Bismillah

664

۸تا۱۴صفر المظفر۱۴۴۰ھ  بمطابق    ۱۹تا۲۵اکتوبر۲۰۱۸ء

غزہ،دہشتگرد صہیونی فورسز کی مظاہرین پر براہ راست فائرنگ،7فلسطینی شہید،500زخمی

(شمارہ 662)

غزہ،دہشتگرد صہیونی فورسز کی مظاہرین پر براہ راست فائرنگ،7فلسطینی شہید،500زخمی،(100بم پھینکنے کا اسرائیلی الزام)

زخمیوں میں خواتین اور بچوں کی بھی بڑی تعداد شامل،مظاہرین پر آنسو گیس کی وحشیانہ شیلنگ بھی کی گئی،یہودیوں کی جانب سے مسجد اقصیٰ پر دھاوے، بے حرمتی کی
مظاہرین نے ٹائر جلائے اور قابض فوج پر پتھراؤ کیا، 30 مارچ سے شروع ہونے والی تحریک کے دوران اب تک 190 فلسطینی شہید اور 20 ہزار سے زائد زخمی ہو چکے

مقبوضہ بیت المقدس(نیٹ نیوز)غزہ دہشت گرد صہیونی فورسز کی مظاہرین پر براہ راست فائرنگ ،7 فلسطینی شہید، 500 زخمی، زخمیوں میں خواتین اور بچوں کی بھی بڑی تعداد شامل، مظاہرین پر آنسو گیس کی وحشیانہ شیلنگ بھی کی گئی،یہودیوں کی جانب سے مسجد اقصیٰ پر دھاوے، بے حرمتی کی،مظاہرین نے ٹائر جلائے اور قابض فوج پر پتھراؤ کیا، 30 مارچ سے شروع ہونے والی تحریک کے دوران اب تک 190 فلسطینی شہید اور 20 ہزار سے زائد زخمی ہو چکے جبکہ اسرائیل نے الزام لگایا کہ فلسطینیوں نے سرحد پر 100 بم پھینکے۔ تفصیلات کے مطابق غزہ پٹی میں اسرائیلی فورسز کی مظاہرین پر فائرنگ کے نتیجے میں 6 فلسطینی شہید   اور سینکڑوں زخمی ہو گئے۔عرب میڈیا کے مطابق سینکڑوں فلسطینی مظاہرین اسرائیلی سرحد کے قریب مظاہرہ کر رہے تھے کہ اسرائیلی فورسز نے ان پر بلااشتعال فائرنگ اور آنسو گیس کی  شیلنگ شروع کر دی۔اسرائیلی فورسز کی جارحیت کے نتیجے میں دو بچوں سمیت 5 فلسطینی شہید اور 600 سے زائد فلسطینی زخمی ہو گئے۔خیال رہے کہ 30 مارچ سے شروع ہونے والی جمعہ تحریک کے دوران اب تک 190 فلسطینی شہید اور 20 ہزار سے زائد زخمی ہو چکے ہیں۔علاوہ ازیں  غزہ کی سرحد پر اسرائیل کی ریاستی دہشت گردی کے دوران شدید زخمی ہونیوالے مزید 2 فلسطینی نوجوان دم توڑ گئے۔ جس کے بعد شہید فلسطینیوں کی تعداد7ہوگئی جبکہ 500 سے زائد زخمی ہوئے ہیں۔ محکمہ صحت غزہ کے حکام نے 14سالہ محمد الحوم اور 18سالہ ایاد خلیل الشاعر کی دوران علاج شہادت کی تصدیق کی ہے، جو جمعہ کو براہ راست اسرائیلی فائرنگ کا نشانہ بنے تھے۔وزارت صحت کے ترجمان اشرف القدرہ نے غیر ملکی میڈیاکو بتایا کہ زخمیوں میں 35بچے، 4خواتین، 4 امدادی کارکن اور 2 صحافی بھی شامل ہیں۔ فلسطینی مظاہرین کا مطالبہ ہے کہ اسرائیلی قبضے کے بعد علاقہ چھوڑ کر جانے والے فلسطینیوں کو وطن واپس آنے دیا جائے، جبکہ اسرائیل سمجھتا ہے کہ بڑے پیمانے پر بیدخل فلسطینیوں کو واپسی کی اجازت دینا یہودی ریاست کو ختم کرنے کے مترادف ہے۔فلسطین کے مقبوضہ بیت المقدس میں مسجد اقصی میں یہودی آباد کاروں کے دھاوے اور مقدس مقام کی مجرمانہ بے حرمتی کا سلسلہ جاری ہے۔ 90 یہودی آباد کار اور اسرائیلی پولیس کی فول پروف سیکیورٹی میں مسجد اقصیٰ میں داخل ہوئے اور قبلہ اول میں گھس کرنام نہاد مذہبی رسومات کی ادائیگی کی آ ڑ میں مقدس مقام کی بے حرمتی کی۔مرکز اطلاعات فلسطین نے فلسطینی محکمہ اوقاف کے حکام کے حوالے سے بتایا ہے کہ90 یہودی آباد کار مراکشی دروازے کے راستے قبلہ اول میں داخل ہوئے اور حرم قدسی کی بے حرمتی کا ارتکاب کیا۔ دن کے دوسرے حصے میں مزید بیسیوں یہودی شرپسند قبلہ اول میں داخل ہوئے، اشتعال انگیز حرکات کا ارتکاب کیا اور مقدس مقام کی بے حرمتی کی۔ہمیشہ کی طرح مسجد اقصیٰ کے دروازوں کے باہر تعینات اسرائیلی پولیس نے فلسطینی نمازیوں کے ساتھ بدسلوکی کی اور ان کی شناخت پریڈ کے ساتھ انہیں قبلہ اول میں عبادت کے لیے داخل ہونے سے روکنے کی کوشش کرتے رہی جس پر فلسطینی مشتعل ہوگئے اور انہوں نے اسرائیلی فوج اور پولیس کی غنڈہ گردی کے خلاف شدید نعرے بازی کی۔ادھر اسرائیل نے الزام عائد کیا ہے کہ گذشتہ جمعہ کی شام غزہ کی پٹی کی سرحد پر تصادم کے دوران فلسطینیوں نے 100 بم پھینکے جس کے نتیجے میں اسرائیلی فوجی گاڑیوں اور تنصیبات کو نقصان پہنچا۔مرکزاطلاعات فلسطین کے مطابق اسرائیلی فوج کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ  جمعہ کی شام غزہ کی سرحد پر 20 ہزار فلسطینیوں نے جمع ہو کرپرتشدد احتجاج کیا۔بیان میں فلسطینی مظاہرین کو’تخریب کار‘ قرار دیا گیا ہے اور کہا گیا ہے کہ فلسطینی تخریب کاروں نے اسرائیلی فوج کے سیکیورٹی بنیادی ڈھانچے کو نقصان پہنچایا اور سرحدی باڑ عبور کرنے دراندازی کی کوشش کی۔

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
TAKWIR Web Designing (www.takwir.com) Copyrights Alqalam Weekly Online