Bismillah

621

۱۹تا۲۵ربیع الاول۱۴۳۸ھ   بمطابق۸تا۱۴دسمبر۲۰۱۷ء

بھارت نے فوجی رسد کیلئے مقبوضہ کشمیر میں سرنگ بنالی

(شمارہ 620)

بھارت نے فوجی رسد کیلئے مقبوضہ کشمیر میں سرنگ بنالی

مقبوضہ کشمیرمیں قیدیوں سے غیرانسانی سلوک کیخلاف مکمل ہڑتال،شدید مظاہرے، سید علی گیلانی ، میرواعظ گھر وں میں نظربند ، یاسین ملک گرفتار ،لاٹھی اورگولی سے جذبہ آزادی کچلنا ناممکن ہے،حریت قائدین
نوجوانوں کوکپواڑہ اورترال میں سرچ آپریشن کے دوران دہشت گرد فوجیوں نے جعلی مقابلے میں شہید کیا،ہزاروں کشمیریوں  کی نماز جنازہ میں شرکت ،قابض فورسز کی جانب سے لگائی گئی تمام رکاٹیں روندڈالیں
منصوبہ بندی کے تحت جیلوں میں قیدبیگناہ کشمیریوں کوتشدد کا نشانہ بنایا جارہاہے،بھارت سرکاراورفورسزاہلکارمقبوضہ وادی میں ظلم و بربریت کے ذریعہ قبرستان جیسی خاموشی چاہتے ہیں،حریت قائدین کا ردعمل
کپواڑہ میں بھارتی کمانڈو جہنم واصل، 6فوجی بھی زخمی ہوئے،بانڈی پورہ اور پلوامہ میں  شدید جھڑپیں،ترال میں مکمل ہڑتال کے باعث تمام کاروباری و تجارتی مراکز بندرہے، انٹرنیٹ سروس بھی معطل رہی
نئی دہلی مقبوضہ کشمیر میں تعینات ساڑھے 7لاکھ فوج پر یومیہ 90کروڑروپے خرچ کرتا ہے لیکن وادی چھوڑنے کو تیار نہیں،عالمی دنیا بھارتی ریاستی دہشتگردی رکوانے میں کردار ادا کرے ،رہنما متحدہ جہاد کونسل

سرینگر(نیٹ نیوز) مقبوضہ کشمیر میں بھارت نے مظالم کی انتہا کردی، نہتے مظاہرین پر براہ فائرنگ کرنے لگا، سرچ آپریشن کے دوران مزید 6 بے گناہ کشمیری نوجوانوں کو شہید کردیا گیا،مقبوضہ کشمیرمیں قیدیوں سے غیرانسانی سلوک کیخلاف مکمل ہڑتال،شدید مظاہرے، نوجوانوں کوکپواڑہ اورترال میں سرچ آپریشن کے دوران دہشت گرد فوجیوں نے جعلی مقابلے میں شہید کیا،ہزاروں کشمیریوں  کی نماز جنازہ میں شرکت ،قابض فورسز کی جانب سے لگائی گئی تمام رکاٹیں روندڈالیں، کپواڑہ میں بھارتی کمانڈو جہنم واصل، 6فوجی بھی زخمی ہوئے،بانڈی پورہ اور پلوامہ میں  شدید جھڑپیں،ترال میں مکمل ہڑتال کے باعث تمام کاروباری و تجارتی مراکز بندرہے، انٹرنیٹ سروس بھی معطل رہی،سید علی گیلانی ، میرواعظ گھر وں میں نظربند ، یاسین ملک گرفتار ، حریت قائدین کا کہنا ہے کہ بھارت لاٹھی اور گولی سے جذبہ آزادی کچلنا چاہتا ہے،بھارت حکومت نے مقبوضہ کشمیر میں فوجی رسد کے لئے سرنگ بنا لی ہے، متحدہ جہاد کونسل کے رہنما کے مطابق نئی دہلی مقبوضہ کشمیر میں تعینات ساڑھے 7لاکھ فوج پر یومیہ 90کروڑروپے خرچ کرتا ہے لیکن وادی چھوڑنے کو تیار نہیں،عالمی دنیا بھارتی ریاستی دہشتگردی رکوانے میں کردار ادا کرے ۔ تفصیلات کے مطابق مقبوضہ کشمیر میں حریت قائدین کی اپیل پربھارتی جیلوں میں قیدکشمیریوں کیساتھ ناروا اور غیر انسانی سلوک کیخلاف پیرکو مکمل ہڑتال کی گئی۔مقبوضہ کشمیر میں کپواڑہ  اورترال کے علاقوں میں سرچ آپریشن کے دوران بھارتی فوج نے چار مزید کشمیری نوجوانوں کو شہید کر دیا ہزاروں کشمیریوں نے شدید احتجاج کیا اور نعرے بازی کی ہے۔ترال میں مکمل ہڑتال رہی اورتمام کاروباری مراکز بند رہے۔انٹرنیٹ سروس بھی معطل رہی۔ کشمیری مظاہرین کی طرف سے اسلام، پاکستان اور آزادی کے حق میں زبردست نعرے بازی کی جاتی رہی۔شہید کی نماز جنازہ میں کشمیری مردوخواتین نے جوق در جوق شرکت کی۔ کپواڑہ کے ماگام علاقہ میں نام نہاد سرچ آپریشن کے دوران 3مزید کشمیری نوجوانوں کو شہید کر دیا ہے۔ بھارتی فورسز کی جانب سے کشمیریوں کے گھروں میں گھس کر تلاشیاں لی گئیں اور قیمتی سامان کی توڑ پھوڑ کی گئی۔ تین کشمیریوں کی شہادت پر ہزاروں کشمیری سڑکوں پر نکل آئے اور بھارتی فوج کیخلاف سخت نعرے بازی کی گئی۔ ماگام اور ملحقہ علاقوں میں رات گئے تک سرچ آپریشن کا سلسلہ جاری تھا۔آخر ی اطلاعات تک بھارتی فوج کی ریاستی دہشت گردی کیخلاف کشمیری رات گئے تک احتجاجی مظاہرے جاری رکھے ہوئے ہیں۔ بھارتی فورسز اہلکاروں نے ترال میں بھی ایک  نوجوان کو شہید کر دیا ہے جس کا نام عادل رشید اور اس کا تعلق کشمیری جہادی تنظیم حزب المجاہدین سے بتایا جاتا ہے۔ اس کی عمر سترہ برس تھی ۔ نماز جنازہ میں ہزاروں کشمیریوں نے شرکت کی اور بھارتی فورسز کی طرف سے کھڑی گئی تمام تر رکاوٹیں پاؤں تلے روند ڈالیں۔اس موقع پرشدیدجذباتی مناظردیکھنے میں آئے۔متحدہ جہد کونسل کے رہنما  شیخ جمیل الرحمن نے  اپنے ایک انٹرویو میں انکشاف کیا کہ بھارت مقبوضہ کشمیر میں فوجی ٹھکانے مضبوط بنا رہا ہے،اس نے وادی میں رسدکے لیے سرنگ بنا لی،نئی دہلی جموں کشمیر کی اہمیت سے اچھی طرح آگاہ ہے،ساڑھے 7لاکھ فوج پر یومیہ 90کروڑروپے خرچ کرتا ہے ، وہ مقبوضہ وادی کی اہمیت سے آگاہ ہے اسی لئے چھوڑنے کو تیار نہیں۔انہوں نے عالمی برادری سے مطالبہ کیا کہ وہ مقبوضہ وادی میں کشمیریوں پر ہونے والے مظالم سے بھارت کو روکے۔ادھرمقبوضہ کشمیر میں ضلع بانڈی پورہ کے علاقے حاجن میں احتجاجی مظاہرین اور بھارتی فورسز کے درمیان جھڑپوں میں ایک خاتون سمیت کئی افراد زخمی ہوئے۔ کشمیر میڈیا سروس کے مطابق جھڑپیں بھارتی فورسز کی طرف سے حاجن میں محاصرے اور تلاشی کی کارروائی شروع کرنے کے بعد ہوئیں۔ پولیس نے صحافیوں کو بتایا کہ بھارتی فوج کے اہلکاروں، پولیس کے سپیشل آپریشن گروپ (SOG) اور سینٹرل ریزرو پولیس فورس نے علاقے میں مشترکہ طورپر آپریشن شروع کیا۔ پولیس نے بتایا کہ ایک خاتون ٹانگ میں پیلٹ لگنے سے زخمی ہوئی جس کو علاج کے لیے مقامی ہسپتال منتقل کیا گیا۔بھارتی فورسز نے علاقے کے تمام خارجی اور داخلی راستوں کو سیل کرکے گھر گھر تلاشی شروع کردی۔ مقامی لوگوں نے گھر وں سے نکل کر زبردست احتجاجی مظاہرے کئے۔ بھارتی فورسز نے مظاہرین کو منتشر کرنے کے لیے پیلٹ گن سمیت طاقت کا وحشیانہ استعمال کیا جس کے نتیجے میں کئی افراد زخمی ہوئے۔مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج نے ہندواڑہ کے علاقے ماگام میں شہید کئے گئے تین نوجوانوں کی لاشیں مقامی لوگوں کے سپرد کرنے سے انکار کر دیا جبکہ شہداء کی شناخت بھی جاری نہیں کی۔ بھارتی فوج نے جھڑپ میں ایک حوالدار کے ہلاک اور تین اہلکاروں کے زخمی ہونے کی تصدیق بھی کی ہے۔مختلف علاقوں میں مظاہرے اور پر تشدد احتجاج جاری ہے۔ پلوامہ میں طلبا اور فورسز کے درمیان جھڑپیں،پتھرائو اور شیلنگ اور ہوائی فائرنگ سے متعدد زخمی ہو گئے۔ تفصیلات کے مطابق ترال کے مقامی لوگوں کے عمائدین پرمشتمل ایک وفد نے ہندواڑہ میں فوجی کیمپ جا کر بھارتی فوج سے مطالبہ کیا کہ شہدا ء کی میتیں ان کے سپرد کی جائیں تاکہ انہیں اسلامی عقائد کے مطابق سپرد خاک کیا جا سکے اور شہداء کی شناخت بھی ظاہرکی جائے تاہم بھارت فوج نے لاشیں سپرد کرنے اور شناخت ظاہر کرنے سے انکار کر دیا جس پر عمائدین نے احتجاج کیا۔اس دوران لوگوں کی بڑی تعداد بھی کیمپ کے باہر پہنچ گئی اور شدید احتجاج کیا۔مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کے ہاتھوں شہید ہونے والے 3نوجوانوں کو سپرد خاک کردیا گیا ہے۔ قابض فورسز کا کپواڑہ کے جنگلات اور متعدد دیہات کا محاصرہ، گھر گھر تلاشی کے دوران لوگوں پر تشدد کیا گیا۔ وادی کے کئی علاقوں میں ہڑتال، کاروباری مراکز بند رہے۔اس دوران کرالہ گنڈ ہندواڑہ کے نصف درجن علاقوں اننون،حاجن،گنڈ کمال،ڈوگر،رت کھنڈی،گنڈ چوبوترا کا دو روز سے کریک ڈائو ن جاری ہے جس کے دوران فوج اور پولیس نے گھر گھر تلاشی کارروائیا ں کی ہیں۔مقامی لوگو ں کا کہنا ہے کہ فوج نے ٹریکٹر ڈرائیور شہزاد احمد لون کو گرفتار کیا جس کاا بھی تک کوئی اتہ پتہ نہیں ہے۔ فوجی کارروائی سے علاقہ میں خوف و دہشت کا ماحول ہے۔ علاقے میں لوگوں کا کہنا ہے بھارتی فوج نے کئی دیہات کا محاصرہ کر کے گھر گھر تلاشی لی اور لوگوں کو تشدد کا نشانہ بنایا۔لوگوں کے شناختی کارڈ چیک کیے گئے،خواتین اور بچوں کو بھی تشدد کا نشانہ بنایا گیا اور گھریلو سامان کی توڑ پھوڑ کی گئی۔

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
TAKWIR Web Designing (www.takwir.com) Copyrights Alqalam Weekly Online