محبوب ہے اور بہترین صدقہ ہے۔ اللہ تعالیٰ کے مقربین کی تسبیح کو دیکھتے ہیں کہ وہ کن الفاظ سے اللہ تعالیٰ کی پاکی بیان کرتے تھے۔

حملۃ العرش (وہ فرشتے جنہوں نے عرش کو اٹھایا ہوا ہے) کی تسبیح

سُبْحَان اللہ وَالْحَمْدُ لِلّٰہِ وَلاَ اِلٰہَ اِلاَّ اللہ وَاللہ اَکْبَر

ترجمہ: اللہ تعالیٰ پاک ہے اور تمام تعریفیں اللہ تعالیٰ کے لئے ہیں اور اللہ تعالیٰ کے سوا کوئی معبود نہیں اور اللہ سب سے بڑا ہے۔

حضرت میکائیل علیہ السلام کی تسبیح

سُبْحَانَ الْمَعْبُوْدِ بِکُلِّ مَکَان۔ سُبْحَانَ الْمَذْکُوْرِ بِکُلِّ لِسَان

ترجمہ: پاک ہے وہ جو ہر جگہ معبود ہے۔ پاک ہے وہ جس کا ذکر ہر زبان پر ہے۔

حضرت جبرئیل علیہ السلام اور روحانیّون کی تسبیح

سُبْحَانَ الْمَلِکِ الْقُدُّوْس۔ سُبُّوْحٌ قُدُّوْس۔ رَبُّ الْمَلٰئِکَۃِ وَالرُّوْح

ترجمہ: پاک ہے وہ بے عیب بادشاہ، وہ ہر شرک اور عیب سے پاک ہے، رب ہے فرشتوں کا اور روح القدوس کا۔

رضوان (جنت کے نگران) فرشتے کی تسبیح

سُبْحَانَ اللہ مَنْ فِی السَّمَائِ عَرْشُہ۔ سُبْحَانَ مَنْ فِی الْاَرْضِ سُلْطَانُہ۔ سُبْحَانَ مَنْ فِی الْجَنَّۃِ فَضْلُہ

ترجمہ: پاک ہے وہ جس کا عرش آسمان پر ہے، پاک ہے وہ جس کی زمین پر سلطنت ہے، پاک ہے وہ جس کا فضل جنت میں ہے۔

مالک (جہنم کے داروغہ) فرشتے کی تسبیح

سُبْحَانَ مَنْ فِی الْبَرِّ بَدَائِعُہْ۔ سُبْحَانَ مَنْ فِی الْبَحْرِ عَجَائِبُہْ سُبْحَانَ مَنْ فِی النَّارِ عَذَابُہْ

ترجمہ: پاک ہے وہ  خشکی پر جس کی مخلوقات ہیں۔ پاک ہے وہ سمندر میں جس کے عجائبات ہیں۔ پاک ہے وہ آگ میں جس کا عذاب ہے۔

حضرت عزرائیل علیہ السلام اور ان کے معاونین کی تسبیح

سُبْحَانَ مَنْ تَعَزَّزَ بِالْقُدْرَۃِ وَقَہَرَ الْعِبَادَ بِالْمَوْتِ

ترجمہ: پاک ہے وہ کہ قدرت کے ذریعہ جس کا غلبہ ہے اور اس نے بندوں کو قابو کر رکھا ہے موت کے ذریعے۔

حضرت آدم علیہ السلام کی تسبیح

سُبْحَانَ ذِی الْمُلْکِ وَالْمَلَکُوْتِ۔ سُبْحَانَ ذِی الْقُدْرَۃِ وَالْجَبَرُوْتِ۔ سُبْحَانَ الْحَیِّ الَّذِیْنَ لاَیَمُوْتُ

ترجمہ: پاک ہے بادشاہت اور ملکوت والا۔ پاک ہے قدرت اور جبروت والا۔ پاک ہے وہ زندہ جس کے لئے موت نہیں۔

حضرت نوح علیہ السلام کی تسبیح

سُبْحَانَ اللہ ذِی الْمَجْدِ وَالنِّعَمْ۔ سُبْحَانَ ذِی الْقُدْرَۃِ وَالْکَرَمِ۔ سُبْحَانَ ذِی الْجَلَالِ وَالْاِکْرَامِ۔

ترجمہ: پاک ہے بزرگی اور نعمتوں والا۔ پاک ہے قدرت اور کرم والا۔ پاک ہے جلال اور اکرام والا۔

حضرت ابراہیم علیہ السلام کی تسبیح

سُبْحَانَ الْاَوَّلِ الْمُبْدِی۔ سُبْحَانَ الْبَاقِی الْمُغْنِیْ سُبْحَانَ الْمُسَمّٰی قَبْلَ اَنْ یُسَمّٰی۔ سُبْحَانَ الْعَلِیِّ الْاَعْلیٰ سُبْحَانَ اللہ وَتَعَالیٰ

ترجمہ: پاک ہے وہ جو اوّل ہے اور آغاز کرنے والا ہے۔ پاک ہے وہ باقی اور غنی کرنے والا۔ پاک ہے وہ جو نام رکھنے سے پہلے نام والا ہے۔ پاک ہے وہ بلند واعلیٰ۔ پاک ہے اللہ اور بلند ہے۔

حضرت یوسف علیہ السلام کی تسبیح

سُبْحَانَ الَّذِیْ تَعَطَّفَ بِالْعِزِّ وَقَالَ بِہ۔ سُبْحَانَ الَّذِیَْ لَبِسَ الْمَجْدَ وَتَکَرَّمَ بِہٖ ۔ سُبْحَانَ مَنْ لاَّ یَنْبَغِیْ التَّسْبِیْحُ اِلاَّ لَہ۔

ترجمہ: پاک ہے وہ جس نے مہربانی فرمائی قدرت کے ساتھ اور اسے پسند فرمایا۔ پاک ہے وہ جو بلند مرتبے والا ہے اور اس کے ذریعے احسان فرماتا ہے ۔ پاک ہے وہ کہ تسبیح صرف اسی کے لائق ہے۔

حضرت موسیٰ علیہ السلام کی تسبیح

سُبْحَانَ ذِی الْعِزِّ الشَّامِخِ الْمُنِیْفِ۔ سُبْحَانَ ذِی الْجَلاَلِ البَاذِخِ الْعَظِیْم۔ سُبْحَانَ ذِی الْمَلِکِ الْقَاہِرِ الْقَدِیْم۔ سُبْحَانَ مَنْ فِی عُلُوِّہِ دَانٍ وَفِی دُنُوُّہِ عَالٍ۔ وَفِی اِشْرَاقِہٖ مُنِیْرٌ وَفِی سُلْطَانِہِ قَوِیُّ۔ وَفِیْ مُلْکِہِ عَزِیْزٌ۔ سُبْحَانَ رَبِّیَ الْعَظِیْمْ۔

ترجمہ: پاک ہے وہ جو بہت بلند اور اونچی عزت والا ہے۔ پاک ہے وہ جو بہت زبردست اور عظیم جلال والا ہے۔ پاک ہے وہ جو قدیم وقاہر بادشاہت والا ہے۔ پاک ہے وہ جو اپنی بلندی میں قریب ہے اور اپنے قرب میں بلند ہے اور اپنے ظہور میں نور والا ہے اور اپنی سلطنت میں قوت والا ہے اور اپنی بادشاہت میں غلبے والا ہے۔ پاک ہے میرا رب عظمت والا۔

حضرت عیسیٰ علیہ السلام کی تسبیح

سُبْحَانَ الْوَاحِد الاَحَدْ۔ سُبْحَانَ الْبَاقِی عَلی الاَبَد۔ سُبْحَانَ الَّذِیْ لَمْ یَلِدْ وَلَمْ یُوْلَدْ۔ وَلَمْ یَکُنْ لَّہ کُفُوًا اَحَدْ

ترجمہ: پاک ہے وہ ایک ، یکتا۔ پاک ہے وہ ہمیشہ ہمیشہ باقی رہنے والا۔ پاک ہے وہ جس نے کسی کو نہیں جنا اور نہ خود کسی سے جنا گیا اور کوئی اس کا ہمسر نہیں ہے۔

مؤمنین کی تسبیح

نماز کے شروع میں: سُبْحَانَکَ اللّٰہُمَّ وَبِحَمْدِکَ

ترجمہ: اے اللہ تو پاک ہے اور تمام تعریفیں تیرے لیے ہیں۔

رکوع میں: سُبْحَانَ رَبِّیَ الْعَظِیْم

ترجمہ: اے میرے عظمت والے رب تو پاک ہے۔

سجدہ میں: سُبْحَانَ رَبِّیَ الْاَعْلیٰ

ترجمہ: اے میرے رب تو پاک ہے، سب سے بہتر

سب سے افضل سید الانبیاء والمرسلین حضرت محمد صلی اللہ علیہ وسلم کی تسبیح

سُبْحَانَ اللہ وَبِحَمْدِہٖ سُبْحَانَ اللہ الْعَظِیْمِ وَبِحَمْدِہٖ اَسْتَغْفِرُ اللہ وَاَتُوْبُ اِلَیْہ

ترجمہ: پاک ہے اللہ تعالیٰ اور اس کے لئے حمد ہے۔ پاک ہے اللہ عظمت والا اور اسی کیلئے حمد ہے۔ میں بخشش مانگتا ہوں، اللہ تعالیٰ سے اور اسی کی طرف رجوع کرتا ہوں۔

اور اگر آپ کم وقت میں کثیر تعداد کی تسبیح کا ثواب حاصل کرنا چاہتے ہیں تو اس ’’تسبیح‘‘ کو اپنا وظیفہ بنا لیں۔

سُبْحَانَ اللہ وَبِحَمْدِہ عَدَدَ خَلْقِہِ، وَ رِضَا نَفْسِہِ، وَ زِنَۃَ عَرْشِہِ وَ مِدَادَ کَلِمَاتِہِ۔

ترجمہ: اللہ تبارک وتعالیٰ کی تسبیح اور حمد کرتا ہوں۔ اس کی مخلوقات کی تعداد کے برابر۔ اس کی رضا کے موافق۔ اس کے عرش کے وزن کے برابر اور اس کے کلمات کے برابر۔

اللہ تبارک وتعالیٰ ہمیں زیادہ سے زیادہ تسبیح کرنے کی توفیق عطا فرمائیں اور ہمارا شمار ’’مسبحین‘‘ میں فرمائیں۔ آمین

٭…٭…٭…٭

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
TAKWIR Web Designing (www.takwir.com) Copyrights Alqalam Weekly Online