Bismillah

686

۱۴تا۲۰رجب المرجب۱۴۴۰ھ  بمطابق ۲۲تا۲۸مارچ۲۰۱۹ء

غزہ کی ناکہ بندی توڑنے کی کوشش ، فائرنگ سے فلسطینی شہید،14 زخمی

(شمارہ 675)

غزہ کی ناکہ بندی توڑنے کی کوشش ، فائرنگ سے فلسطینی شہید،14 زخمی

نابلوس میںفلسطینی ڈرائیور کو بغیر وجہ گولیوں کانشانہ بنایاگیا،2018ء میں اسرائیلی حملوں میں 295 فلسطینی شہید، 29 ہزار زخمی، فوج کے ہاتھوں 6500 فلسطینی گرفتار
شہیدفلسطینی کا جسد خاکی 2ماہ بعد ورثا کے حوالے، زیتون کے 200 پھل دار پودے تلف،2018 میں 30ہزار یہودیوں کا قبلہ اول میں داخل ہو کر بے حرمتی کا ارتکاب

مقبوضہ بیت المقدس(نیٹ نیوز) غزہ کی ناکہ بندی توڑنے کی کوشش پر صہیونی فورسز نے اندھا دھند فائرنگ کرکے ایک فلسطینی کو شہید جبکہ 14کو زخمی کردیا، مغربی کنارے میں یہودیوں کے لئے مزید 2200 نئے گھر بنانے کا فیصلہ،اسرائیلی کھدائی سے مسجد اقصیٰ کے قریب زمین پھٹ گئی،،2018ء میں اسرائیلی حملوں میں 295 فلسطینی شہید، 29 ہزار زخمی، فوج کے ہاتھوں 6500 فلسطینی گرفتار،شہیدفلسطینی کا جسد خاکی 2ماہ بعد ورثا کے حوالے، زیتون کے 200 پھل دار پودے تلف،2018 میں 30ہزار یہودیوں کا قبلہ اول میں داخل ہو کر بے حرمتی کا ارتکاب۔ تفصیلات کے مطابق فلسطین کے مقبوضہ مغربی کنارے کے شمالی شہر نابلس میں  اسرائیلی فوج نے ایک فلسطینی کار ڈرائیور کو گولیاں مار کر شدید زخمی کردیا جو بعد ازاں زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے چل بسا۔مرکزاطلاعات فلسطین کے مطابق اسرائیلی فوج نے نابلس کے جنوب میں حوارہ چوکی کے قریب ایک کار پر گولیاں چلائیں ۔عینی شاہدین نے بتایا کہ فلسطینی شہری پر فائرنگ کے واقعے کے بعد اسرائیلی فوج نے جائے وقوعہ کو گھیرے میں لینے کے بعد کئی گھنٹے تک سیل کردیا تھا۔عبرانی ویب سائیٹ 0404 کے مطابق اسرائیلی فوجیوں نے فلسطینی کار ڈرائیورکو اس وقت گولی ماری جب اس نے یہودی آباد کاروں کو کچلنے کی کوشش کی تھی۔ فلسطینی شہری کی کار کی ٹکر سے بھاگنے والے تین یہودی زخمی ہوگئے۔دریں اثناء فلسطین میں انسانی حقوق کے لیے کام کرنے والے ادارے’اوچا‘کی طرف سے جاری کردہ سالانہ رپورٹ  میں بتایا ہے کہ رواں سال کے دوران اسرائیلی فوج کی منظم ریاستی دہشت گردی کے نتیجے میں 295 فلسطینی شہری شہید اور20 ہزار زخمی ہوئے۔مرکزاطلاعات فلسطین کے مطابق  اوچا کی رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ سنہ 2014ء  کے بعد ایک سال میں فلسطینی شہادتوں کی یہ سب سے بڑی تعداد ہے۔ٰخیال رہے کہ انسانی حقوق کا ادارہ 'اوچا' 2005ء  سے فلسطین میں انسانی حقوق کی صورت حال پر نظر رکھے ہوئے ہے۔رپورٹ کے مطابق رواں سال کے دوران شہید ہونے والے 61 فی صد فلسطینیوں کا تعلق غزہ کی پٹی سے ہے اور ان کی کل تعداد 180 ہے جب کہ 79 فی صد زخمی یعنی 23 ہزار غزہ کی پٹی کے رہائشی ہیں۔ادھر قابض صہیونی حکام نے فلسطین کے مقبوضہ مغربی کنارے کے جنوبی شہر الخلیل میں  فلسطینی شہریوں کے پھل دار باغات میں موجود سیکڑوں درخت کاٹ دالے۔مقامی فلسطینی سماجی کارکن راتب الجبور نے بتایا صہیونی حکام نے زیتون کے200  پھل دار پودے کاٹ ڈالے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ تلف کردہ باغ مقامی فلسطینی شہری برکات مر کا بتایا جاتا ہے۔ادھر قابض فوج نے یطا قصبے میں یہودی کالونی کی توسیع کے لیے مقامی فلسطینی اراضی کی کھدائی اور مویشیوں کا ایک باڑہ بھی تباہ کردیا ہے۔علاوہ ازیںصہیونی فوج کی فائرنگ سیشہید فلسطینی کا جسد خاکی2ماہ بعد ورثا کے حوالے کر دیا گیا۔ 22 سالہ شہید الیاس یاسین کو اسرائیلی فوج نے اکتوبر میں شہید کیا اور اس کا جسد خاکی قبضے میں لے لیاتھا، پوسٹ مارٹم کی آڑ میں شہید کا جسم بری طرح چیرا پھاڑا گیا تھا۔مڈل ایسٹ مانیٹر نے دعویٰ کیا ہے کہ اسرائیل نے رواں سال 7500 فلسطینیوں کو اغواء کیا۔ 2018ء میں اسرائیل نے 980 فلسطینی بچے بھی اغواء کئے۔ فلسطینیوں کے 538 گھروں کو مسمار کیا گیا۔ رواں سال بھی اسرائیل نے کئی ہزار فلسطینیوں کو بے گھر کیا ہے۔ اسرائیل نے مقبوضہ مغربی کنارے میں یہودی آباد کاروں کے لیے بائیس سو نئے گھروں کی تعمیر کے منصوبے کی منظوری دے دی۔ دوسری جانب اسرائیل ارکان اسمبلی نے پارلیمنٹ تحلیل کرنے کا بل منظور کرلیا۔ اسرائیلی آباد کاری پر نظر رکھنے والی این جی او پیس ناؤ کے مطابق گیارہ سو انسٹھ گھروں کی حتمی منظوری دی گئی جن کی تعمیر کے اجازت نامے اب جاری کیے جاسکتے ہیں۔

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
TAKWIR Web Designing (www.takwir.com) Copyrights Alqalam Weekly Online