Bismillah

655

۲۱تا۲۷ذوالقعدہ ۱۴۳۹ھ  بمطابق    ۱۰تا۶ااگست۲۰۱۸ء

مودی کے دورہ پر مقبوضہ کشمیر فوجی چھاؤنی میں تبدیل،مزید4 کشمیری شہید

(شمارہ 645)

مودی کے دورہ پر مقبوضہ کشمیر فوجی چھاؤنی میں تبدیل،مزید4 کشمیری شہید

سوپورمیں9سالہ طالبعلم ،کپواڑہ میںفرضی آپریشن میں3 نوجوانوں فائرنگ کا نشانہ بنایا گیا،وادی بھر میں حالات سخت کشیدہ،سرینگر میں بھاری نفری تعینات
مودی کا قاتل قاتل کے نعروں سے استقبال،وادی میں مکمل ہڑتال،کرفیو جیسی پابندیاں،پرچے ملتوی،انٹرنیٹ موبائل سروس بند، جھڑپوں میںمتعدد زخمی،6 گرفتار

سرینگر(نیٹ نیوز) بھارتی وزیراعظم مودی کے دورہ مقبوضہ کشمیر کے موقع پر وادی فوجی چھاؤنی میں تبدیل، سرینگر میں فوج کی بھاری نفری تعینات، جھڑپوں اور فرضی آپریشن کے دوران قابض فورسز نے 9 ویں جماعت کے طالبعلم سمیت 4 بے گناہ کشمیریوں کو شہید کردیا جبکہ جھڑپوں میں متعدد زخمی ہوگئے، سرچ آپریشن میں6 نوجوانوں کو گرفتار کرکے نامعلوم مقام پر منتقل کردیا گیا، بھارتی وزیراعظم کا مودی کا قاتل قاتل کے نعروں سے استقبال،وادی میں مکمل ہڑتال،کرفیو جیسی پابندیاں،پرچے ملتوی،انٹرنیٹ موبائل سروس بنددوسری جانب مقبوضہ وادی میں رائفلز چھیننے کے واقعات بھارتی فوج کے لئے بڑا چیلنج بن گئے۔  تفصیلات کے مطابق مقبوضہ کشمیر کے علاقے پائین میں بھارتی فوج اور کشمیریوں کے مابین زبردست جھڑپیں ہوئی ہیں۔ اس دوران بھارتی فورسز نے بدترین لاٹھی چارج کیا اور آنسو گیس کی شیلنگ کی جس سے متعدد کشمیری زخمی ہو گئے جبکہ سوپورمیں بھارتی فوج نے فائرنگ کر کے 9سالہ طالب علم کو شدید زخمی کر دیا جو بعد ازاں زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے جام شہادت نوش کرگیا۔پائین علاقہ میں کشمیریوں کی کثیر تعدا دنماز فجر کے بعد ہی سڑکوں پر نکل آئی اور بھارتی فوج اور کٹھ پتلی حکومت کیخلاف شدید نعرے بازی کی گئی۔ بھارتی فوج نے نہتے کشمیریوں کو منتشر کرنے کیلئے وحشیانہ ظلم و بربریت کا مظاہرہ کرتے ہوئے لاٹھی چارج کیا اور آنسو گیس کی شیلنگ کی جس سے متعدد کشمیری زخمی ہو گئے۔ پائین علاقہ میں تاحال ماحول سخت کشیدہ ہے۔ قابض بھارتی فورسز نے ضلع کپوارہ میں ماہ رمضان کے دوسرے روز مزید تین کشمیری نوجوانوں کو شہید کردیا ہے۔  ان نوجوانوں کو ضلع کے علاقے ویلگام ہندواڑہ میں فوجی آپریشن کے دوران شہید کیا گیا۔ادھر مقبوضہ کشمیر میں  مجاہدین  کی طرف سے بھارتی پولیس کی سروس رائفلز چھیننے کے واقعات ہندوستانی فوجی حکام کیلئے بہت بڑا چیلنج بن گئے۔ پچھلے تین ہفتوں میں مختلف واقعات میں 8رائفلیں اڑا لی گئیں جبکہ گزشتہ تین برسوں میں 271رائفلیں چھینی جاچکی ہیں۔ کشمیری مجاہدین اسلحہ چھیننے کے بعد انہی ہتھیاروں کو بھارتی فوج کیخلاف استعمال کرتے ہیں۔ رپورٹ کے مطابق بھارتی فورسز کا کہنا ہے کہ اہلکاروں سے چھینے گئے ہتھیاروں میں اے کے 47، ایس ایل آر، انساس، کاربائین اور گیس گن وغیرہ شامل ہیں۔ یہ رجحان برہان وانی کی شہادت کے بعد سے شروع ہونے والے مظاہروں کے بعد سامنے آیاجو اس وقت بہت شدت اختیار کر چکا ہے۔ 25اپریل کومجاہدین نے وسطی ضلع بڈگام کے تحت گوری پورہ علاقہ میں پولیس اہلکاروں سے چار سروس رائفلیں چھین لی تھیں۔رپورٹ کے مطابق جے کے آرمڈ پولیس کی 13ویں بٹالین سے وابستہ اہلکاروں سے چار رائفلیں چھین لینے کے اس واقعہ کے سلسلہ میں مقدمہ درج کیا گیا اور متعلقہ پولیس اہلکاروں سے پوچھ گچھ کی گئی لیکن تین ہفتے گزرنے کے بعد بھی ہتھیار چھین لینے کے ان واقعات میں کوئی پیش رفت نہیں ہو سکی ہے۔ علاوہ ازیں  مقبوضہ کشمیر جمعہ کو فلسطینی عوام سے یک جہتی کا اظہار کیا گیا۔ اسرائیلی جارحیت کے نتیجے میں نہتے فلسطینیوں کی شہادت پر جمعہ کو مقبوضہ کشمیر بھر میں احتجاج کیا گیا۔ جلسے جلوس اور مظاہروں میں عالمی برادی سے مطالبہ کیا گیا کہ نہتے فلسطینیوں کا قتل عام بند کر ایا جائے۔ تمام چھوٹے بڑے قصبہ جات اور شہروں میں پروقار اور پرامن مظاہروں کا اہتمام کیا گیا۔متحدہ مزاحمتی قیادت سید علی گیلانی، ڈاکٹر میرواعظ محمد عمر فاروق اور محمد یسین ملک نے اسرائیلی صہونیت کی ننگی جارحیت کے نتیجے میں نہتے فلسطینیوں کو بے دردی کے ساتھ قتل کرنے کے علاوہ سینکڑوں لوگوں بشمول خواتین اور شیر خوار بچوں کو شدید طور زخمی کئے جانے کی ظالمانہ کارروائیوں کی مذمت کرتے ہوئے مظاہرں کی اپیل کی تھی۔ بھارتی فورسز کے ہاتھوں بیگناہ کشمیریوں کی شہادتوں او ر مظالم کے خلاف گزشتہ روز بھی سرینگر، انت ناگ،پلوامہ ،شوپیاں، کولگام ، بڈگام، بانڈی  پورہ اور اوڑی سمیت مختلف علاقوں میں احتجاجی ریلیاں نکالی گئیں اور مظاہرے کئے گئے۔اس دوران مختلف مقامات پر بھارتی فورسز کے ساتھ جھڑپوں میں متعدد افراد زخمی ہوئے۔لوگوں نے بھارت کیخلاف شدید نعرے بازی کی اور فورسز پر پتھراؤ کیا جس کے جواب میں بھارتی فورسز نے وحشیانہ آنسو گیس کی شیلنگ کے ساتھ لاٹھی چارج کیا۔ شوپیاں میں دن پھر جھڑپوں کا سلسلہ جاری رہا۔ادھر وادی کے کئی علاقوں میں انٹر نیٹ اور موبائل سروس بدستور معطل ہے۔

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
TAKWIR Web Designing (www.takwir.com) Copyrights Alqalam Weekly Online