Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

بمباری، فائرنگ سے 60 شہری شہید، طالبان حملوں میں4 امریکیوں سمیت 44 اہلکار ہلاک

(شمارہ 693)

 بمباری، فائرنگ سے 60 شہری شہید، طالبان حملوں میں4 امریکیوں سمیت 44 اہلکار ہلاک

آغازمضان پروحشیانہ کارروائی،امریکی طیارے 3 گھنٹے تک آبادی پرآگ برساتے رہے،مساجد کو بھی نشانہ بنایا،شہداء میں خواتین اور بچے بھی شامل
اشکین، پلوشی ،سپین کاریز،شاگی اوردوراہی کے علاقوں میں متعدد مکانات منہدم،کنڑ میں امریکی وافغان فوج نے 3عالم دین شہیدکردیئے،8 گرفتار
ضلع گلستان میں طالبان کاچیک پوسٹ پردھاوا،20 افغان فوجی ہلاک،3 امریکی فوجی فاریاب میں کارروائی کے دوران واصل جہنم ،متعدد زخمی
ہلمند میں طالبان حملے میں امریکی سمیت7 کمانڈوز ہلاک، پل خمری میں پولیس ہیڈکوارٹر پر فدائی حملے میں 13 پولیس اہلکار کام آئے،قافلے پر بم حملہ

