Bismillah

686

۱۴تا۲۰رجب المرجب۱۴۴۰ھ  بمطابق ۲۲تا۲۸مارچ۲۰۱۹ء

جیش محمدؐ کے4 مجاہد شہید،متعددانڈین فوجی واصل جہنم،درجنوں زخمی

(شمارہ 675)

جیش محمدؐ کے4 مجاہد شہید،متعددانڈین فوجی واصل جہنم،درجنوں زخمی

راجپورہ میںدہشتگرد فورسز اور مجاہدین جیش میں زبردست معرکہ،4 جانبازمزمل احمد ساکنہ رحمو،مزمل احمد ساکنہ پرچھو،وسیم احمد ساکنہ ٹکن اورمہمان مجاہد محمد خلیل بھارتی فوجیوں کیخلاف دادشجاعت دیتے شہید ہوئے
پلوامہ کے علاقے بیلو میں مجاہدین کی  183BN یونٹ کے اہلکاروں پر اچانک یلغار،4ر جہنم رسید،7 شدید زخمی،بڈگا م میں سی آئی ایس ایف کے کیمپ پر سنائپر حملہ،1اہلکار ہلاک،مجاہدین بچ نکلنے میں کامیاب
مجاہدین جیش کی طرف سے شہداء  پلوامہ کا قصاص آپریشن شروع،انتقامی کارروائی میں وانی مسجد کے نزدیک  پٹرولنگ پارٹی کو نشانہ بناگیا،ایک فوجی موقع پر ہلاک، متعدد شدید زخمی، 2 فوجی ترال میں ہلاک
بھارتی مظالم کے خلاف وادی بھر میں ہڑتال اور مظاہرے، پلوامہ میں فوجی کیمپ ہٹانے کا مطالبہ،پوسٹرلگانے پر2شہریوں کیخلاف بغاوت کامقدمہ چلانے کی ہدایت، کئی علاقوں میں آپریشن‘ یاسین ملک رہا

سرینگر(نیٹ  نیوز)مقبوضہ کشمیر کے علاقے پلوامہ میں مجاہدین اور انڈین آرمی کے درمیان خونریز طویل جھڑپیں، مجاہدین جیش کے 4 جانباز جام شہادت نوش کرگئے جبکہ طویل معرکوں میں متعدد انڈین فوجی ہلاک اور درجنوں زخمی ہوگئے، مجاہدین نے پلوامہ کے علاقے بیلو میں بھارتی فوج کی سنٹرل ریزرو پولیس فورس کی 183BN یونٹ سے وابستہ اہلکاروں پراس وقت اچانک یلغار کردی جب وہ واپس کیمپ جارہے تھے، اچانک حملے میں 4 فوجی موقع پر جہنم رسید جبکہ 7 زخمی ہوئے ،مجاہدین کارروائی کے بعد بچ نکلنے میں کامیاب ہوگئے،بڈگام میں مجاہدین نے سنائپر حملے میں ایک اور بھارتی فوجی جہنم رسید کردیا ، ضلع بڈگام کے علاقے واگورہ میں بھارتی دہشت گرد فوج کی سنٹرل انڈسٹریل سکیورٹی فورس (CISF) کے کیمپ پر سنائپر گنوں سے حملہ کیا جس میں 1 بھارتی فوجی موقع پر ہی ہلاک ہو گیا جب کہ متعدد اہلکار شدید زخمی ہوئے ہیں۔ مجاہدین شاندار جہادی حملے کے بعد بحفاظت نکلنے میں کامیاب ہوگئے ہیں۔ پلوامہ کے علاقے راجپورہ میں مجاہدین جیش اور بھارتی دہشت گرد فوجیوں کے درمیان خونریز معرکہ آرائی ہوئی جس میں متعدد انڈین فوجی مردار اور درجنوں زخمی ہوئے، طویل جھڑپ میں جیش کے4جانباز بھارتی فوجیوں کیخلاف دادِ شجاعت دیتے ہوئے جام شہادت نوش کرگئے، شہید ہونے والوں میں مزمل احمد ساکنہ رحمو ضلع پلوامہ ،مزمل احمد ساکنہ پرچھو ضلع پلوامہ ،وسیم احمد  ساکنہ ٹکن ضلع پلوامہ اور ایک مہمان مجاہد محمد خلیل خان شامل ہیں۔اطلاعات کے مطابق جھڑپ کی اطلاع پر کشمیری نوجوانوں کی ایک اچھی خاصی تعداد نے معرکہ کے آس پاس تعینات بھارتی فورسز کے اہلکاروں کو اسلام و آزادی کے شدید نعروں کے ساتھ زبردست سنگباری کا نشانہ بنایا ، بھارتی فوجیوں نے ٹیر گیس کے گولے داغے اور یوں فریقین کے درمیان باضابطہ جھڑپوں کا آغاز ہوگیا۔مجاہدین کی طرف سے شہداء  پلوامہ کا قصاص آپریشن شروع ہوگیا،انتقامی کارروائی میں پٹرولنگ پارٹی کو نشانہ بناگیا،ایک فوجی موقع پر ہلاک، متعدد شدید زخمی، فوجی گاڑی کو بھی نقصان پہنچا۔ فدائین جیش نے اتوار کی شام قصاص آپریشن کے تحت جنوبی کشمیر کے ضلع پلوامہ میں پولیس تھانے کے قریبی علاقے وانی مسجد کے نزد قابض بھارتی فوج کی پٹرولنگ پارٹی کو شدید گولیوں سے نشانہ بنایا۔ جس میں 1 بھارتی فوجی موقع پر ہلاک اور متعدد شدید زخمی ہوئے ہیں جب کہ اس برق رفتار جہادی یلغار میں فوجی گاڑی کو بھی نقصان پہنچا ہے۔ مجاہدین جیش محمد انتقامی کارروائی کے بعد بحفاظت نکلنے میں کامیاب ہوگئے۔ترال کے علاقے میڈورہ میں قائم بھارتی فوجی کیمپ پر مجاہدین جیش محمد نے  زبردست حملہ کیا ۔جس میں 2 فوجی ہلاک ہوئے،رات ساڑھے بارہ بجے کے قریب جیش کے جانباز مجاہدین نے 180 سی آر پی ایف۔بٹالین کیمپ پر گرنیڈوں اور خودکار اسلحہ کے زریعہ حملہ کیا جس کے نتیجے میں موقع پر دو بھارتی غاصب فوجی واصل جھنم ہوگئے۔حملے میںمتعدد اہلکار شدید زخمی ہوگئے۔کامیاب کاروائی کے بعد مجاہدین بحفاظت اپنے محفوظ ٹھکانوں پر پہنچ گئے۔ادھرادھر مقبوضہ کشمیر میں مودی سرکار نے نہتے کشمیریوں کی جدوجہد آزاد ی کچلنے کیلئے بھارتی فوج کو’’پیپر بال‘‘ نامی ایک اور مہلک ہتھیار فراہم کرنے کا اعلان کیا ہے اوراس کیلئے باضابطہ طور پر ٹینڈرز کا اجراء  بھی کیا جاچکا ہے۔ بھارتی حکومت کی جانب سے جلد ’’پیپر بال‘‘ نامی یہ مہلک ہتھیار بھارتی فورسز اہلکاروں کو فراہم کر دیے جائیں گے۔ پیپر بال میں مرچی کے ساتھ ساتھ ایک خاص طرح کا کیمیکل موجود ہے جس کے باعث مظاہرین کچھ دیر تک دیکھنے کی صلاحیت سے بالکل محروم ہو جائیں گے جس کے بعد انہیں پکڑنا آسان ہو گا۔کشمیری مظاہرین کے خلاف اس مہلک ہتھیار کے استعمال کی بھارتی وزارت داخلہ نے باضابطہ طو ر پر اجازت دے دی ہے۔یاد رہے کہ اس سے قبل بھارتی فوج پیلٹ گن اور کیمیائی ہتھیار بھی استعمال کررہی ہے جس پر انڈیا کو پوری دنیا میں سخت تنقید کا سامنا ہے۔ پیلٹ گن کے چھرے لگنے سے مقبوضہ کشمیر میں سینکڑوں کشمیری آنکھوں کی بینائی کھو چکے ہیں۔ ضلع پلوامہ میں بھارتی فورسز کے ہاتھوں شہید ہونے والے چاروں مجاہدین کی نماز جنازہ میں ہزاروں افراد نے شرکت کی ہے۔کشمیرمیڈیا سروس کے مطابق بھارتی فوجیوں نے گزشتہ روز ضلع کے علاقے راجپورہ میں محاصرے اور تلاشی کی ایک کارروائی کے دوران نوجوانوں کو شہید کیا تھا۔ شہید نوجوانوں کی نماز جنازہ ضلع میں ان کے آبائی علاقوں رحمو،ٹکنو ، اورپرچھو میں ادا کی گئی۔ ضلع کے دور دراز اور ملحقہ علاقوں سے بزرگ ،خواتین اور بچوں سمیت ہزاروں افرادنے جنازوں میں شرکت کے لیے شہید نوجوانوں کے آبائی علاقوں کا رخ کیا۔ شہداء کو بھارت کے خلاف اور آزادی کے حق میں فلک شگاف نعروں کی گونج میں سپرد خاک کیاگیا۔مقبوضہ کشمیرمیں پلوامہ کیترال علاقہ میں بھارتی فورسز کے ہاتھوںنوجوانوں کی شہادت پر مکمل ہڑتال رہی۔ ادھر مقبوضہ کشمیر میں محکمہ داخلہ نے 2016ء  میں ’سوگام چلو‘ کال کے سلسلے میں پوسٹر لگانے اور کال کو کامیاب بنانے کی کوشش پر دو شہریوں کیخلاف بغاوت کا مقدمہ چلانے کی ہدایت کردی۔ علاقے میں تمام دکانیں اور کاروباری مراکز بند اور سڑکوں پر گاڑیوں کی آمدورفت معطل ہے۔ پلوامہ ضلع کے علاقوں میدان پورہ ،لال پورہ اور گنگ بگ سے تعلق رکھنے والے جاوید احمد میر اور بشیر احمد پیر کیخلاف بغاوت کا مقدمہ چلانے کی ہدایت کی گئی ہے۔ بھارتی فوجیوںنے اپنی ریاستی دہشت گردی کی تازہ کارروائی کے دوران جمعہ کوضلع پلوامہ میں ایک اور نوجوان کو شہید کردیا ہے۔  قابض فوجیوںنے نوجوان کو ضلع کے علاقے کاری واس رنزی پورہ میں تلاشی اور محاصرے کی ایک کارروائی کے دوران شہید کیا۔ علاقے میں سخت کشیدگی ہے لوگوں نے احتجاجی مظاہرے بھی کئے۔قابض انتظامیہ نے پلوامہ میں موبائیل انٹرنیٹ سروس معطل کر دی۔ علاوہ ازیں پنزن کنگن میں دوشیزہ کی نعش پاور کنال سے برآمد کی گئی۔ گاندربل کے وڈر کنگن میں دو روز قبل لاپتہ ہوئی ۔جنوبی کشمیر میں بڑے پیمانے پر قابض بھارتی فوج نے آپریشن شروع کیا ہے اور اس سلسلے کی ایک کڑی کے تحت شوپیاں، پلوامہ اور کولگام اضلاع میں شبانہ تلاشی آپریشنوں کا سلسلہ جاری ہے۔ اس دوران حزب کمانڈر ریاض نائیکو کے آبائی گائوں میں قابض فورسز نے ایک کمین گاہ کو دھماکہ سے اڑا نے کا دعویٰ کیا۔ ادھر جموں سرینگر شاہراہ پر بھی سکیورٹی فورسز نے جگہ جگہ موبائیل بینکر تعمیر کئے ہیں جہاں پر جموں سے سرینگر اور سرینگر سے جموں جانے والی گاڑیوں کی باریک بینی سے تلاشی لی جار ہی ہے۔ادھر بھارتی فوج نے مختلف چھاپوں کے دوران درجنوں بے گناہ نوجوانوں کو گرفتار کر لیا۔ بھارتی فوجیوں نے پلوامہ اور پونچھ کے اضلاع گانگو، پیرچو، ملک پورہ اور دیگر مقامادت پر چھاپے مارے اور بھارت مخالف مظاہروں میں حصہ لینے کے الزام میں درجنوں نوجوانوں کو گرفتار کر لیا۔ ضلع ڈوڈا میں واقع بھارتی آرمی کیمپ میں معمولی بات پرجھگڑے ہوا جس کے نتیجے میں ایک سپاہی نے حوالدار راجیش کو سرکاری رائفل سے فائرنگ کرکے قتل کردیا۔

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
TAKWIR Web Designing (www.takwir.com) Copyrights Alqalam Weekly Online