Bismillah

613

۲۲تا۲۸محرم الحرام۱۴۳۸ھ   بمطابق ۱۳تا۱۹اکتوبر۲۰۱۷ء

المرابطون کے تحت، بالاکوٹ میں عصری تعلیمی اداروں کے طلبہ کادوسرا عظیم الشان اجتماع

(شمارہ 604)

المرابطون کے تحت، بالاکوٹ میں عصری تعلیمی اداروں کے طلبہ کادوسرا عظیم الشان اجتماع

مولانا طلحہ السیف نے آیات جہاد کی تفسیر بیان فرمائی اور شرکاء کے سوالات کے تسلی بخش جوابات دیئے،مولانا الیاس قاسمی جہاد پر تفصیلی بیان کیا
مجلس 3 حصوں کلمہ کا ذکر، استغفار اور درود شریف میں تقسیم تھی، تینوں دن مفتی عبدالمتین مجلس کو سنبھالا،مولانا عمار نے دور حاضر کے چیلنجز پر روشنی ڈالی
پروگرام میں دن بھر کے معمولات کا اختتام گناہوں پر ندامت بھرے آنسووں سے کیا جاتا تھا،اختتامی دعا المرابطون کے سابقہ ناظم بھائی سید علی نے کروائی

بالاکوٹ(القلم نیوز) المرابطون کے تحت بالاکوٹ میں عصری تعلیمی اداروں کے طلبہ کا دوسرا عظیم الشان سالانہ دینی و تربیتی اجتماع کا انعقاد کیا گیا ،یہ اجتماع 28 سے 30 جولائی تک جاری رہا، اجتماع میں مجلس 3 حصوں میں تقسیم تھی جس میں کلمہ  ذکر، مجلس استغفار اور مجلس درود شریف شامل ہے، تینوں دن مفتی عبدالمتین نے مجلس کو سنبھالا۔ 3روزہ یہ تربیتی اجتماع دنیا بھر کی طلبہ تنظیموں سے یکسر منفرد تھا ۔اجتماع میں مولانا طلحہ السیف نے مختلف اوقات میں آیات جہاد کی تفسیر بیان فرمائی جبکہ مولانا الیاس قاسمی نے جہاد پر مفصل بیان کیا۔ پروگرام میں دن بھر کے معمولات کا اختتام گناہوں پر ندامت بھرے آنسووں سے کیا جاتا تھا۔تفصیلات کے مطابق بالاکوٹ کے پُر فضا مقام پر طلبہ المرابطون عصری کے نوجوانوں کا دوسرا سالانہ اجتماع منعقد کیا گیا ۔ یہ تربیتی اجتماع دنیا بھر کی طلبہ تنظیموں کے اجتماعات سے یکسر مختلف ، منفرد اور اہم اجتماع تھا۔ کالج ، یونیورسٹیز کے ان نوجوانوں نے ایک ایسے دور میں علم جہاد تلے جمع ہونے کا فیصلہ کیا کہ جس وقت دنیا بھر کے کفار کے علاوہ خود اپنے ہی مسلمان بھی اللہ کے محبوب راستے میں نکلنے والوں پر طعن و تشنیع کے ناپاک تیر برساتے ہیں۔ ایک ایسا دور جہاں سروں پر بیٹھے نااہل اور غلام حکمران دین بیزاری کا کھلے بندوں اقرار کرتے نظر آتے ہیں۔ ایک ایسا دور جہاں جہاد کا نام لینے والوں کو دہشت گرد قرار دیا جاتا ہے۔ واقعی یہ نوجوان تعریف و تحسین کے ساتھ ساتھ مبارکباد کے بھی مستحق ہیں کہ فتنے کے اس دور میں بھی ذاتی غرض و غایت کو بھلاتے ہوئے صرف ایک ہی اعلان پر بھاگے چلے آئے۔  تین روزہ تربیتی اجتماع کے معمولات باہمی مشاور ت سے طے کئے گئے تھے۔ 28 جولائی بروز جمعتہ المبارک اجتماع کا باقاعدہ آغاز دن 10 بجے تلاوتِ کلام پاک سے کیا گیا۔ اس کے بعد اجتماع  کے تمام شرکاء نے اجتماعی تلاوت کی۔ تلاوت کے بعد ذکر کی مجلس سجائی گئی۔ مفتی عبدالمتین صاحب نے تینوں روز شرکاء کی اس مجلس کا انتظام سنبھالا۔ ذکر کی مجلس کو تین حصوں میں تقسیم کیا گیا تھا یعنی: کلمہ کا ذکر، مجلسِ استغفار اور مجلسِ درود شریف۔مولانا الیاس قاسمی صاحب نے تین نکاتی جماعتی نصاب کلمہ، نماز اور جہاد فی سبیل اللہ پر تفصیلی بیان کیا جس کے بعد المرابطون عصری کے کارکن بھائی رضوان سروش نے اجتماع سے متعلق تفصیلی ہدایات شرکاء کے سامنے رکھیں ۔ اجتماع میں رنگ و نور کی تعلیم کروائی گئی۔ المرابطون کے کارکن بھائی رضوان سروش نے کمیونیکشن اور سوشل نیٹ ورکنگ پر تفصیلی گفتگو کی۔اجتماع کے آخری روز  مولانا طلحہ السیف نے شرکاء کے سوالات کے تسلی بخش جوابات دئیے۔ اجتماع کی اختتامی مجلس نماز ظہر کے بعد منعقد کی گئی جس میں المرابطون عصری کے مرکزی ناظم بھائی ڈاکڑ سیف اللہ خالد نے نعروں کی گونج میں دلوں کو ہلا دینے والا بیان فرمایا اور آخر میں جماعت کے شعبہ المرابطوں عصری و مدارس کے ناظمِ اعلیٰ مولانا عمار صاحب نے شرکاء سے تفصیلی گفتگو فرمائی جس میں دورِ حاضر کے چیلنجز پر تفصیلی روشنی ڈالنے کے ساتھ ساتھ طلبہ کی ذمہ داریوں کو احسن انداز سے بیان کیا گیا۔ اختتامی دعا المرابطون کے سابقہ ناظم بھائی سید علی نے کروائی۔

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
TAKWIR Web Designing (www.takwir.com) Copyrights Alqalam Weekly Online