Bismillah

621

۱۹تا۲۵ربیع الاول۱۴۳۸ھ   بمطابق۸تا۱۴دسمبر۲۰۱۷ء

فوجی اڈے پر طالبان کا دھاوا،3 امریکیوں سمیت 97 اتحادی

(شمارہ 604)

فوجی اڈے پر طالبان کا دھاوا،3 امریکیوں سمیت 97 اتحادی

پکتیا، میدان، لوگر، خوست، غزنی میں مجاہدین کے تباہ کن حملے، 31 اہلکارہلاک،خاکریز کے علاقے اڑوندکرزالی میں طالبان کا دھاوا، 74 ہلاکتوں،6 یرغمال بنانے کا دعویٰ
 چار باغ علاقے میںانٹیلی جنس اہلکار قتل،طالبان حملوں میں ڈسٹرکٹ پولیس چیف سمیت 18 ہلاک،پکتیکا میں گورنر ہاؤس پر میزائل حملے میں10 ہلاکتیں ہوئیں
ترین کوٹ جا نے و الے فوجی قافلے پر مجاہدین نے حملے کر کے پسپائی پر مجبور کر دیا،13اہلکار ہلاک،لوگر میںطالبان حملوں سے جنگجوکمانڈرسمیت4ہلاک،امریکی زخمی
ہلمند میں اہم مرکز اور 2 چوکیاں فتح،بھاری مقدار میں اسلحہ اور فوجی سازو سامان غنیمت،گرشک میں پولیس وفوجیوں پر حملہ، 3 ٹینک تباہ، 14 اہلکارکام آئے

کابل(نیٹ نیوز) افغانستان میں طالبان کے اتحادیوں پر کڑے وار، امارت اسلامیہ میں مجاہدین کے وسیع اور تباہ کن حملوں کا سلسلہ جاری،قندھار اور قندوز میں مجاہدین نے دھاوا بول کر 3 امریکیوں سمیت 97 اتحادی ہلاک اور درجنوں زخمی کردیا، 7 ٹینک، 30 فوجی گاڑیاں اور بھاری مقدار میں فوجی سازو سامان غنیمت، پکتیا، میدان، لوگر، خوست، غزنی میں مجاہدین کے تباہ کن حملے، 31 اہلکارہلاک،خاکریز کے علاقے اڑوندکرزالی میں طالبان کا دھاوا، 74 ہلاکتوں  ،6 یرغمال بنانے کا دعویٰ،ہلمند میں اہم مرکز اور 2 چوکیاں فتح،بھاری مقدار میں اسلحہ اور فوجی سازو سامان غنیمت،گرشک میں پولیس وفوجیوں پر حملہ، 3 ٹینک تباہ، 14 اہلکارکام آئے، چار باغ علاقے میںانٹیلی جنس اہلکار قتل،طالبان حملوں میں ڈسٹرکٹ پولیس چیف سمیت 18 ہلاک،پکتیکا میں گورنر ہاؤس پر میزائل حملے میں10 ہلاکتیں ہوئیں۔تفصیلات کے مطابق قندھار میں افغان فوج کے اڈے پر طالبان کے حملے میں 40فوجی ہلاک ہوگئے،پکتیا، میدان، لوگر خوست،غزنی اور دیگرعلاقوں میں بھی طالبان نے کارروائیاں کیں جن میں 31اہلکار ہلاک ہوگئے جبکہ رباط کے فوجی مرکزپر بھی طالبان نے بڑا حملہ کردیا ہے اور شدید لڑائی کی اطلاعات موصول ہوئی ہیں،ادھرقندوز میں فائرنگ کرکے تین امریکی فوجیوں کو ہلاک کردیا گیا۔منصوری آپریشن کے سلسلے میں افغان طالبان نے صوبہ پکتیا کے ضلع جانی خیل کے مرکز پر حملہ کیا۔ جس کے نتیجے میں تمام مرکز اور چوکیوں پر قبضہ کرلیا جبکہ وہاں پر تعینات 19اہلکار ہلاک جبکہ 16گرفتار کر لئے دیگر اہلکارشہر نو کی جانب فرار ہو گئے۔طالبان کے مطابق فرار ہونے والوں کا پیچھا کیا جارہا ہے۔ذرائع کے مطابق مفتوحہ مرکز میں 7 ٹینک ،7فوجی رینجر گاڑیاں ،40کلاشنکوف ،7راکٹ لانچر ،6ہیوی مشین گنیں،2اینٹی ایئر کرافٹ گنیں اور 30فوجی گاڑیاں و دیگر فوجی سازوسامان پر طالبان نے قبضہ کرلیاہے ساتھ ہی طالبان نے رباط کے علاقے میں واقع فوجی مرکز پر حملہ کردیا ہے اور آخری اطلاعات آنے تک لڑائی جاری تھی۔طالبان کی کارروائی میں افغان فوج کے دو ٹینک تباہ اور ان میں سوار اہلکاروں کے ہلاک و زخمی ہونے کی بھی اطلاعات ہیں۔ صوبہ میدان سے ملنے والی اطلاعات کے مطابق ضلع چک کے ہیڈ کوارٹر ،باباقلعہ ،زوڑ بازار،پنہ،چک گاؤں اور کولک کے علاقوں میں واقع فوجی چوکیوں پر ہلکے و بھاری ہتھیاروں سے حملہ کیا جس میں ایک ٹینک تباہ ہوگیا۔افغانستان کے جنوبی صوبے ہلمند میں طالبان کے حملے میں 10 پولیس اہلکار ہلا ک ہوگئے ہیں۔افغان میڈیا کے مطابق ہلمند کے ضلع نوا میں گزشتہ رات طالبان نے پولیس چیک پوسٹ پر حملہ کیا۔میڈیا رپورٹ کے مطابق طالبان کا حملہ اتنا شدید تھاکہ چیک پوسٹ میں موجود پولیس کے 10 اہلکار ہلاک ہوگئے۔صوبہ قندوز کے صوبائی کونسل کے صدر امرالدین ولی نے کہا کہ طالبان نے کسی مزاحمت کے بغیر ہی صوبہ قندوز کے 13 دیہات پر قبضہ کر لیا ہے، انھوں نے کہا کہ حال ہی میں ان علاقوں پر فوج نے کنٹرول حاصل کیا تھا لیکن فوج کی جانب سے سیکیورٹی کی ناقص کارکردگی کی وجہ سے طالبان نے دوبارہ ان علاقوں پر قبضہ کر لیا ہے، حالیہ دنوں میں طالبان نے ہرات، ہلمند، بدخشاں اور بغلان سمیت کئی صوبوں پر اپنے حملے تیز کر دیے ہیں۔ہلمند میں اہم مراکز اور دو چوکیوں پر مجاہدین نے قبضہ کرلیا، مجاہدین نے 4 راکٹ لانچر، 4 کلاشنکوف، ایک ہیوی مشن گن، ایک اینٹی ائیرگرافٹ گن، ایک رائفل گن، 2 کارمولی بندوق، ایک مارٹرتوپ، 3 رات والے دوربین اور 6 وائرلیس سیٹوں سمیت مختلف النوع فوجی سازوسامان غنیمت کرلیا۔صوبہ پکتیا ضلع جانی خیل کے شپیکی کنڈاو کے علاقے میں مجاہدین نے کٹھ پتلی فوجوں کی فرنٹ لائن پر حملہ کیا،جس کے نتیجے میں 5 اہلکار ہلاک جبکہ 6 زخمی اور دشمن کو پانچ کلومیٹر تک پیچھے دھکیل دیا گیا اور اس دوران مجاہدین نے ایک فوجی ٹینک، ایک رینجر گاڑی اور دیگر فوجی سازوسامان غنیمت کرلی۔ہراہ پر مجاہدین نے فوجی کاروان پر حملہ کیا،جو دیر تک جاری رہا، جس کے نتیجے میں 9 اہلکار ہلاک جبکہ 8 زخمی اور دیگر فرار ہونے کے علاوہ  ایک ٹینک بھی تبا ہوا۔ صوبہ لوگر کے صدرمقام پل عالم شہر کے بادخواب کے علاقے ستانکزئی  کے مقام پر فوجیوں پر حملہ کیا، جس میں ایک فوجی مارا گیا۔دوسری جانب شہر کے قریب مجاہدین نے کاروان پر حملہ کیا، جس میں ایک ٹینک تباہ ہونے کے علاوہ 7 اہلکار بھی قتل ہوئے۔اسی طرح  اخندبابا غونڈی کے علاقے میں فوجی ٹینک دھماکہ سے تباہ اور اس میں سوار تین اہکار ہلاک ہوئے اور ساتھ ہی بادخواب کے علاقے میں کٹھ پتلی فوجوں پر ہونے والے حملے میں چار فوجی زخمی ہوئے۔ صوبہ میدان ضلع چک کے مختلف علاقوں میں مجاہدین اور کٹھ پتلی فوجوں کے درمیان چھڑنے والی لڑائی دن بھر جاری رہی، جس کے نتیجے میں تین ٹینک تباہ اور کمانڈر سمیت سات اہلکار ہلاک جبکہ پانچ زخمی اور دیگر فرار ہونے میں کامیاب ہوئے

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
TAKWIR Web Designing (www.takwir.com) Copyrights Alqalam Weekly Online