Bismillah

621

۱۹تا۲۵ربیع الاول۱۴۳۸ھ   بمطابق۸تا۱۴دسمبر۲۰۱۷ء

نبی کریمﷺ کیـ غلاموں نے اپنے جسم کٹوا کر صورت اور سیرت کا ہر پہلو محفوظ رکھا، مفتی عبدالرؤف اصغر

(شمارہ 620)

نبی کریمﷺ کیـ غلاموں نے اپنے جسم کٹوا کر صورت اور سیرت کا ہر پہلو محفوظ رکھا، مفتی عبدالرؤف اصغر

فاروقیہ مسجد میں عظیم الشان سعد اقبال شہید کانفرنس کا انعقاد، حیدرآباد، میرپور خاص اور نوابشاہ ڈویژن کے تمام اضلاع سے کثیر افراد سمیت تقریباً 2500  افراد کی شرکت
شرکاء مجلس سیرت نبی صلی اللہ وسلم کے درخشندہ پہلو اور شہداء اسلام کی قربانیوں کے تذکرے پر آبدیدہ ہوتے رہے،رقت آمیز دعا پراجتماع اختتام پذیر

حیدرآباد (القلم نیوز)فاروقیہ مسجد میں عظیم الشان سعد اقبال شہید کانفرنس کا انعقاد، اہل علاقہ کی بھرپور شرکت اور مہمانوں کا والہانہ استقبال۔ جرنیل جیش محمد حضرت مفتی عبدالرؤف صاحب کاضلع حیدرآباد، لطیف آباد، فاروقیہ مسجدمیں ’’سید سعد اقبال شہید‘‘ کانفرنس سے خطاب۔شرکاء مجلس سیرت نبی صلی اللہ وسلم کے درخشندہ پہلو اور شہداء اسلام کی قربانیوں کے تذکرے پر آبدیدہ ہوتے رہے۔مفتی صاحب کے بیان سے پہلے مولانا مجاہد عباس صاحب اور مفتی قیصر صاحب نے شرکاء مجلس میں جہادی سیرت کے پہلو اجاگر کئے۔ شرکاء انتہائی پرجوش ہوئے۔مولانا قطب الدین ناظم المرابطون کراچی کے صوبائی منتظمین،  بھائی عارف صاحب اور بھائی ریحان صاحب اور کچھ کراچی کے ضلعی ذمہ داران نے بھی خصوصی شرکت کی۔سندھ کے حیدرآباد، میرپور خاص اور نوابشاہ ڈویژن کے تمام اضلاع سے کثیر افراد سمیت تقریباً 2500  افراد نے شرکت کی۔  شرکاء نے تربیہ کے ارادے بھی کیے۔ حضرت مفتی صاحب نے فرمایا: میرے آقاﷺکا پیارا نام ’’المجتبی‘‘ میرے آقاﷺ کو ہر چیز چنی ہوئی ملی۔ خاندان، علاقہ، دین، کتاب، امت، غلام۔ میرے آقاﷺ کو چنے ہوئے غلام ملے۔ جنہوں نے میرے آقاﷺ کی حرمت پر اور دین کی حفاظت پر جانیں نچھاور کیں۔ محمد رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے دیوانوں کو دیکھو جنہوں نے اپنی کھوپڑیوں کے مینار تعمیر کروائے اپنی لاشوں کے انبار لگوائے صحراؤں اور برف پوش پہاڑوں سمندروں میں اپنے جسموں کے ٹکڑے بکھیرے لیکن تمام ظالم فرعون غرق ہوتے گئے اور میرے آقاﷺکی سیرت و صورت کا ہر پہلو میرے آقا کے دیوانوں نے محفوظ رکھا۔معاذ اور معوذ کی طرح آج وہی منظر میری آنکھوں کے سامنے آرہا ہے۔ دو کمسن چھوٹے بچے ہیں۔ ایک عارف شہید جیسا بلند قامت خوبصورت نوجوان۔ میں نے پوچھا کہ درود شریف کتنا پڑھتے ہو؟ کہنے لگا، روزانہ سونے سے پہلے 32  ہزار مرتبہ پڑھتا ہوں اور دوسرا سعد شہید جیسا پیارے وجود والا، کہا، راستے میں بڑے کٹھن پہاڑ ہیں، بہت سخت طویل راستہ ہے، راتوں کی تاریکی کا سفر ہے، کیسے لڑو گے، کیسے جاؤ گے تو جیسے معاذ اور معوذ ایڑیاں اٹھا کر دکھا رہے تھے۔ لڑ لڑ کر دکھا رہے تھے، ایسے ہی یہ نوجوان اپنے کندھوں پر پٹھو کا وزن اٹھا کر دکھا رہے تھے، ڈنڈ بیٹھکیں لگا کر دکھا رہے تھے کہ اجازت مل جائے تو غزوہ ہند پر جا دکھائیں گے۔ ہاں رب پر یقین رکھنے والے ایسے ہی ہوتے ہیں۔ مجاہدوںکے سامنے پہاڑ غلام  بنتے ہیں، سمندرغلام بنتے ہیں اس لئے کہ فاروق اعظم کا حکم ہے۔ میرے آقاﷺنے فرمایا کہ میری امت غزوۂ ہند لڑے گی۔ ہندوستان  کے مشرکوںکو جکڑ کر لائے گی۔ بتاؤ کوئی روک سکتاہے؟ کوئی نہیں روک سکتا۔ کوئی مودی جیسا درندہ نہیں روک سکتا۔ سعد شہید اور حیدرآباد کے 12 شہداء ان کی روحیں بدر کی مٹی سے اٹھی ہیں معاذ اور معوذ کی طرح اپنے دشمن پر جھپٹنے سے انہیںکوئی نہیں روک سکتا۔ کوئی پہاڑ، کوئی درندہ ان کے راستے کی رکاوٹ نہیں بن سکتا۔سعد شہید کے کتنے ہم عمر جنہیں سارا دن فونوں پر لڑکیوں سے باتیں اور عشق معاشقہ سے فرصت نہیں،  دوسری طرف یہ دیوانے جو ساری رات رب کے سامنے سجدے کرتے دعائیں کرتے اور اپنی عافیہ جیسی بہن کیلئے تڑپتے ہیں۔ دشمنوںکے سامنے جا کر برسرپیکار ہوتے ہیں۔ یہ پیارے آقاﷺکی سیرت پر قربان ہونے والے۔سعد کی ماں وہ ماں ہے جس نے اپنے بیٹے کو سجا کر بھیجا، اس ماں سے ہاتھ جوڑ کر التجا کرتا ہوںکہ عبدالرؤف اور اس کے بیٹوں کیلئے بھی ایسی موت مانگنا۔آخر میں رقت آمیز دعا پر اس اجتماع کا اختتام ہوا۔اس موقع پر سعد شہید کے والد محترم نے اپنی بیٹے کے مہمانوں کے اکرام کے طور پر تقریبا دوہزار افراد کے کھانے کا بھی مکمل انتظام فرمایا تھا۔

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
TAKWIR Web Designing (www.takwir.com) Copyrights Alqalam Weekly Online