Bismillah

627

۱تا۷جمادی الاولیٰ۱۴۳۹ھ   بمطابق ۱۹تا۲۵جنوری۲۰۱۸ء

قندھار میں امریکی کانوائے پر فدائی حملہ

(شمارہ 623)

قندھار میں امریکی کانوائے پر فدائی حملہ،سرپل میں وسیع علاقے پر طالبان کا کنٹرول(71اتحادی ہلاک،10 ٹینک تباہ)

کمانڈ ر رئیس سمیت 40 افغان اہلکاروں کا مجاہدین کے سامنے سرنڈر،زابل،فراہ میں لیزر گن کے حملوں میں4 ہلاک،ہلمند میں2 چیک پوسٹوں پر طالبان کا قبضہ
نیمروزا ورفراہ میں 4 ٹینک، 18 ٹینکر تباہ، 21 اہلکار ہلاک وزخمی،تخار و غزنی میں 16 چوکیاں فتح،پکتیکا، ننگر ہار میں بھی طالبان کے تباہ کن حملے،درجنوں ہلاکتیں ہوئیں

کابل(نیٹ نیوز) افغانستان میں طالبان کی جانب سے منصوری آپریشن بدستور جاری، فدائی کارروائیوں اور مختلف حملوں میں مجاہدین نے 71 اتحادی ہلاک اور  درجنوں زخمی کردیئے ،10 فوجی ٹینک بھی تباہ ہوئے،کمانڈر رئیس سمیت 40 اہلکاروں نے مجاہدین کے سامنے سرنڈر کردیا، طالبان نے سرپل میں وسیع علاقے پر کنٹرول حاصل کرلیا جبکہ تخار اور غزنی میں بھی مجاہدین نے 16 چوکیوں پر قبضہ کرلیا۔ زابل  اور فراہ میں لیزر گن کے حملوں میں 4 افغان فوجی مارے گئے، نمبروز میں4 ٹینک اور 18 ٹینکر تباہ ہوئے جس کے نتیجے میں21 اہلکار ہلاک و زخمی ہوگئے۔ تفصیلات کے مطابق افغانستان کے صوبہ سر پل میں اہم کمانڈر نے 40اہلکاروں   سمیت طالبان کے سامنے سرنڈر کردیا۔ سرپل ضلع سنگ چارک میں کمانڈر رئیس کریم نے 40 اہلکاروں سمیت طالبان کے سامنے سرنڈر کردیا جس کے بعد طالبان کا تبر کے وسیع علاقے پر بھی کنٹرول قائم ہو گیا ہے۔دوسری جانب افغان صوبہ فراہ اور زابل میں لیزر گن حملے میں 4پولیس اہلکار ہلاک ہو گئے۔ زابل میں زیارت کے علاقے میں واقع چوکی پر لیزر گن حملہ ہوا جس سے 2 اہلکار موقع پر ہلاک ہوگئے جبکہ صوبہ فراہ کے ضلع پشترود کے مزار گاؤں کے علاقے میں اسی نوعیت کے حملے سے 2 اہلکار ہلاک جبکہ ایک زخمی ہو گیا۔امریکی فوج نے لوگرکے ضلع چرخ میں خروٹ گاوں میں چھاپے مارے اور لوگوں کے گھروں سے سونا اور دیگرقیمتی ساما ن لوٹ لیا جبکہ فوجی واپس جاتے ہوئے چار افراد کو اپنے ساتھ لے گئے۔ اسطرح شمالی صوبہ بلخ کے ضلع چمتال میں نورشار کے مقام پر مختلف گھروں پر چھاپوں کے دوران امام مسجد سمیت سات افراد کو گرفتار کرکے نامعلوم مقام پرمنتقل کردیاگیا۔دوسری جانب وسطی صوبہ غزنی کے ضلع شولگر میں افغان طالبان نے مختلف کاروائیوں میں گیارہ افغان فوجیوں کو ہلاک کردیا۔ غزنی کے شولگر ضلع پرمکمل کنٹرول کیلئے طالبان نے پیش قدمی شروع کردی ہے جبکہ شمالی صوبہ بادغیس اور مشرقی صوبہ پکتیکا میں طالبان نے تین چیک پوسٹوں پرقبضہ کرکے بھاری مقدار میں ہتھیار بھی قبضے میں لے لئے ہیں۔جنوبی مشرقی افغانستان کے صوبہ ہلمند میں طالبان کے حملوں میں 11سیکورٹی اہلکار ہلاک جبکہ قندھار میں امریکی کانوائے پر ہونے والے حملے میں متعدد فوجی زخمی ہو گئے۔آخری اطلاعات تک متعدد اہلکار زخمی ہو گئے تاہم ہلاکتوں کے بارے میں اطلاعات سامنے نہیں آسکیں۔ بادغیس کے آئی جی پولیس عبد الرؤف تاج کے مطابق آب قمری پر حملے کے بعد مقامی پولیس چیف عبد الرسول مدد کیلئے جارہے تھے کہ طالبان نے گھات لگا کر حملہ کر کے انہیں ساتھیوں سمیت قتل کر دیا۔آب قمری کی کئی چیک پوسٹوں پر طالبان کا قبضہ ہو گیا ہے۔ طالبان نے جنوبی صوبے ہلمند اور شمال مشرقی صوبے پکتیکا میں سیکورٹی اہلکاروں کو نشانہ بنایا، ہلمند میں طالبان کے حملے میں 14 سیکورٹی اہلکار ہلاک ہوئے۔ادھر منصوری آپریشن کے سلسلے میں صوبہ ہلمند کے صدر مقام لشکرگاہ شہر میں فوجی چوکیوں پر حملہ ہوا۔رپوٹ کے مطابق حلقہ نمبر دو کے علاقے کے قلعہ سنگ کے مقام پر واقع چوکیوں پر مجاہدین نے حملہ کیا، جس سے 2 چوکیاں فتح، ایک ٹینک 2 رینجر گاڑیاں تباہ اور 16 اہلکار ہلاک ہوئے۔ضلع جمعہ بازار سے اطلاع ملی ہے کہ تپہ قشلاق کے علاقے میں دشمن سے جھڑپیں ہوئیں، جس سے 4 ٹینک تباہ اور متعدد اہلکار ہلاک وزخمی ہوئے۔صوبہ خوست ضلع مندوزئی کے مربوطہ علاقے میں انٹیلی جنس سروس اہلکاروں کا ٹینک بارودی سرنگ کا  نشانہ بن کر تباہ ہوا اور اس میں سوار مخبر ہلاک و زخمی ہوئے۔دوسری جانب  حیدرخیل کے علاقے میں مجاہدین کے حملے میں زخمی ہونے والے سپیشل فورس کمانڈر نے شدید زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے ہسپتال میں دم توڑ دیا۔رپورٹ کے مطابق  صوبہ ننگرہار ضلع پچیرآگام کے پاس صبر کے علاقے میں بم دھماکہ سے فوجی رینجر گاڑی تباہ اور اس میں سوار 6 اہلکار لقمہ اجل بن گئے۔تخار اور غزنی میں طالبان نے 16 چوکیوں پر قبضہ کرلیا۔رپورٹ کے مطابق صوبہ غزنی ضلع شلگر کے نانی کے علاقے میں واقع چوکیوں پر مجاہدین نے حملہ کیا، جس میں ایک چوکی فتح ہوئی اور وہاں تعینات 10 ہلکار ہلاک جبکہ دیگر زخمی اور فرار ہونے میں کامیاب ہوئے،ایک ٹینک تباہ اور مجاہدین نے ایک راکٹ لانچر، ایک مارٹرتوپ،ایک اینٹی ایئر کرافٹ گن، ایک امریکی ہیوی  مشین گن،5 کلاشنکوفیں اور دیگر فوجی سازوسامان غنیمت کرلی۔منصوری آپریشن کے سلسلے میں صوبہ نیمروز ضلع دلارام میں فوجی قافلے پر مجاہدین نے حملہ کیا۔ذرائع کے مطابق حاجی ولی جان پٹرول پمپ کے علاقے میں فوجی کانوائی پر مجاہدین نے ہلکے وبھاری ہتھیاروں سے حملہ کیا، جو دو گنھٹے تک جاری رہا، جس سے 2 ٹینک تباہ، 15 اہلکار ہلاک ہوئے۔

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
TAKWIR Web Designing (www.takwir.com) Copyrights Alqalam Weekly Online