Bismillah

672

۶تا۱۲ربیع الثانی۱۴۴۰ھ  بمطابق       ۱۴تا۲۰دسمبر۲۰۱۸ء

بھارتی فوج کا پھر کیمیائی ہتھیاروں کا استعمال،9 کشمیری شہید

(شمارہ 662)

بھارتی فوج کا پھر کیمیائی ہتھیاروں کا استعمال،9 کشمیری شہید

مقبوضہ وادی میں بلدیاتی الیکشن ڈرامے کیلئے 400 اضافی فوجی کمپنیاں طلب،قابض بھارتی فوج نے شہید نوجوان کے گھر کوآگ لگادی،ایک ماہ میں خاتون سمیت 42کشمیری بھارتی فوج کا نشانہ بنے
شیراز اورعرفان کوضلع بڈگام کے علاقے پازن جبکہ3 نوجوانوں کو الگ الگ واقعات میں فائرنگ کا نشانہ بنایا گیا،3 نوجوان سوپور میں فرضی جھڑپ میں شہید کئے گئے،شوپیاں میں ایک فوجی اہلکار جہنم واصل
 دہشتگردانہ پالیسیوں کیخلاف وادی بھر میں ہڑتال،مظاہرے، کاروباری مراکز، دفاتر اور تعلیمی ادارے بند رہے، فورسز کی جمعہ کے سبب مساجد کی طرف جانے والے راستوں پر رکاوٹیں کھڑی کرکے سخت چیکنگ
کیمیائی ہتھیاروں کے باعث بانڈی پورہ کے شہداء کی لاشیں شناخت کے قابل نہیں تھیں، سیدعلی گیلانی کااقوام متحدہ سے تحقیقات کا مطالبہ ،4مرحلوں پر مشتمل ڈھونگ انتخابات8 اکتوبر سے شروع ہو رہے ہیں
مظاہرے روکنے کیلئے سید علی گیلانی اور میر واعظ عمر فاروق گھر پر نظر بند ،یاسین ملک اپنی رہائش گاہ مائسمہ سے گرفتار ،اکثرنوجوانوں کو ماورائے عدالت قتل کیا گیا، پیلٹ گن سے 231  زخمی ہوئے، رپورٹ

سرینگر(نیٹ نیوز) مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کے مظالم بدستور جاری، ایک بار پھر کشمیریوں پر کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کا انکشاف، درجنوں کا دیہات کا محاصرہ، مزید 9 کشمیری شہید ،درجنوں زخمی ہوگئے، قابض فوج نے فرضی آپریشن کی آڑ میں محاصرے کے دوران تمام افراد کو شہید کیا، بھارتی مظالم کے خلاف مقبوضہ وادی میں مظاہرے ، نظام زندگی معطل ہوکر رہ گیا، سرینگر میں کرفیو نافذ،بلدیاتی الیکشن ڈرامے کیلئے 400 اضافی فوجی کمپنیاں طلب،قابض بھارتی فوج نے شہید نوجوان کے گھر کوآگ لگادی،گزشتہ ایک ماہ میں خاتون سمیت 42کشمیری بھارتی فوج کا نشانہ بنے،شیراز اورعرفان کوضلع بڈگام کے علاقے پازن جبکہ3 نوجوانوں کو الگ الگ واقعات میں فائرنگ کا نشانہ بنایا گیا،3 نوجوان سوپور میں فرضی جھڑپ میں شہید کئے گئے،شوپیاں میں ایک فوجی اہلکار جہنم واصل ، دہشتگردانہ پالیسیوں کیخلاف وادی بھر میں ہڑتال،مظاہرے، کاروباری مراکز، دفاتر اور تعلیمی ادارے بند رہے، فورسز کی جمعہ کے سبب مساجد کی طرف جانے والے راستوں پر رکاوٹیں کھڑی کرکے سخت چیکنگ،کیمیائی ہتھیاروں کے باعث بانڈی پورہ کے شہداء کی لاشیں شناخت کے قابل نہیں تھیں، سیدعلی گیلانی کااقوام متحدہ سے تحقیقات کا مطالبہ ،4مرحلوں پر مشتمل ڈھونگ انتخابات8 اکتوبر سے شروع ہو رہے ہیں۔ تفصیلات کے مطابق مقبوضہ کشمیر کے سوپور قصبہ میں بھارتی فوج  نے مزید 3کشمیری نوجوانوں کو شہید کر دیا ہے ۔ قابض انتظامیہ نے سوپور میں دہشت گردی کے بعد تمام تعلیمی ادارے بند اور موبائل، انٹرنیٹ سروس بند کر دی۔ ہزاروں کشمیریوں نے بھارتی ظلم و بربریت کیخلاف سخت احتجاج کیا ہے۔ بزرگ کشمیری قائد سید علی گیلانی، میر واعظ عمر فاروق اور محمد یاسین ملک نے حالیہ دہشتگردی کی مذمت کی اور کشمیری عوام سے آئندہ ڈھونگ انتخابات کا بائیکاٹ کرنے کی اپیل کی ہے تاکہ عالمی برادری کو گمراہ کرنے کیلئے ان انتخابات کو ایک سیاسی حربے کے طور پر استعمال کرنے کے بھارت کے مذموم عزائم کو ناکام بنایا جاسکے۔ادھر جموں کشمیر مسلم لیگ نے بھی شہداء کو خراج عقیدت پیش کیا ہے۔ بھارتی فوج نے تینوں کشمیری نوجوانوں کو سوپور کے تجر شریف علاقہ میں نام نہاد سرچ آپریشن کے دوران شہید کیا۔ اس دوران کشمیریوں کے گھروں میں گھس کر توڑ پھوڑ بھی کی گئی۔ بھارتی فوجیوں نے جمعرات کو دو اور جمعہ کو تین نوجوانوں کو شہید کیا تھا۔ شوپیاں میں بھی نوجوانوں کی شہادت پر ہڑتال کی گئی۔شوپیاں اور کولگام اضلاع سے تعلق رکھنے والے خاندانوں نے بھارتی فوج کا یہ دعویٰ مسترد کیا ہے کہ شہید ہونے والے نوجوان غیرملکی   مجاہد  تھے جو فوجیوں کے ساتھ ایک جھڑپ میں شہید ہوئے۔ان کا کہنا ہے کہ شہید ہونے والے نوجوان ان کے بیٹے اور رشتہ دار ہیں جن کو بھارتی فوجیوں نے محاصرے اور تلاشی کی کارروائی کے دوران شہید کیا۔حریت قیادت نے سری نگر کے علاقے حیدر پورہ میں سیدعلی گیلانی کی رہائش گاہ پر ملاقات میں کشمیریوں کے اقتصادی وسائل کی لوٹ مار اور جموں و کشمیر کی آبادی کا تناسب بگاڑنے کے بھارتی منصوبے پر غور کیا۔ دریں دریں اثناء￿  بھارتی فوجیوں کے ہاتھوں پانچ نوجوانوں کی شہادت پر ضلع بانڈی پورہ میں گزشتہ روز مسلسل پانچویں روز بھی ہڑتال کی وجہ سے معمولات زندگی مفلوج ہو کر رہ گئے۔ادھر  مقبوضہ کشمیرمیں مختلف جھڑپوں کے دوران مجاہد کمانڈر سمیت مزید 5 کشمیری شہید اور1بھارتی فوجی ہلاک ہوگیا،شہداء کی نماز جنازہ میں ہزاروں افراد نے تمام رکاوٹوں کو پاؤں تلے روند کر شرکت کی اور اسلام، پاکستان اور آزادی کے حق میں نعرے لگائے،ریاستی دہشت گردی کے خلاف کئی علاقوں میں مظاہرے کیے گئے جس پر بھارتی قابض فوج نے دھاوہ بول دیا اوراندھادھند آنسو گیس کی شیلنگ اور شدید لاٹھی چارج کیا جبکہ پیلٹ گنوں کی فائرنگ سے 9 شہری شدید زخمی ہوگئے جنہیں ہسپتال منتقل کردیاگیا۔ بھارتی فوج کی طرف سے ایک شہری کو شہیدکئے جانے کے بعد کئی علاقوں میں مظاہرے پھوٹ پڑے۔سری نگر کے نور باغ علاقہ میں نام نہادسرچ آپریشن شروع کیا اور کشمیریوں کے گھروں میں گھس کر توڑ پھوڑ کرتے ہوئے، محمد یعقوب ملک نامی شہری کے مکان پر اندھا دھندگولیاں برسائیں جس سے مالک مکان کا بیٹا محمد سلیم ملک گولی لگنے سے شہید ہو گیا۔