کابل(نیٹ نیوز) امریکی بمباری، فائرنگ سے 60 افغان شہری شہید ، طالبان حملوں میں4 امریکیوں سمیت 44 اتحادی ہلاک، درجنوں زخمی، دوسری جانب ہٹ دھرمی کے باعث مذاکرات میں ڈیڈک پیدا ہوگئی، طالبان نے ہتھیار پھینکنے کا مطالبہ مسترد کردیا ،آغازمضان پروحشیانہ کارروائی،امریکی طیارے 3 گھنٹے تک آبادی پرآگ برساتے رہے،مساجد کو بھی نشانہ بنایا،شہداء میں خواتین اور بچے بھی شامل،اشکین، پلوشی ،سپین کاریز،شاگی اوردوراہی کے علاقوں میں متعدد مکانات منہدم،کنڑ میں امریکی وافغان فوج نے 3عالم دین شہیدکردیئے،8 گرفتار،ضلع گلستان میں طالبان کاچیک پوسٹ پردھاوا،20 افغان فوجی ہلاک،3 امریکی فوجی فاریاب میں کارروائی کے دوران واصل جہنم ،متعدد زخمی،ہلمند میں طالبان حملے میں امریکی سمیت7 کمانڈوز ہلاک، پل خمری میں پولیس ہیڈکوارٹر پر فدائی حملے میں 13 پولیس اہلکار کام آئے۔تفصیلات کے مطابق آغاز رمضان پر افغانستان کے صوبوں فراہ اور نیمروز میں وحشیانہ امریکی بمباری سے 50شہری شہید ہو گئے۔ طیارے آبادی پر 3 گھنٹے تک آگ برساتے رہے۔ مساجد کو بھی نشانہ بنایا گیا۔ بمباری سے ضلع بکوا کے اشکین، پلوشی اور سپین کاریز اورضلع دلارم کے شاگی اور دوراہی کے علاقوں میں متعدد مکانات   منہدم ہو گئے۔ مرنے والوں میں خواتین اور بچے بھی شامل ہیں۔ دوسری جانب طالبان نے صوبہ فراہ کے ضلع گلستان میں چیک پوسٹ پر دھاوا بول کر 20 افغان فوجیوں کو ہلاک کر دیا۔ ہلمند میں جوابی کارروائی میں ایک امریکی فوجی اور6 افغان کمانڈو ز مارے گئے۔ افغانستان میں امریکی وحشت و بربریت جاری ،3عالم دین شہید جبکہ 8کو گرفتار کرلیا۔ امریکی وافغان فوجوں نے قندوز، غزنی ،پک تیا اور کنڑ صوبوں میں عوام پر مظالم کا سلسلہ جاری رکھا ہوا ہے۔صوبہ قندوز ضلع خان آباد کے حسین خیل اور شامدخیل گاؤں پر افغان فوجو ں نے چھاپہ مار کر عوام پر تشددکرتے ہوئے 3 افراد کو حراست میں لیا۔دریں اثناء صوبہ غزنی ضلع شل گر کے نانی گاؤں پر امریکی و افغان فوجوں نے چھاپہ مار کر متعدد گھروں کے دروازوں کو تباہ کرنے کے علاوہ دو موٹرسائیکلوں کو بھی نذرآتش کردیا۔صوبہ پک تیا ضلع احمدآباد کے تان غڑک کے علاقے میں پرکارروائی کرتے ہوئے 5 افراد کو حراست میں لیاجبکہ صوبہ کنڑ ضلع وٹہ پور کے دیوزگاؤں کے مدرسے پر امریکی و افغان فوجوں نے چھاپہ ماکر تین علماء کرام مفتی سمیع اللہ، قاری مطیع اللہ اور ایک اور عالم دین کو شہید کردیا۔ادھرامریکی ہٹ دھرمی کے باعث افغان طالبان اور امریکا کے درمیان مذاکرات میں ڈیڈ لاک پیدا ہو گیا ہے او ر افغان طالبان نے زلمے خلیل زاد کی جانب سے ہتھیار پھینکنے کے مطالبے کو غیر حقیقی قرار دے کر مسترد کر دیا ہے۔افغان طالبان کے مذاکرات میں شامل ایک اہم رہنماء کے مطابق امریکا ایک طرف پوری دنیا کی منت سماجت کر کے مذاکرات کرنا چاہتا ہے اور دوسری جانب ایسے مطالبات بیچ میں لاتا ہے جو ایجنڈے کا حصہ نہیں ہوتے ہیں۔افغان طالبان نے کہا ہے کہ زلمے خلیل زاد کا یہ مطالبہ حقائق کے منافی ہے اور افغان طالبان سے ہتھیار پھینکنا خیالی مطالبہ ہے۔زلمے خلیل زا د نے طالبان سے کہا تھا کہ افغان عوام امن چاہتے ہیں اور وقت آگیا ہے کہ طالبان اپنے ہتھیار ڈال دیں اور تشدد ختم کیا جائے۔افغان طالبان کے ترجمان نے بھی خلیل زاد کے اس بیان پر شدید رد عمل کا اظہار کیا ہے اور کہا ہے کہ خلیل زاد ہمارے اسلحہ کی فکر نہ کریں اور خیالی مطالبات کے بجائے امریکا کو یہ بات سمجھ لینی چاہیے کہ افغانستان میں مزید طاقت کا استعمال ناکامی کے سوا کچھ بھی نہیں ہے اور نہ ہی اب افغانستان میں بیٹھے حکمرانوں کو بچایا جا سکتا ہے۔ مشرقی صوبے ننگرہار میں امریکی اور افغان فوج کی بربریت سے سات افراد شہید کر دیئے گئے جبکہ دو خواتین زخمی ہو گئیں۔کئی گھروں کو دھماکہ خیز مواد سے اڑا دیاگیا۔طالبان نے جھڑپ میں3امریکی ہلاک کر دیے۔طالبان نے امریکی اور افغان فوج کوافغان عوام کو ظلم اور بربریت کے ساتھ شہید کرنے سے باز رہنے پر زور دیا ہے ۔ افغانستان کے شمالی صوبے بغلان کے دارالخلافہ پل خمری میں قائم پولیس ہیڈکوارٹر پر  فدائی حملے کے نتیجے میں 13 پولیس اہلکار ہلاک ، 20 شہریوںسمیت 55افرادزخمی ہو گئے۔افغان وزارت داخلہ نے کہا کہ پولیس ہیڈ کوارٹر پر8 مجاہدین نے حملہ کیا جس کے نتیجے میں 13 اہلکار ہلاک اور متعدد زخمی ہوئے، حملے میں شدید بھاری نقصان اٹھانا پرا۔

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor