Bismillah

672

۶تا۱۲ربیع الثانی۱۴۴۰ھ  بمطابق       ۱۴تا۲۰دسمبر۲۰۱۸ء

بہاولپور سمیت4مقامات پر شاندار تقریری مقابلوںکاانعقاد

(شمارہ 623)

بہاولپور سمیت4مقامات پر شاندار تقریری مقابلوںکاانعقاد

بہاولپور میں مفتی عبدالرؤف اصغرمہمان خصوصی تھے، 33 طلباء نے حصہ لیا،محمد حذیفہ پہلے، محمد رضوان دوسرے اورمحمد یوسف نے تیسرے نمبر پر رہے
کوہاٹ میںمحمد شاہ فہد اول، محمد قاسم دوم، سید ولی نے سوم پوزیشن لی،مفتی مجاہدین، مولانا اشرف شہید ی اور مفتی ضیا رحمن منصفین تھے
ڈی جی خان میںمولانا رفیق، مولانا عمر، مولانا عمران منصفین تھے،پہلا انعام محمد فیاض اور محمد ریحان،دوسرا ضیاء الرحمن،تیسرا عمر فاروق نے لیا
کوئٹہ میں پہلی پوزیشن  احسان اللہ،دوسری حمزہ اور تیسری نصیر احمدنے لی،مولانا مجاہد عباس مہمان خصوصی تھے،7 خطباء نے حصہ لیا

بہاولپور(القلم نیوز) بہاولپور ڈویژن سمیت  کوہاٹ، ڈی جی خان اور کوئٹہ میں بزمی یوسفی شعبہ المرابطون کے تحت شاندار تقریری مقابلوں کا نعقاد کیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق 14 دسمبر بزم یوسفی شعبہ المرابطون  بہاولپورڈویژن کا تقریری مقابلہ ہوا جس میں 33 طلباء نے حصہ لیا۔ جس میں مولانا مفتی ارشاد احمد صاحب، مولانا عبدالرزاق صاحب اور مولانا رمضان صاحب نے منصفین کے فرائض سرانجام دئے۔اول پوزیشن محمد حذیفہ جامعۃ الصابر بہاولپور، دوئم پوزیشن محمد رضوان جامعہ قدسیہ بہاولپور،تیسری پوزیشن محمد یوسف سراج العلوم لودھراں کے طلباء نے حاصل کی۔حضرت مفتی عبدالرؤف اصغر صاحب نے بطور مہمان خصوصی کے طور پر شرکت فرمائی  حضرت مفتی صاحب  کے بیان و دعا کے ساتھ رات ڈھائی بجے پروگرام  ختم ہوا۔ حضرت مفتی صاحب کے بیان سے پہلے مولانا عطاء اللہ کاشف صاحب کا بیان ہوا۔کوہاٹ میں بزم یوسفی کے زیر اہتمام شاندار تقریری مقابلہ ہوا جس میں27 مقررین نے شرکت کی۔اول پوزیشن محمد شاہ فہد مدرسہ اصحاب صفہ کوہاٹ،دوم محمد قاسم  مدرسہ روضۃ العلوم بنوں،سوم سید ولی  جامعہ امام ابوحنیفہ کوہاٹ نے حاصل کی۔ مفتی مجاہدین مولانا اشرف شہیدی اور مفتی ضیاء الرحمان منصفین تھے۔ حبیب، وزیر بہادر، ذیشان اللہ جلالی اور ارشاداللہ عقابی اور بھائی اشراق صاحب نے خوبصورت نظمیں پیش کیں۔سامعین میں 40 علماء سمیت 500 تک شرکاء شامل رہے۔ خصوصا مولانا عبدالمعین مہتمم جامعہ حقانیہ کوہاٹ، مولانا عمر ھادی ناظم جامعہ ابو حنیفہ، مولانا عبدالستارحقانی، مولانا سراج، مولانا طاھر، مولانا شریف جان صاحب بنوں شامل تھے۔مہمان خصوصی مولانا عمیر صاحب نے علماء اور طلبہ کو مخاطب کرکے فرمایا کہ اسلام کا غلبہ حضور صلی اللہ علیہ وسلم کا مشن تھا اور اسی کیلئے آپ کو اللہ تعالی نے جھاد و قتال کا فریضہ عطا فرمایا۔ مولانا نے مزید فرمایا کہ مکہ میں جھاد نہ تھا تو اسلام کی اشاعت تو ہوتی رہی لیکن غلبہ نہیں تھا ۔مدنی دورمیں جھاد کی وجہ سے اسلام کو اشاعت کے ساتھ ایسا غلبہ ملا کہ کچھ ہی عرصہ میں پوری دنیا پر اسلام کا جھنڈا لہرا رہا تھا لیکن آج افسوس ہم نے جھاد چھوڑا تو اسلام کی اشاعت تو ہو رہی ہے لیکن اسلام کا غلبہ نہیں۔ آج امیر محترم مولانا محمد مسعود ازھر صاحب امت کو پھر اسی طریقہ پر لے کر جا رہے ہیں جس طریقہ پر حضور صحابہ کو لیکر چلے تھے۔ عنقریب وہ وقت آئے گا کہ پوری دنیا پر جھاد کی برکت سے اسلام کا غلبہ ہوگا۔پروگرام مغرب سے شروع ہوکر 12 بجے ختم ہوا۔ ادھرڈی جی خان میں تقریری مقابلے میں 8خطباء نے حصہ لیا جبکہ 100 کے قریب سامعین نے شرکت کی۔ اول انعام محمد فیاض کاشف العلوم کوٹ ادو اور محمد ریحان اشرف المدارس ،دوم: ضیا الرحمن حسینیہ  اورسوم: عمر فاروق کاشف العلوم کوٹ ادو نے حاصل کیا۔ مولانا رفیق، مولانا عمر اورمولانا عمران نے منصفین کے فرائض انجام دیئے۔ کوئٹہ ڈویژن میں کل7  خطباء نے تقریری مقابلے میں حصہ لیا۔ اول انعام احسان اللہ ادارہ القران،دوم: حمزہ جامعہ سلفیہ اورسوم: نصیر احمد محمود المدارس نے حاصل کیا۔ منصفین کے فرائض مولانا احمد شاہ، مولانا عبد اللہ، مولانا عبدالحکیم صاحب نے سرانجام دئے۔ مہمان خصوصی مولانا مجاہد عباس صاحب تھے۔300 کے قریب سامعین نے تقریب میں شرکت کی۔

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
TAKWIR Web Designing (www.takwir.com) Copyrights Alqalam Weekly Online