Bismillah

609

۲۳تا۲۹ذی الحجہ۱۴۳۸ھ   بمطابق  ۱۵تا۲۱ستمبر۲۰۱۷ء

فلسطینی مجاہد نے ٹرک نیچے 4 اسرائیلی فوجی کچل ڈالے،15زخمی

(شمارہ 576)

فلسطینی مجاہد نے ٹرک نیچے 4 اسرائیلی فوجی کچل ڈالے،15زخمی

واقعے نے اسرائیلی ریاست ہلا کر رکھ  دی،فوجیوں کے بھاگنے سے اسرائیل کی اقوام عالم میں سبکی، ویڈیو سامنے آگئی، غزہ، لبنان سمیت دنیا بھر میں مسلمانوں کا جشن، مٹھائیاں تقسیم
فادی قنبر نے جبل المکبر کے قریبی یہودی علاقے میں صہیونیوں کو نشانہ بنایا تو ہر طرف اتفراتفری پھیل گئی،کئی زخمیوں کی حالت نازک، ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ،شہید کی 3 بہنیں والد سمیت 9 گرفتار
 فوجیوں کی لاشیں ٹرک کے نیچے پھنسی رہیں،شدید زخمی ہونے کے باوجود بہادر فلسطینی نوجوان نے ٹرک کو پیچھے لے جانے کی کوشش کی تاکہ زخمی حالت میں پڑے یہودی فوجیوں کو بھی کچل سکے،عینی شاہدین
 مسلح فوجیوں نے نہتے ڈرائیور کا مقابلہ کرنے کے بجائے بھاگنے کو ترجیح دی،اسرائیلی میڈیا،شہیدفادی کی لاش دینے سے اسرائیل کا انکار،خوشی کا اظہار کرنے والے فلسطینیوں کے گھرمسمار کرنے کی صہیونی دھمکی
 فوجیوں کی ہلاکت پر صہیونی انتہائی بوکھلاہٹ کا شکار ،بیت المقدس کے غربی علاقے میں یہودیوں آبادکاروں کے فلسطینیوں پر حملے،کاریں اور املاک تباہ ،فلسطینی نوجوانوں اور اسرائیلیوں میں جھڑپیں شروع

مقبوضہ بیت المقدس(نیٹ نیوز) فلسطینی مجاہد نے ٹرک نیچے 4 اسرائیلی فوجی کچل ڈالے،15 شدید زخمی ،فادی قنبر نے جبل المکبر کے قریبی یہودی علاقے میں صہیونیوں کو نشانہ بنایا تو ہر طرف اتفراتفری پھیل گئی،ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ، واقعے نے اسرائیلی ریاست کو ہلا کر رکھ دیا ،فوجیوں کے بھاگنے سے اسرائیل کو اقوام عالم میں شدید سبکی کا سامنا کرنا پڑا، فوجیوں کے بھاگنے کی ویڈیو بھی سامنے آگئے جس میں نہتے ڈرائیور کا مقابلہ کرنے کے بجائے اسرائیلی فوجیوں نے بھاگتے نظر آئے،عینی شاہدین کے  مطابق فوجیوں کی لاشیں ٹرک کے نیچے پھنسی رہیں،شدید زخمی ہونے کے باوجود بہادر فلسطینی نوجوان نے ٹرک کو پیچھے لے جانے کی کوشش کی تاکہ زخمی حالت میں پڑے یہودی فوجیوں کو بھی کچل سکے،شہید کے والد اور 3 بہنوں کو گرفتار کرلیاگیا، صہیونی حکومت نے شہید کی ورثاء کو شہید کی لاش دینے سے بھی انکار کردیا،دنیا بھر میں  مسلمانوں کا جشن، مٹھائیاں تقسیم کیں۔ دوسری طرف بوکھلاہٹ کا شکار اسرائیلی حکومت نے خوشی کا اظہار کرنے والے فلسطینیوں کے گھروں کو مسمار کرنے کی دھمکی دے دی۔ادھر واقعہ کے بعد بیت المقدس کے غربی علاقے میں یہودیوں آبادکاروں کے فلسطینیوں پر حملے،کاریں اور املاک تباہ ،فلسطینی نوجوانوں اور اسرائیلیوں میں جھڑپیں شروع ہوگئیں۔ تفصیلات کے  مطابق فلسطینی نوجوان نے اسرائیلی فوجیوں پر ٹرک چڑھا دیا جس کے نتیجے میں 4 صہیونی فوجی  جہنم واصل کردیئے گئے جبکہ 15 زخمی ہوگئے۔متعدد کی حالت نازک ہے۔اسرائیلی فوجیوں کے علاوہ ایک ٹورسٹ گائیڈ نے فائرنگ کر کے فلسطینی ٹرک ڈرائیور 28سالہ فادی قنبر کوموقع پر ہی شہید کردیا۔شہید اسرائیلی جیلوں میں قید بھی رکھا گیا تھا۔ 4اسرائیلی فوجیوں کے مقبوضہ بیت المقدس میں مارے جانے کے واقعہ نے اسرائیل کو ہلاک کر رکھ دیا ہے۔اسرائیلی وزیر اعظم نے  کابینہ کی سیکورٹی کمیٹی کا اجلاس طلب کر لیا اور صہیونیوں کے شدید دباؤ پر خود جائے وقوعہ کا دورہ بھی کیا۔حملے کے بعد شہید فلسطینی نوجوان کی تین بہنوں والد سمیت 9 رشتے داروں کوگرفتار کر لیا ہے۔۔فلسطینی نوجوان کے حملے میں 4یہودی فوجیوں کی ہلاکت پر دنیا بھر کے فلسطینیوں اور مسلمانوں میں خوشی کی لہر دوڑ گئی۔لبنان و غزہ میں کئی مقامات پر مٹھائیاں تقسیم کی گئیں،صہیونی اہلکاروں نے مقبوضہ بیت المقدس میں شہید فلسطینی نوجوان کے آبائی علاقے جبل المکبر کا محاصرہ کر لیا ہے۔اسرائیل کی جانب سے جبل المکبر میں جلد ہی انہدامی کارروائیاں شروع ہونے کا خدشہ ہے۔ اسرائیلی پولیس کے مطابق شہید فلسطینی نوجوان نے جبل المکبر کے مغرب میں واقع اسرائیلی یہودی بستی تل پیوٹ یا ارمن ہناتزیو کی ٹرک معروف سڑک کی سروس روڈ پر کھڑے باوردی فوجیوں پر چڑھا دیا تھا۔ مقبوضہ بیت المقدس کے قدیمی علاقہ دیکھنے ٹورسٹ گائیڈکے ہمراہ پہنچنے والے اسرائیلی فوجی بس سے اتر رہے تھے کہ اچانک ایک تیز رفتار ٹرک ان کی طرف آیا اور انہیں روند ڈالا۔چند کے سوا باقی اسرائیلی فوجی جان بچانے کی کوشش میں بھاگ اٹھے۔اس موقع پر افراتفری پھیل گئی۔حملے کے بعداسرائیلی فوجیوں کی لاشیں ٹرک کے نیچے پھنسی رہیں۔ اسرائیلی فوج نے کرین منگوا کر ٹرک اٹھوا کر اپنے اہلکاروں کو زخمی حالت میں نکالا۔عینی شاہد ٹورسٹ گائیڈنے اسرائیلی فوج کے ریڈیو کو بتایا کہ ٹرک ڈرائیور نے اسرائیلی فوجیوں کو کچلاتو میں نے اپنا پورا پستول فلسطینی نوجوان پر خالی کر دیا تاہم اس نے زخمی ہونے کے باوجود ٹرک کو پیچھے لے جانے کی کوشش کی تاکہ وہ زخمی حالت میں پڑے یہودی فوجیوں کو بھی کچل سکے۔ایک اور اسرائیلی عینی شاہد کا کہنا ہے کہ جیسے ہی فلسطینی نوجوان نے اپنا ٹرک اسرائیلی فوجیوں پر چڑھایا تو وہاں موجود باقی فوجیوں نے اس پر اندھا دھند فائرنگ کر دی۔ڈرائیور نے اپنا ٹرک پیچھے کرنے کے بعد ایک بار پھر انہیں اپنی زد پر لے لیا۔ ہلاک اور زخمی ہونے والے اسرائیلی فوجیوں کی عمریں 20سے 25برس کے درمیان تھیں۔ 4فوجیوں کی ہلاکت نے اسرائیل کو ہلا کر رکھ دیا ہے۔ادھر سرائیل نے واقعے کے بعد فلسطینیوں کیخلاف انتقامی کارروائیاں شروع کر دی ہیں۔ فورسز نے شہید 28 سالہ فادی قنبر کے گھر پر چھاپہ مار کر ان کے والد اور بھائی سمیت 9 افراد کو گرفتار کر لیا۔ چھاپے کے دوران شہید کے گھر میں شدید توڑ پھوڑ کی گئی۔فلسطینی نوجوان کی جرأت مندانہ کارروائی پر دنیا بھر کے فلسطینیوں میں خوشی کی لہر دوڑ گئی۔حماس کے زیر انتظام غزہ اور لبنان میں فلسطینیوں نے واقعے پر خوشیاں منائیں اور مٹھائیاں بانٹیں۔ علاوہ ازیں قابض اسرائیلی فوجی اتوار کو مقبوضہ بیت المقدس کے غربی علاقے میں فلسطینی نوجوان کے ٹرک حملے کے دوران دم دبا کر بھاگ اٹھے۔ایک عرب ٹی وی نے حملے کے بعد کی ویڈیو جاری کر دی ہے جسے موت کا رقص کا نام دیا گیا ہے۔ اس ویڈیو میں صہیونی فوجیوں کو ٹرک آتادیکھ کر افراتفری میں دم دبا کر ادھر اْدھر بھاگ اٹھے۔قابض اسرائیلی فوج نیویڈیو سامنے آنے پر عالمی سطح پر سبکی سے بچنے کیلئے اپنے بزدل اہلکاروں کے بھاگ اٹھنے کی تحقیقات کا حکم دیدیا ہے،اسرائیلی میڈیا نے بھی اپنے فوجیوں پر تنقید کرتے ہوئے کہاکہ فوجیوںنے نہتے  ڈرائیور کا مقابلے کرنے کے بجائے بھاگنے کو ہی ترجیح ہے۔ادھر اسرائیلی حکومت نے فادی قنبر کی لاش اس کے اہلخانہ کو دینے کے بجائے نامعلوم مقام پر دفنانے کا فیصلہ بھی کیا ہے۔فلسطینی نوجوان کے جرأت مندانہ اقدام کو دنیا بھر میں مسلمانوں کی جانب سے سراہا جا رہا ہے۔سعودی عرب کے رہائشی اور ایک کالج میں استادمحمد حمان نے اپنی ٹویٹ میں فادی قنبر کے اقدام کو سراہتے ہوئے کہا ہے کہ اتوار کو مقبوضہ بیت المقدس میں فلسطینی نوجوان نے دہشت گردی پر حملہ کر کے اسے زیر کر لیا۔ اسرائیلی ادارے محض15 ماہ میں231 فلسطینیوں کو شہید کرچکے ہیں۔ فلسطینیوں نے مسجدالاقصیٰ کے خلاف اسرائیل کے شرپسندانہ منصوبوں اور یہودی آبادکاروں کے حملوں کے جواب میں اکتوبر2015 میں انتفادہ کی نئی تحریک شروع کی تھی۔ اس دوران نہتے فلسطینیوں نے قابض فوجیوں اور ان کی املاک پر چاقو یا گاڑیوں کے ذریعے حملے کئے۔ اسرائیلی فوجیوں و پولیس کے علاوہ قابض علاقوں میں تعمیر کی گئی غیرقانونی یہودی بستیوں کے مکین بھی نہتے فلسطینیوں کو گولیوں کا نشانہ بناتے رہے۔ اس دوران36 اسرائیلی مارے گئے تھے۔ اسرائیلی فوجیوں پر حملے چند ماہ میں بہت حد تک کم ہوگئے تھے۔ انتفادہ کی تحریک کے دوران سوا سال میں اسرائیلی231 بے گناہ فلسطینی شہید کئے جاچکے ہیں۔157 شہدا کے بارے میں اسرائیل کا دعویٰ ہے کہ انہوں نے اسرائیل میں حملوں کی کوششیں کی تھیں۔

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
TAKWIR Web Designing (www.takwir.com) Copyrights Alqalam Weekly Online