Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

اِحتیاط کریں

 

اِحتیاط کریں!

Madinah Madinah

 

ایک بالکل واضح اور ظاہر سی بات ہے کہ اِنسان جوکچھ دیکھتا ہے ، سنتا ہے اور پڑھتا ہے اُس کا اَثر ضرور قبول کرتا ہے ۔ آپ نے دیکھا ہوگا کہ جولوگ بہت دلچسپی سے ڈرامے اور فلمیں دیکھتے ہیں ، وہ اَنجانے میں پھر اُنہی کے کرداروں کی نقالی شروع کردیتے ہیں ۔ وہ لوگ نہ بھی چاہیں تو اُن کی زبانوں پر وہ ہی باتیں آجاتی ہیں جو انہوں نے دیکھی ہوتی ہیں ۔ پھر کبھی تویہ بھی ہوتا ہے کہ دیکھتے ہی دیکھتے اُن کا لباس ، شکل وصورت اور زبان خود بخود اُسی سانچے میں ڈھلنے لگتی ہے، جو وہ ددیکھتے ، سنتے اور پڑھتے ہیں۔

پھر یہ بھی دیکھیں کہ ہم لوگ کتنے عجیب ہیں ۔ کوئی چیز کھانے سے پہلے تو اَچھی طرح دیکھتے ہیں کہ کہیں خراب نہ ہو ، بدبودار نہ ہو ۔ پھل ہیں تو گلے سڑے نہ ہوں ۔ ہم میں سے کوئی بھی شخص ایسی چیز شوق سے کھانا پسند نہیں کرے گا جو اُس کے جسم اور صحت کے لئے نقصان دِہ اور تباہ کُن ہو ۔ اگر کبھی ہم گلاس میں پانی پینے لگیں اور پانی میں کوئی تنکا اور کچرا نظر آجائے تو ہم فوراًوہ پانی گرادیتے ہیں ۔ ڈاکٹر صاحبان بھی ہمیشہ اپنے مریضوں کو یہ تاکید کرتے رہتے ہیں کہ خراب اور مضر صحت چیزیں استعمال نہ کریں ۔ ہر ایسی چیز سے پرہیز کریں جو آپ کو بیمار کرسکتی ہو۔

کھانے پینے کے بارے میں تو ہم اتنی اِحتیاط کرتے ہیں لیکن دوسری طرف ہم خود دیکھنے، سننے اور پڑھنے کے بارے میں کوئی اِحتیاط نہیں کرتے ۔ جیسا ناول یا رِسالہ ہمارے ہاتھ آجائے ہم پڑھ ڈالتے ہیں ، جو خرافات اور لغویات دیکھنے اور سننے کو مل جائیں ، بڑے شوق سے انہیں دیکھتے اور سنتے ہیں۔ ساتھ ساتھ ہم یہ بھی سمجھتے ہیں کہ بس یہ چند منٹوں کی تفریح ہی تو ہے اور یہ بھول جاتے ہیں کہ اِن چیزوں کے اَثرات کتنے گہرے اور تباہ کن ہیں ۔ یہ اِیمان لیواجراثیم ہماری روح اور ہمارے اِیمانی جذبات کے لئے کتنے نقصان دِہ ہیں۔

آج اِنسانیت کے دشمنوں نے ایسی چیزیں گھر گھر پہنچادی ہیں ،جن کو دیکھنے ، سننے اور پڑھنے کے بعد انسان کے دل سے تقویٰ ، خوفِ خدا اور فکرِ آخرت سب کچھ رخصت ہوجاتا ہے ۔بلکہ میں تو یہ کہوں گا کہ وہ انسان رہتا ہی نہیں بلکہ شیطان بن جاتا ہے ۔ آخر آپ بھی تو اَخبارات میں آئے روز چوری، ڈکیتی اور قتل وغارت گری کی خبریں پڑھتے ہیں ۔ بھلایہ کام کسی انسان کے ہوسکتے ہیں ؟ہر گز نہیں ۔ یہ اِنسان غلط چیزیں دیکھنے، بُری باتیں سننے اور نقصان دِہ رسالے پڑھنے سے ہی شیطان بنتے ہیں ۔

آپ سوچیں تو سہی ، ایک وقت تھا کہ صرف سترہ سال کا جوان محمد بن قاسم رحمہ اللہعرب سے مسلمان بہنوں کو راجا داہر کی قید سے آزاد کروانے اپنے پورے لشکر کے ساتھ سندھ، ملتان پر حملہ آور ہوا تھا ۔ اور آج کا مسلمان کہلانے والا جوان ایسا ہے کہ خود اس کی گلی اور محلے کی مسلمان بہنیں اس سے محفوظ نہیں ۔ اتنی ترقی سے اتنا تنزّل ، اتنی بلندی سے اتنی پستی ، اتنے عروج سے اتنا زوال کیسے ہوا ؟ خدارا!سوچیں اور ضرور سوچیں کہ یہ ہمارے غلط دیکھنے ، غلط سننے اور غلط پڑھنے کے ہی خوفناک نتائج ہیں۔

آئیں!آج عہد کریں کہ ہم اپنی قوم اور اپنے آپ کو مزید تباہ نہیں ہونے دیں گے ۔ ہم صرف’’مدینہ، مدینہ‘‘جیسے رِسالے اور دیگر اچھی اچھی کتابیں پڑھیں گے تاکہ ہماری روح بیمار نہ ہو اور ہمارے ایمانی جذبات تباہ نہ ہوں ۔

اللہ تعالیٰ ہم سب کا حامی وناصر ہو۔ آمین ثم آمین

٭…٭…٭

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor