Bismillah

577

۲۱ تا۲۷ربیع الثانی۱۴۳۸ھ  ۲۰تا۲۶جنوری۲۰۱۷ء

ٓافغانستان،41ضلعی مراکز پر طالبان کا کنٹرول، حملوں میں124 اہلکار ہلاک، 20ٹینک تباہ

(شمارہ 576)

ٓافغانستان،41ضلعی مراکز پر طالبان کا کنٹرول، حملوں میں124 اہلکار ہلاک، 20ٹینک تباہ

زیر کنٹرول علاقوں کے معاملات طالبان چلا رہے ہیں،بدخشاں میں فوجی قافلے پر حملے میں18اہلکار ہلاک، 20 فوجی گاڑیاں بھی تباہ ہوگئیں،4چوکیوں پر قبضہ
بدخشاں میں تھانہ پر حملے میںکمانڈر سمیت8ہلاک،گورنر ننگر ہار کے قافلے پر طالبان حملے میں4کام آئے،لوگر میں فوجی آپریشن ناکام، مزاحمت پر دشمن فرار 20اہلکارمارے گئے
300 کمانڈوز ہلمند بھیجنے کا امریکی اعلان،افغانستان میں مقیم ہزاروں امریکی فوجی پیش قدمی کو نہ روک سکے تو مزید چند سو ہمارا راستہ کیا روکیں گے،طالبان

کابل(نیٹ نیوز) افغانستان کے41 ضلعی مراکز پر طالبان کا کنٹرول باقی اضلاع میں لڑائی کا سلسلہ جاری ہے،مجاہدین کا موسم سرما میں کارروائیاں بدستور جاری رکھنے کا اعلان ، فدائی حملوں، بم دھماکوں میں 124 اہلکار ہلاک جبکہ 20 فوجی ٹینک ، درجنوں فوجی گاڑیاں تباہ ، زیر کنٹرول تمام اضلاع میں طالبان معاملات چلا رہے ہیں، بدخشاں میں فوجی قافلے پر حملے میں18 اہلکار ہلاک،10ٹینک اور 20 فوجی گاڑیاں تباہ ہوگئیں۔گورنر ننگر ہار کے قافلے پر طالبان نے حملہ کرکے 4 اہلکاروں کو ٹھکانے لگایا، لوگر میں مجاہدین کے خلاف فوجی آپریشن ناکام، کرارا جواب ملنے پر فوجی اہلکار فرار، مجاہدین بھاگتے 20 اہلکاروں کو ٹھکانے لگا دیا۔امریکہ نے 300 کمانڈوز ہلمند بھیجنے کا اعلان کیا ہے جس کے ردعمل میں طالبان کا کہنا تھا کہ افغانستان میں مقیم ہزاروں فوجی ہماری پیش قدمی نہ روک سکے تو مزید چند سو ہمارا راستہ کیا روکیں گے۔ صوبہ بدخشاں کے صدرمقام فیض آباد شہر میں اتحادی فوج کے بڑے کاروان پرطالبان حملے میں 18 فوجی ہلاک جبکہ دو کمانڈروں ولی اللہ اور عبدالسلام سمیت 12 فوجی شدید زخمی ہوئے،صوبہ فراہ کے ضلع فراہ رود میں فوجی چوکی پر حملے میں ایک فوجی ہلاک جب کہ کمانڈر عبد اللہ سمیت 6 اہلکار زخمی ہوئے۔ایک ٹینک تباہ کر دیا گیا۔یک ہیوی مشن گن، ایک کلاشنکوف، 2 پستول اور 2 وائرلیس سیٹوں سمیت مختلف فوجی سازوسامان پر قبضہ کرلیا گیا۔ صوبہ فاریاب کے ضلع المار میں واقع فوجی مراکز پر حملے میں 2 فوجی یونٹوں، 4 چوکیوں پر طالبان نے قبضہ کر لیا۔ ضلع المار کے قرہ غویلئی کے علاقے میں واقع فوجی یونٹوں اور چوکیوں پرحملے میں ایک کمانڈر سمیت 4 اہلکار ہلاک اور 8 مزید زخمی ہوئے۔ادھرعمری آپریشن کے سلسلے میں نیمروز وفراہ صوبوں میں کٹھ پتلی فوجوں پر حملہ ہوا۔تفصیل کے مطابق صوبہ نیمروز ضلع خاشرود کے رزئی کے علاقے کے خیر آباد، شیشاوہ اور لیوا کے مقام پر دشمن سے جھڑپیں ہوئیں، جسمیں 8 ٹینک تباہ اور کمانڈروں سمیت مختلف النوع فوجی سازوسامان غنیمت کرلیا۔صوبہ فراہ ضلع فراہ رود عصام الدین پٹرول پمپ کے علاقے میں پولیس اہلکاروں کی دفاعی چوکی پر حملہ ہوا، جو دو گھنٹے تک جاری رہا، جس سے چوکی فتح، ٹینک وگاڑی تباہ، اور وہاں تعینات اہلکاروں میں سے ایک قتل، جب کہ کمانڈر عبد اللہ سمیت 6 اہلکار زخمی ہوئے۔قابل یاد آوری ہے کہ مجاہدین نے ایک ہیوی مشن گن، 2 پستول اور 2 وائرلیس سیٹوں سمیت مختلف النوع فوجی سازوسامان غنیمت کرلیا۔دوسری جانب ضلع پشترود میں مجاہدین نے 2 اہلکاروں کو ہلاک، جب کہ تیسری کو زخمی کردیا۔صوبہ ننگرہار کے ضلع غنی خیل میں صوبائی گورنر گلاب منگل کے کاروان پر طالبان حملے میں4 اہلکار ہلاک جبکہ 6 زخمی ہوگئے۔ تین فوجی گاڑیاں تباہ ہو گئیں۔ ضلع بٹی کوٹ کے باریک آب اور شینوار قلعہ کے علاقوں میں حملوں میں 4جنگجو ہلاک و زخمی ہوئے۔ صوبہ ننگرہار کے ضلع  پچیرآگام کے پاس صبر علاقے لنڈہ خیل کے مقام پر طالبان اور افغان فورسز کے درمیان لڑائی میں پانچ اہلکار ہلاک جبکہ تین زخمی ہوئے۔ ایک فوجی گاڑی بھی تباہ ہوئی۔صوبہ غزنی سے اطلاع ملی ہے کہ ضلع شلگر کے شاہ خوزکے علاقے میں واقع پولیس چوکی پر حملے میں4 اہلکار ہلاک جبکہ پانچ زخمی ہوئے۔ دو ٹینک تباہ ہو گئے۔افغانستان کے صوبہ غزنی میں فوجی کانوائے پر حملے میں دو اہلکار ہلاک اور پانچ زخمی ہو گئے جبکہ گاڑی تباہ ہو گئی۔آمدہ اطلاعات کے مطابق نیٹو افواج کے قافلے پر افغان طالبان نے صوبہ غزنی کے صدر مقام اور ضلع شلگر میں حملہ کیا جس کے نتیجے میں دو فوجی ہلاک اور پانچ زخمی ہو گئے جبکہ ایک رینجر گاڑی تباہ ہو گئی۔ صوبہ نیمروز کے ضلع خاشرود میں فوجیوں اور پولیس اہلکاروں پر طالبان حملے میں پولیس چیف پولیس چیف شراف سمیت 43اہلکار ہلاک جبکہ 10 ٹینک تباہ ہوگئے۔ضلع سنگین کے شکرشیلہ اور سور غوژیان کے علاقوں میں ضلعی مرکز میں محصور اہلکاروں کو سپلائی کرنے والے فوجیوں پر مجاہدین نے ہلکے وبھاری ہتھیاروں سے حملہ کیا، پانچ گھنٹے تک جاری رہا، جس میں 24 اہلکاروںہلاک ہوئے۔ضلع ناد علی سے اطلاع ملی ہے کہ ماتکئی کے علاقے میں ہونے والے بم دھماکہ سے ٹینک تباہ اور اس میں سوار اہلکار ہلاک وزخمی ہوئے۔صوبائی دار الحکومت لشکرگاہ شہر بولان کے علاقے کے نمروں کے مقام پر مجاہدین نے 2 فوجیوں کو سنائپر گن سے نشانہ بناکر مار ڈالے۔جبکہ ضلع گرشک نہر سراج کے علاقے کے یکلنگ کے مقام پر فوجی ٹینک مجاہدین کی نصب شدہ بم دھماکہ سے تباہ اور اس میں سوار 4 اہلکاروں کو ہلاکتوں کا سامنا ہوا۔ادھر ہرات میں فوجی حملے م یں3 ٹینک تباہ جبکہ درجنوں فوجی مارے گئے۔کٹھ پتلی فوجوں نے صوبہ لوگر ضلع چرخ میں امارت اسلامیہ کے مجاہدین کے خلاف سرچ آپریشن کا آغاز کیا۔رپورٹ کے مطابق سینکڑوں ٹینکوں اور گاڑیوں کے ہمراہ ہزاروں کٹھ پتلی فوجوں نے مذکورہ ضلع کے مختلف علاقوں میں مجاہدین کے خلاف سرچ آپریشن کا آغاز کیا، جنہیں مجاہدین کے جوابی حملوں اور دھماکوں کا سامنا ہوا اور اس دوران 20 سیکورٹی اہلکار ہلاک جبکہ 16 زخمی ہونے کے علاوہ دشمن کو مالی نقصانات کا سامنا بھی ہوا اور دشمن نے علاقے کو چھوڑ کر فرار کی راہ اپنالی۔

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
TAKWIR Web Designing (www.takwir.com) Copyrights Alqalam Weekly Online