سلیم ملک کو بھارت کے خلاف اور آزادی کے حق میں نعروں کی گونج میں مزار شہداء سری نگر میں سپرد خاک کیا گیا۔نماز جنازہ میں ہزاروں افراد نے شرکت کی۔ قبل ازیں جب شہید کا جسد خاکی تدفین کیلئے مزار شہداء  کی طرف لے جایا جا رہاتھا تو قابض بھارتی فورسزنے شرکا ء پرآنسو گیس کی شدید شیلنگ کی جس کے بعد قابض اہلکاروں اور جنازہ کے شرکاء کے درمیان زبردست جھڑپیں ہوئیں۔بھارتی فورسز کی طرف سے کرفیو جیسی پابندیوں اوررکاوٹوں کے باوجود کشمیری عوام شہید کا جسد خاکی تدفین کیلئے مزار شداء  عید گاہ پہنچانے میں کامیاب ہو گئے۔ علاوہ ازیں وادی کشمیر کے 3 الگ الگ مقامات پر بھارتی فوج نے3 کشمیری نوجوانوں کو شہیدکر دیا جبکہ ایک قابض بھارتی فوجی سپاہی ہلاک ہوگیا جبکہ نصف درجن فوجی زخمی ہوگئے۔شیراز احمداورعرفان احمد کوضلع بڈگام کے علاقے پازن میں شہید کیاگیا۔بھارتی حکام نے سرینگر سے تقریباً 18 کلومیٹر کے فاصلے پر واقع پانزن دیہات میں ہونے والی ایک جھڑپ میں 2 مجاہدین کو شہید کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔ ضلع راجوری میں بھارتی بارڈر سکیورٹی فورس کے ایک اہلکار نے خو د کشی کر لی۔ کشمیر میڈیاسروس کے مطابق بی ایس ایف کی 126ویں بٹالیں سے وابستہ ہیڈ کانسٹبل رام چرن نے راجوری کے علاقے سندر بنی میں قائم اپنی فورس ہیڈکوارٹرز میں سروس رائفل سے خود کشی کی۔خود کشی کے اس تازہ واقعے سے جنوری 2007ء￿  سے مقبوضہ علاقے میں خود کشی کرنے والے بھارتی فوجیوں اور پولیس اہلکاروں کی تعداد بڑھ کر411 ہوگئی۔علاوہ ازیں حریت کانفرنس جموں و کشمیر کے چیئرمین سید علی گیلانی نے انکشاف کیا ہے کہ چند دن قبل بانڈی پورہ میں بھارتی فوج نے ایک مرتبہ پھر کیمیائی ہتھیاروں کا استعمال کیاجس سے شہید ہونے والوں کی لاشیں قابل شناخت نہیں رہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم ایسی ظالمانہ کارروائیوں کی شدید مذمت کرتے ہیں جو کہ بین الاقوامی جنگی قوانین کی کھلم کھلا خلاف ورزی ہے۔حریت چیئرمین نے کیمیائی ہتھیاروں کے استعمال کی وحشیانہ کارروائی پراقوام متحدہ کے جنگی ٹربیونل کے ذریعے تحقیقات کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ بھارت نے اپنی افواج کو جدید مہلک ہتھیاروں سے لیس کرتے ہوئے ریاستی عوام کے خلاف ایک باضابطہ جنگ چھیڑ رکھی ہے جس میں کیمیائی ہتھیاروں کے علاوہ ڈرون، پیلٹ گن، مرچی گیس وغیرہ جیسے ہتھیاروں کا استعمال کرتے ہوئے نہتے عوام اور بالخصوص نوجوان نسل کو ناکارہ ،اپاہج، اندھا اور معذور بنائے جانے سے گریز نہیں کیا جا رہا۔ بھارت مقبوضہ کشمیر میں نام نہاد پنچایت اور بلدیاتی الیکشن کا ڈرامہ رچانے کیلئے فوج کی مزید 4سو کمپنیاں تعینات کرے گا۔چار مرحلوں پر مشتمل ڈھونگ بلدیاتی انتخابات آٹھ اکتوبر سے شروع ہو رہے ہیں۔اسی بنیاد پر بھارتی فوج نے شمالی اور جنوبی کشمیر کے حساس علاقوں میں فوجی چھاؤنی کا ماحول پیدا کر رکھا ہے۔مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کے ہاتھوں کشمیری نوجوانوں کی شہادت پر سوپور، بانڈی پورہ، پلوامہ ، شوپیاں سمیت وادی بھر میں تمام کاروباری مراکز مکمل طور پر بند رہے۔ادھر بھارتی فورسز نے شمالی کشمیر کے ضلع بانڈی پورہ کے علاقے حاجن سے تعلق رکھنے والے چار نوجوانوں پر کالا قانون پبلک سیفٹی ایکٹ لاگو کر دیا ہے جس پر مقامی کشمیریوں نے شدید احتجاج کیا ہے۔ بھارتی فوج کی 22راشٹریہ رائفلز ، سپیشل آپریشنز گروپ اور سینٹرل ریزروپولیس فورس کے اہلکاروں نے سوپورکے علاقے تجر شریف میں نام نہاد سرچ آپریشن اور محاصرے کی کارروائی کے دوران 3 نوجوانوں کو شہید کیا تھا۔کشمیری نوجوانوں کی شہادت پر احتجاجی مظاہرے روکنے کے لیے سوپور اور اس سے ملحقہ علاقوں میں بڑی تعداد میں بھارتی فوجی اور پولیس اہلکار تعینات کر دیے گئے ہیں۔ قابض انتظامیہ نے طلباء کو بھارت مخالف مظاہروں سے روکنے کیلئے قصبے میں تمام تعلیمی ادارے بند کر رکھے ہیں۔اسی طرح موبائل اور انٹرنیٹ سروس بھی بند ہے۔

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
TAKWIR Web Designing (www.takwir.com) Copyrights Alqalam Weekly Online