Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

کشمیرپورے ہندوستان کے مسلمانوں کی آزادی کا ذریعہ بنے گا

(شمارہ 680)

کشمیرپورے ہندوستان کے مسلمانوں کی آزادی کا ذریعہ بنے گا

مجلس ورثائے شہداء جموں و کشمیر کے زیر انتظام اور امیر المجاہدین مولانامسعود ازہر کے زیرامارت یوم یکجہتی کشمیر پر ملک بھر کے چھوٹے بڑے شہروں میں50 سے زائد مقامات پر عظیم الشان ریلیاں،جلسے
شہداء کو خراج تحسین،کشمیری عوام کی بہادری، جرأت و شجاعت، دیوانگی اور عشق کو دیکھنے کیلئے آسمان بھی زمین پر جھانکتا ہوگا، اللہ کشمیر کی ماؤں، بہنوں، بزرگوں اور نوجوانوں کو بہترین صلہ اور بدلہ عطاء فرمائے
جہاد کو ریاست کی ذمہ داری قرار دے کے خود مطمئن  بیٹھ جانے والو قرآن کی آیات جہاد کو ایک بار پھر پڑھ لو شاید تمہارا اِیمان بچ جائے،یوم یکجہتی کشمیر پر امیرالمجاہدین کی جانب سے جاری کیا گیا ریکارڈڈ بیان
کشمیری بھائیوں کی حمایت جاری رکھنے کا عزم،بھارت کی بربادی کے نعرے شہر جہادی ترانوں سے گونج اٹھے ، اجتماعات اللہ کے ذکر، استغفار اور دعوت الی اللہ کے پرنور ماحول سے جگمگاتے رہے
 کراچی میں عظیم الشان اجتماع ، آزاد کشمیر ، پشاور، کوہاٹ، مردان، صوابی، نوشہرہ ، گوجرانوالہ، فیصل آباد،راولپنڈی، اسلام آباد، نواب شاہ، لاڑکانہ، میانوالی، بہاولپور، رحیم یارخان،مظفرآباد میں زبردست ریلیاں
 اجتماعات سے مجاہدین کے ہردلعزیز رہنما مولانا مفتی عبدالروف سمیت علماء کرام کے پرجوش اور سحرانگیز بیانات، کشمیری مسلمانوں کے پیچھے جہاد کی قوت ہے، انڈیا سے ہر ظلم کا بدلہ لیا جائے گا،خطباء کا اعلان
ہر طرف جہادی پرچموں کی بہار،پورے ملک کے عوام کا کشمیریوں کے ساتھ قلبی تعلق اور والہانہ وابستگی کا بھرپور اظہار،کشمیری اپنے آپ کو تنہا نہ سجھیں، کروڑوں پاکستانیوں کے دل ان کیساتھ دھڑکتے ہیں،مقررین

بہاولپو ر(القلم نیوز)امیرالمجاہدین مولانا مسعود ازہر حفظہ اللہ تعالی نے یوم یکجہتی کشمیر پر جاری اپنے ایک ریکارڈ بیان میں کہا ہے کہ شہداء کی قربانی رائیگاں نہیں جائے گی ،مقبوضہ کشمیر آزاد ہوگا اور اپنے ساتھ پورے ہندوستان کے مسلمانوں کی آزادی کا ذریعہ بنے گا،کشمیری عوام کی بہادری، جرأت و شجاعت، دیوانگی اور عشق کو دیکھنے کیلئے آسمان بھی زمین پر جھانکتا ہوگا، اللہ کشمیر کی ماؤں، بہنوں، بزرگوں اور نوجوانوں کو بہترین صلہ اور بدلہ عطاء فرمائے،جہاد کو ریاست کی ذمہ داری قرار دے کے خود مطمئن  بیٹھ جانے والو قرآن کی آیات جہاد کو ایک بار پھر پڑھ لو شاید تمہارا اِیمان بچ جائے دوسری جانب مجلس ورثائے شہداء جموں و کشمیر کے زیر انتظام اور امیر المجاہدین حضرت مولانا محمد مسعودازہر حفظہ اللہ تعالیٰ کے زیرامارت یوم یکجہتی کشمیر کے موقع پر ملک بھر کے چھوٹے بڑے شہروں میں50  سے زائد مقامات پر شاندار ریلیوں اور اجتماعات کا انعقاد کیا گیا۔ ہر طرف جہادی پرچموں کی بہار ، کشمیر بنے گاپاکستان کے نعرے اور ہندوؤں کاایک علاج الجہاد الجہاد کے نعرے گونجتے رہے۔ یکجہتی کشمیر کے عنوان سے ملک بھر کے میں چھوٹی اور بڑی عظیم الشان ریلیوں اور اجتماعات کا انعقاد ہوا جس سے پورے ملک کے عوام کا کشمیریوں کے ساتھ قلبی تعلق اور والہانہ وابستگی کا بھرپور اظہار ہوا۔ شرکاء اجتماعات کشمیریوں سے رشتہ کیا؟ لاالہ الا اللہ کی صدائیں اور گلی گلی نگر نگر مسعودازہر مسعود ازہر کے نعروں سے اپنے جذبات کا بھرپور اظہار کرتے رہے۔ریلیوں اور جلسوں میں امیر صاحب کا ریکارڈ بیان سنایا گیا جس میں امیر محترم نے فرمایا کہ سب سے پہلے تو میں شہدائِ کشمیر کو خراجِ تحسین پیش کرنا چاہتا ہوں، بہت سے چہرے میرے سامنے آ رہے ہیں، ایک چہرہ ہٹتا ہے، تو دوسرا سامنے آجاتا ہے، کس کس کو یاد کروں، کوئی اُن میں سے ایسا نہیں کہ جسے بھلایا جاسکے، اللہ تعالیٰ اُن سب کو اعلیٰ علیین میں اعلیٰ مقام نصیب فرمائے۔مولانا مسعود ازہر صاحب نے مزید فرمایا کہ آج جب کہ جہاد کا فریضہ مسلمانوں میں سے نکلتا جا رہا ہے، آپ حضرات نے اس فریضے کو تھاما ہوا ہے، منزل دور نہیں ہے، ہمت سے لگے رہیں اور ایک ایک کر کے کٹنے کی بجائے سارے ہی اکٹھے ایک بار نکل آئیں تو انڈیا تو ایک مہینے کی مار نہیں ہے۔امیر محترم نے بھارت کے لوگوں کو مخاطب کرتے ہوئے کہاکہ وہ اپنے حکمرانوں کو سمجھائیں کہ وہ کشمیر میں اپنے فوجیوں کو کیوں مروا رہے ہیں، انڈیا کا کشمیر کے ساتھ کیا تعلق ہے ؟ انڈیا کو کیا حق ہے کہ وہ کشمیر پر اپنی حکمرانی کی بات کرے۔انہو ں نے مزید فرمایا جہاد سے پیچھے رہنے والے اور جہاد کے مُنکر یہ حضورِ اَکرمﷺ کو تکلیف دینے والے ہیں، تکلیف دینے والے ہیں۔امیرالمجاہدین نے مسلمانوں سے گزارش  کی کہ وہ کلمے سے اپنا رشتہ مضبوط کریں اور نماز قائم کریں۔دوسری جانب  تمام اجتماعات کشمیریوں سے یکجہتی کے اظہار کے ساتھ ساتھ اللہ تعالی کے ذکر، استغفار اور دعوت الی اللہ کے پرنور ماحول سے جگمگاتے رہے اور یہ چیز تمام لوگوں کے لیے ایک منفرد حیثیت سے دیکھی جاتی رہی اور اہل دل نے اس طرز کو پسندکیا اور تحریک کشمیر کے لیے مفید قرار دیا۔ خطباء نے اعلان کیا کہ کشمیریوں کے پیچھے جہاد کی طاقت ہے، بھارت سے ہر ظلم کا بدلہ لیں گے۔یہ عظیم الشان اجتماعات اور ریلیاں جن شہروں میں منعقد کی گئیں ان میں کراچی ،پشاور،حید ر آباد،بہاولپور،ضلع مالاکنڈ،فیصل آباد،صوابی،ضلع روالپنڈی(صوبہ سیدناعثمان غنی ؓ )،ضلع مانسہرہ ( بالاکوٹ)،پنو عاقل،لسبیلہ ( صوبہ عبدالرحمن بن عوف ؓ)،سیالکوٹ،باجوڑ ،ضلع ہٹیاں بالا ( جہلم ویلی آزاد کشمیر )،ضلع لیہ ،تیمر گرہ،میلسی ،رحیم یار خان،خانیوال،مردان ،کوہاٹ،راجن پور ، روجھان اورجام پور،ڈیرہ اسماعیل خان،ضلع فاروڈ کہوٹہ( آزادکشمیر)،ضلع باغ ( آزاد کشمیر )،ضلع بھکردریا خان،گھوٹکی ،بہاولنگر،ہری پور،لاہور،سکھر،بصیر پور ( اوکاڑہ)،دیر بالا،ملتان،بنوں ،کوئٹہ ،نواب شاہ،ٹوبہ ٹیک سنگھ شامل ہیں۔ ان اجتماعات سے مجاہدین کے ہردلعزیز رہنما مولانا مفتی عبدالروف اصغر، مولانا طلحہ السیف،  مولانا محمد عمار صاحب، ، مولانا محمد الیاس قاسمی صاحب ، مولانا مجاہد عباس صاحب ، مولانا عطاء اللہ کاشف صاحب ، مولانا مدثر جمال تونسوی صاحب ، مولانا مفتی منصور احمد صاحب ، مولانا مفتی عبید الرحمن صاحب ، مولانا محمد رفیق صاحب اور مفتی رفیق احمد صاحب،قاری ضرار صاحب،مولانا مدثر جمال تونسوی،مولانا زاہد محمود قاسمی،مولانامفتی منصور احمد صاحب،مولانا محمد وقاص صاحب، مفتی خلیل اللہ،مولانا عمیر صاحب،مفتی اشتیاق صاحب،مولانا محمد رفیق صاحب،مولانا ابراہیم،مولانا انوارالحق صاحب،مولانا حسنین معاویہ،مولانا ساجد شاہین ، مولانا خرم صاحب، مولانا عبداللہ،مولانا محمد وقاص صاحب،مولانا زاہدحنفی صاحب،مفتی عاصم فیصل آبادی صاحب، مولانا قمر الزمان صدیقی صاحب،مولانا عبدالعزیز،مولانا عبدالحکیم، مولانا جمالدین،مفتی کفایت،مولانا عبدالرشید صاحب و دیگر نے بیانات کئے۔

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor