Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

شہر مدینہ …سرکارِ مدینہ ﷺ کی نظر میں ۔۴

 

شہر مدینہ …سرکارِ مدینہ ﷺ کی نظر میں

Madinah Madinah

مدینہ منورہ کی طرف ہجرت کا حکم :

نبی صلی اللہ علیہ وسلم کو اللہ تعالیٰ کی طرف سے اس مقدس بستی کی طرف ہجرت کرنے کا حکم دیا گیا ، چنانچہ حدیث شریف میں ہے:

عن ابی ہریرۃ رضی اللّٰہ عنہ قال قال رسول اللّٰہ صلی اللّٰہ علیہ وسلم امرت بقریۃ تأکل القری یقولون یثرب وہی المدینۃ (بخاری باب فضل المدینۃ و انہا تنفی الناس ۱؍۲۵۲۔ مسلم باب المدینۃ تنفی خبثہا ویسمی طایۃ وطیبۃ ۱؍۴۴۴)

’’ حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے انہوں نے فرمایا : نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کا ارشاد ہے کہ مجھے ایسی بستی کی طرف (ہجرت کا ) حکم دیا گیا جو دوسری بستیوں کو کھا جائے گی اور وہ مدینہ ہے ۔‘‘

مدینہ منورہ اور مسجد نبوی میں نماز پڑھنے کا ثواب:

مدینہ منورہ میں نماز پڑھنے کا ثواب ایک حج اور عمرہ کے برابر ہے ، جیسا کہ حضرت عمر رضی اللہ عنہ سے روایت ہے ،وہ فرماتے ہیں:

میں نے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم سے سنا ، درانحالیکہ آپ صلی اللہ علیہ وسلم وادی عقیق میں تھے ، آپ صلی اللہ علیہ وسلم فرماتے تھے کہ میرے پاس ایک شخص آیا اور اس نے کہا کہ اس مبارک وادی ( مدینہ منورہ)میں نماز پڑھو اس میں نماز پڑھنے کا ثواب ایک حج اور عمرہ کے برابر ہے  وہ حدیث مندرجہ ذیل ہے :ـ

عن ابن عباس رضی اللہ عنہ قال قال عمر ابن الخطاب رضی اللہ عنہ سمعت رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم وہو بوادی العقیق یقول اتانی اللیلۃ آت من ربی فقال صل فی ہذا الوادی المبارک و قل عمرۃ فی حجۃ و فی روایۃ قل عمرۃ وحجۃ(بخاری باب قول النبی صلی اللہ علیہ وسلم العقیق ۲؍۱۳۵)

علاوہ ازیں اسی مقدس زمین میں مسجد نبوی واقع ہے ، جس میں نماز پڑھنے کا ثواب ایک ہزار نمازوں کے برابر ہے اور بعض روایات میں ایک لاکھ نمازوں کے برابر ہے ، وہ حدیث درج ذیل ہے:

صلاۃ فی مسجدی ہذا تعدل الف صلاۃ فیما سواہ الاالمسجد الحرام (مسلم ۱؍۴۴۷)

’’ میری اس مسجد میں ایک نماز کا ثواب ہزار نمازوں کے برابر ہے جو اس کے علاوہ دوسری جگہوں میں پڑھی جائیں سوائے مسجد حرام کے‘‘۔ ( شامی ۲؍۴۲۲)

علامہ شامی ؒ نے یہ حدیث افضل المساجد ( سب سے افضل مسجد) کی بحث میں ذکر کی ہے ، چنانچہ کہا ہے کہ سب سے افضل مسجد مسجد حرام ہے اس کے بعد مسجد نبوی ہے ، جیسا کہ اس حدیث سے پتہ چلتا ہے اس لیے کہ اس میں مسجد نبوی میں نماز پڑھنے کا ثواب ہزار نمازوں کے برابر بتایا گیا ہے ، مگر مسجد حرام مستثنیٰ ہے ، اس سے معلوم ہوتا ہے کہ مسجد حرام میں نماز پڑھنے کا ثواب اس سے زیادہ ہے ۔

روضۂ مبارک کی زیارت کا ثواب:

اس مبارک سرزمین میں روضۂ نبی صلی اللہ علیہ وسلم ہے جس کے متعلق آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا کہ جس شخص نے میری زیارت کے لیے سفر کیا اور سفر سے اس کا مقصد میری زیارت ہی تھا تو وہ قیامت کے دن میرا پڑوسی ہو گا ۔

ایک اور حدیث میں ہے جس شخص نے حج کیا اور میری قبر کی زیارت کی تو وہ ایسا ہے جیسا کہ زندگی میں اس نے میری زیارت کی ۔ چنانچہ مشکوٰۃ شریف میں ہے :

عن رجل من آل الخطاب عن النبی صلی اللہ علیہ وسلم قال من زارنی متعمد ا کان فی جواری یوم القیامۃ( شعب الایمان باب فضل الحج والعمرۃ ۶؍۴۸)

’’ خطاب کی اولاد میں سے ایک شخص سے روایت ہے نبی صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا : جس شخص نے بقصد وار ادہ میری زیارت کی تو وہ قیامت کے دن میرا پڑوسی ہو گا ‘‘۔

 عن ابن عمر مرفوعا من حج فزار قبری بعد موتی کمن زارنی فی حیاتی ( شعب الایمان باب فضل الحج والعمرۃ ۶؍۴۸)

’’ حضرت ابن عمررضی اللہ عنہ سے مرفوعاً روایت ہے کہ آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا جس شخص نے حج کیا اور مرنے کے بعد میری قبر کی زیارت کی تو وہ ایسا ہے جیسا کہ میری زندگی میں اس نے میری زیارت کی ‘‘۔

(جاری ہے)

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor