Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

دشمن تو دشمن ہی رہے گا! (نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی)

Naqsh-e-Jamal 479 - Mudassir Jamal Taunsavi - Dushman to Dushman hi Rahe ga

دشمن تو دشمن ہی رہے گا!

نقش جمال .مدثر جمال تونسوی (شمارہ 479)

ماناکہ ہم مسلمانوں میں بہت سی کمزوریاں پیدا ہو چکی ہیں، مسلمانوں کاشیرازہ بکھرا ہوا ہے، مسلمانوں کے پاس کوئی متحدہ قوت نہیں ہے، مسلمانوں میں ایمانی، اخلاقی اور مادی لحاظ سے تنزلی اورانحطاط غالب ہے، مسلمان آزمائش کے ایسے دور سے گزر رہے ہیں جس میں ہرطرف سے مختلف فتنوں نے انہیں گھیر رکھا ہے، کہیں قتل وغارت گری کافتنہ ہے تو کہیں مال ودولت کا فتنہ ہے، کہیں بدعملی کافتنہ ہے تو کہیں منافقت کافتنہ ہے، ان تمام فتنوں نے امت مسلمہ کو بے حد نقصان پہنچایا ہے

مگر اس سے یہ تو بہرحال لازم نہیں آتا کہ مسلمان اپنے دشمنوں سے غافل ہوجائیں؟ اپنے دشمنوں کو دشمن سمجھنا چھوڑ دیں؟ بلکہ اس وقت تو زیادہ لازم ہوجاتا ہے کہ اپنے دشمنوں کو پہچاناجائے اور  ان کے مقابلے کی تدابیراختیار کی جائیں۔

آپ خود ہی بتائیے کہ جب آپ قوت میں ہواور اس وقت آپ کا دشمن آپ کے خلاف قسما قسم کی سازشیں کرتا ہو اور آپ کے خلاف مختلف قسم کے دشمنوں کو اکٹھا کرتا ہو تواب آپ خود اندازہ لگایئے کہ جب آپ کمزور ہوچکے ہیں تو اس وقت وہ دشمن آپ کے خلاف کس قدر دانت تیز کرچکا ہوگا؟ اورا س وقت وہ آپ کے خلاف کیا کچھ کیا کررہا ہوگا؟ جب آپ کی قوت وطاقت کے وقت وہ دشمنی سے باز نہیں آیا تو کیا وہ آپ کی کمزوری کے وقت آپ کوآرام سے رہنے دے گا؟؟

تو سنئے! کہ یہودی ، مسلمانوں کے ایسے ہی دشمن ہیں، ان کا دشمنی اس وقت سے شروع ہوگئی تھی جب دین اسلام کا آغاز ہوا، جب ہمارے پیارے نبی جناب محمدکریمﷺ کو نبوت ورسالت کامنصب عطاء ہوا، وہ اسی دن سے حسد کی وجہ سے مسلمانوں کی عداوت اپنے سینوں میں جماکر بیٹھ گئے اورجب تک یہ اسلام اورمسلمان موجود ہیں ان کی عداوت باقی رہے گی اورچونکہ اسلام نے قیامت تک باقی رہنا ہے اس لیے یہود کی طرف سے مسلمانوں کے ساتھ دشمنی بھی باقی رہنی ہے اورتاریخ کے تمام ادوار اس حقیقت کے گواہ ہیں۔

سورہ مائدہ میں اللہ تعالیٰ نے بڑی صراحت کے ساتھ بیان کردیا کہ:

یہودی اورمشرکین، ایمان والوں کی دشمنی میں سب سے زیادہ سخت ہیں!

آپ خود بتلائیے:

مدینہ منورہ میں جب مسلمان قوت پکڑ چکے تھے تو اندرون خانہ کس نے مسلمانوں کے خلاف سازشیں کیں؟

کس نے رسول اللہﷺ کو قتل کرنے کے خفیہ منصوبے بنائے اورباربار بنائے؟

کس نے رسول اللہﷺ کی ہجوومذمت کواپنا مشن بنائے رکھا؟؟

کس نے رسول اللہﷺ کے دشمن مشرکین کو باربار مسلمانوں کے خلاف جنگ پرابھارا؟

کس نے مسلمانوں میں موجود منافقین کو ٹھکانے اور پشت پناہی فراہم کی؟

ان تمام سوالوں کا ایک ہی جواب ہے کہ وہ: یہودی تھے۔

ان کے بارے میں قرآن کریم نے بتلادیا ہے کہ :

جب بھی ان کے پاس کوئی رسول آتا ہے اوروہ ایسے احکام پیش کرتا ہے جو ان کی خواہشات کے مطابق نہیں ہوتے تو وہ ان رسولوں کے ساتھ متکبرانہ برتاؤ کرتے ہیں اور پھر کچھ لوگ تو صرف اس رسول کو جھٹلانے پر اکتفاء کرتے ہیں جب کہ کچھ بدبخت تو اس سے آگے بڑھ کر ان رسولوں کو قتل کرنے پر آمادہ ہوجاتے ہیں!

جناب رسول اللہﷺ نے بھی متنبہ فرمایا:

ان الیہود قوم حسد(صحیح ابن خزیمہ)

سچی بات یہ ہے کہ یہودی ایک حاسد قوم ہے

آخر کوئی وجہ تو ہے کہ آخری زمانے میں ایک وقت وہ بھی آئے گا کہ کوئی پتھر اوردرخت(سوائے غرقد نامی درخت کے) بھی یہودیوں کو پناہ نہیں دے گابلکہ جب بھی کوئی یہودی کسی پتھر یا درخت کے پیچھے چھپے گا تو خود وہ پتھر اوردرخت اس کے راز کو فاش کرکے مسلمان کو بلائے گا کہ : اے مسلم! یہ میرے پیچھے یہودی چھپا بیٹھا ہے اس کو قتل کردے!!

یہ اس لیے کہ وہ مسلمانوں کے بدترین اورسخت ترین دشمن ہیں، روز اول سے ان کی یہ کاوش رہی ہے کہ مسلمانوں کو مسلمان نہ رہنے دیا جائے، بالفاظ دیگر وہ پوری طرح شیطان کے راستے پر چل پڑے کہ جس طرح شیطان جب اللہ تعالی کی درگاہ سے دھتکار دیا گیا تو اس نے کہا کہ میں اب انسانوں کو بھی ضرور گمراہ کروںگا گویا :

خود تو ڈوبے ہیں صنم

تمہیں بھی لے ڈوبیں گے

اسی طرح یہودیوں نے یہ فیصلہ کیا کہ ہم تو نبی آخرالزمانﷺ پر ایمان نہیں لائے بلکہ حسد میں مبتلا ہو کران کو جھٹلابیٹھے اب کسی مسلمان کو بھی مسلمان نہیں رہنے دیں گے بلکہ ہرممکن کوشش کریں گے کہ وہ کسی طرح اسلام سے واپس پھر جائیں۔ قرآن کریم نے ان کی اسی نوع کی ایک سازش کو یوں بیان کیا ہے:

اہل کتاب ایک دوسرے سے کہتے ہیں کہ جو(کتاب یعنی قرآن) مومنوں پر نازل ہوئی ہے اس پر دن کے شروع میں تو ایمان لے آیا کرو اور دن کے آخر میں انکار کردیا کرو تاکہ وہ (مسلمان، اسلام سے)برگشتہ ہوجائیں! (سورہ آل عمران:۷۲)

بظاہر بڑے بڑے دعوی کرناان کا شیوہ ہے مگر عمل کے وقت صفر ثابت ہوتے ہیں۔ مسلمانوں سے کہاکرتے تھے کہ ہم تو اللہ تعالیٰ کے محبوب ہیں، اس کے چہیتے ہیں، ہم اچھے ہیں تم برے ہو، اللہ تعالی کو ناپسند ہو، مگر جب ان سے کہاگیا کہ اگر تم اس دعوے میں سچے ہوتو اپنے لیے موت مانگ دیکھو! مگر اللہ تعالیٰ کے علم میں تھا اوران کے کرتوت اس کے گواہ تھے کہ یہ کام نہ ان سے ہونا تھا اور نہ ہی ہوا۔

جبکہ مسلمانوں کو ایسا ایمان اورایسا نبی ملا کہ موت ان کے لیے محبوب جاں بن گئی وہ زندگی سے زیادہ موت سے محبت کرنے والے بنے اورپھر جس نبی کے صدقے انہیں یہ ایمان ملااس کی ناموس پر مر مٹنا تو ان کے نزدیک سب سے زیادہ محبوب ہوگیا۔ بقول شاعر:

کس نے ذروں کو اٹھایا اور صحرا کر دیا

کس نے قطروں کو ملایا اور دریا کردیا

زندہ ہوجاتے ہیں جو مرتے ہیں اُن کے نام پر

اللہ، اللہ! موت کو کس نے مسیحا کر دیا؟

ایک طرف یہ سب حقائق اوردوسری جانب ہم مسلمان اپنا موجودہ معاملہ دیکھیں تو عجیب کیفیت نظر آتی ہے، ہم آپس میں دست وگریباں ہونے کو دوڑے چلے جارہے ہیں مگر اپنے اصلی دشمنوں کو پہچاننا اوران سے نمٹنا مشکل ہوتا جارہا ہے۔ کب ہم سوچیں گے کہ آج بھی یہ یہودی اوران کے چیلے ہمارے دشمن ہیں اور وہ اسی نہج پر ہمارے اندر پھوٹ ڈلوارہے ہیں، وہ آج بھی ہمارے اندر دشمنی کی آگ بھڑکانے پر پورا زور صرف کررہے ہیں، وہ آج بھی مسلمانوں کو اسلام سے محروم کرنے کی تگ ودو میں مصروف ہیں، وہ آج بھی مشرکین کو مسلمانوں کے خلاف جنگ پر ابھاررہے ہیں اوروہ آج بھی منافقین کو پیٹھ تھپک رہے ہیں تاکہ وہ مسلمانوں کے اندر رہتے ہوئے ان کے ایمان کوبرباد کردیں، ایسے میں ان کے حسد وعداوت اورشر سے بچنا ہے تو اس کاایک ہی حل ہے کہ اپنے دین اوراپنے ایمان اوراپنے جہاد کے ساتھ نہایت مضبوط اورغیرمشروط وابستگی اختیار کی جائے اوران کے سازشوں کا شکار ہونے کے بجائے جہاد کے ذریعے انہیں بھرپور سبق سکھایاجائے کیوں کہ جہاد سے یہودیوں کی جان جاتی ہے اور قرآن نے صاف کہا ہے:

’’یہ سب جمع ہوجائیں تب بھی آمنے سامنے مسلمانوں کا مقابلہ نہیں کرسکتے ‘‘(سورہ الحشر)

ہاں اگر خود مسلمان ہی ان کے مقابلے میں جانے سے اورانہیں اپنا دشمن باور کرنے سے کترانے لگیں تو پھر کیا کہاجاسکتا ہے؟

٭…٭…٭

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor