Bismillah

652

۶ تا۱۲ذوالقعدہ ۱۴۳۹ھ  بمطابق    ۲۰تا۲۶جولائی۲۰۱۸ء

اسرائیلی فوج کا وحشیانہ کریک ڈاؤن، 355فلسطینی گرفتار، غزہ پرڈرون کے ذریعے بمباری،2شہید

(شمارہ 650)

اسرائیلی فوج کا وحشیانہ کریک ڈاؤن، 355فلسطینی گرفتار، غزہ پرڈرون کے ذریعے بمباری،2شہید

شہید نوجوانوں کو خانیونس میں نشانہ بنایا ،آتشی گیر کاغذی جہازوں سے یہودی کالونیوں میں 23 مقامات پرآگ بھڑک اٹھی،یہودی شرپسندوں کے فلسطینی گاڑیوں پرحملے
گرفتاریاں غرب اردن میں کی گئیں،صہیونی جلادوں کا فلسطینی پرجیل میں ہولناک تشدد سے حالت غیر ،العراقیب کے فلسطینی باشندے130 ویں بار اپنے گھروں سے محروم

مقبوضہ بیت المقدس(نیٹ نیوز) نہتے فلسطینی مظاہرین پر اسرائیلی فورسز کی جانب سے تشدد کا سلسلہ جاری، صہیونی فورسز نے وحشیانہ کریک ڈاؤن کے دوران 355 افراد کو گرفتار کرلیا جبکہ بمباری سے 2 فلسطینی نوجوان شہید اور درجنوں زخمی ہوگئے، غزہ کی پٹی پر ڈرون کے ذریعے بمباری ،صہیونی جلادوں کا فلسطینی پرجیل میں ہولناک تشدد، حالت غیر ہوگئی،العراقیب کے فلسطینی باشندے130 ویں بار اپنے گھروں سے محروم۔ تفصیلات کے مطابق مشرقی غزہ کے علاقے خان یونس میں احتجاجی مظاہروں پر اسرائیلی فوجیوں کی فائرنگ اور شیلنگ کے نتیجے میں 2 فلسطینی شہید جبکہ 300 سے زائد شہری زخمی ہوگئے۔مقبوضہ فلسطین   کے شہر غزہ میںاحتجاجی مظاہروں پر صیہونی فوجیوں کی بے دریغ فائرنگ اور شیلنگ سے 13 برس کے بچے سمیت سے دو فلسطینی شہری شہید اور 3 سو سے زائد زخمی ہوگئے۔غیر ملکی خبر رساں ادارے کا کہنا تھا کہ فلسطین کے علاقے خان یونس کے مشرقی حصّے میں غاصب صیہونی ریاست کے فوجیوں کی گولیوں کی زد میں آکر ایک 13 سالہ نوجوان شہید ہوگیا، تاحال شہید بچے کی شناخت نہیں ہوسکی ہے۔اسرائیلی فوجیوں نے نوجوان کے سر میں گولی ماری تھی۔ فلسطین کی وزارت صحت کا کہنا تھا کہ اسرائیلی فورسز کی فائرنگ سے مظاہرے میں شریک 24 سالہ نوجوان محمد فوزی بھی سر اور جسم کے دیگر حصّوں میں گولیاں لگنے باعث موقع پر شہید ہوگیا۔غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق احتجاج کرنے والے فلسطینیوں پر اسرائیلی افواک کی وحشیانہ فائرنگ اور شیلینگ کی زد میں آکر 300 سے زائد فلسیطینی شہری زخمی ہوئے ہیں، فلسطینی وزارت صحت کا کہنا ہے کہ زخمی ہونے والے 4 افراد کی حالت نازک ہے۔ادھر فلسطین میں اسرائیلی فوج کا وحشیانہ کریک ڈاؤن روز مرہ کی بنیاد پر جاری ہے۔ ایک رپورٹ کے مطابق جون 2018ء کے دوران قابض اسرائیلی فوج نیدریائے اردن کے مغربی کنارے، مقبوضہ بیت المقدس اورغزہ کی پٹی سے 15 بچوں اور 13 خواتین سمیت 355 فلسطینیوں کو حراست میں لینے کے بعد جیلوں میں ڈال دیا۔القدس اسٹڈی سینٹر برائے امور اسرائیل وفلسطین کی طرف سے جاری کردہ رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ جون کے مہینے میں غرب اردن کے شمالی شہر طولکرم میں 56 فلسطینیوں کو حراست میں لیا گیا۔جون میں کسی ایک شہر سے سب سے زیادہ گرفتاریاں طولکرم سے کی گئیں جہاں سے 40 فلسطینی مزدوروں کو اندرون فلسطین بغیر اجازت داخل ہونے کے الزام میں پکڑا گیا۔ اس کے بعد الخلیل سے 54 اور بیت لحم سے 52 فلسطینی شہری گرفتار کیے گئے۔رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ القدس گورنری سے 43 فلسطینیوں کو حراست میں لیا گیا۔ رام اللہ سے 41، نابلس سے 40 اور جنین سے 19 فلسطینی گرفتار کیے گئے۔قلقیلیہ سے 8، طوباس سے چھ، سلفیت سے تین، اریحا سے دو اور اندرون فلسطین سے ایک فلسطینی کو حراست میں لیا گیا۔غزہ کی پٹی کی سرحد سے 10 فلسطینیوں کو دراندازی کی کوشش کے الزام میں گرفتار کیا گیا۔ اس کے علاوہ تین فلسطینی ماہی گیروں کو غزہ سے گرفتار کیا گیا۔قابض فوج نے گھر گھر تلاشی کی کارروائیوں میں بچوں اور خواتین کو گرفتار کرنے کا سلسلہ بھی جاری رکھا۔ جون کے دوران قابض فوج نے 18  سال سے کم عمر کے 15 بچوں کوگرفتار کیا۔ القدس گورنری سے چر بچوں کو حراست میں لیا گیاجب کہ نابلس سے تین بچے گرفتار کیے گئے۔قابض فوجیوں نے تلاشی کے دوران جون میں 13 خواتین کو بھی گرفتار کرکے پابند سلاسل کیا۔ جون میں گرفتار کیے گئے بعض فلسطینیوں کوبعد ازاں رہا کردیا کردیا گیا دسیوں شہری اب بھی بغیر کسی الزام کے پابند سلاسل ہیں۔ادھر مسلح اسرائیلی فوج کی سکیورٹی میں 133یہودی قبلہ اول میں داخل، اشتعال انگیز حرکات کا ارتکاب کیا اور مقدس مقام کی بے حرمتی کی۔علاوہ ازیںفلسطین کے علاقے غزہ کی پٹی پر اسرائیلی فوج نے متعدد مقامات پر بمباری کی ہے جس کے نتیجے میں فلسطینی تنصیبات کو نقصان پہنچا ے۔مرکزاطلاعات فلسطین کے مطابق قابض اسرائیلی فوج نے جمعہ کو علی الصباح مشرقی غزہ میں گیسی غبارے اور آتش گیر کاغذی جہاز چھوڑنے والے فلسطینیوں پر وحشیانہ بمباری کی تاہم بمباری کے نتیجے میں کسی قسم کا جانی نقصان نہیں ہوا ہے۔عینی شاہدین نے بتایا کہ قابض فوج نے جمعرات کی شام اور جمعہ کو علی الصباح مشرقی غزہ کی سرحد پر بمباری کی۔ قابض فوج نے بغیر پائلٹ ڈرون کے ذریعے تحریک حق واپسی کے فلسطینی مظاہرین کو نشانہ بنایا تاہم بمباری میں کسی شہری کے شہید یا زخمی ہونے کی اطلاعات نہیں۔اسرائیلی جیل میں قید ایک فلسطینی نوجوان پر اسرائیلی درندہ صفت جلادوں نے وحشیانہ تشدد کیا ہے جس کے نتیجے میں اسیر کی حالت تشویشناک بیان کی جاتی ہے۔مرکزاطلاعات فلسطین کے مطابق 24 سالہ اسیر عمر الکسوانی کو دوران حراست اذیتیں دی گئی ہیں جس کے نتیجے میں اس کی حالت تشویشناک ہے۔ الکسوانی کو اسرائیلی فوج نے 7 مارچ 2018ئ￿  کو غرب اردن میں قائم بیرزیت یونیورسٹی کے ہاسٹل سے اٹھا کر عقوبت خانے میں منتقل کردیا تھا

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
TAKWIR Web Designing (www.takwir.com) Copyrights Alqalam Weekly Online