Bismillah

664

۸تا۱۴صفر المظفر۱۴۴۰ھ  بمطابق    ۱۹تا۲۵اکتوبر۲۰۱۸ء

طالبان حملوں میں 8 اطالوی و امریکی فوجیوں سمیت 87 ہلاک

(شمارہ 631)

طالبان حملوں میں 8 اطالوی و امریکی فوجیوں سمیت 87 ہلاک

مجاہدین نے فراہ ائیربیس میں امریکی و اطالوی فوجوں کی رہائش گاہ پر میزائل داغے، 8 اطالوی فوجی ہلاک ، 16 زخمی ،سپلائی کے قافلے پر حملے میں 5ٹینکر تباہ
ضلع گریشک میں چیک پوسٹ پر ساتھیوں کو مارنے کے بعد اہلکارہتھیار لے کر طالبان سے جاملا، لشکرگاہ میں لیزر گن حملے میں 3 فوجی ہلاک،12 ٹینک تباہ
تخار میں وسیع علاقہ فتح، 17 ہلاک، گاڑی بھاری اسلحہ اور فوجی سازوسامان غنیمت،غزنی وننگرہار میں 130 اہلکاروں کا مجاہدین کے سامنے سرنڈر، 14 فوجی ہلاک
بادغیس میں ٓبادی پر گولہ باری سے خاتون شہید، ہلمند میں بم دھماکے سے افسر مارا گیا،کنڑ میں 3 چوکیوں پر مجاہدین کا قبضہ،نورستان وغزنی میں 15 اہلکار کام آئے

کابل(نیٹ نیوز)طالبان نے منصوری آپریشن کے تحت مختلف حملوں میں8 اطالوی و امریکی فوجیوں سمیت 87 اتحادیوں کو ہلاک جبکہ درجنوں کو زخمی کردیا،مجاہدین نے تخار میں بھارتی ہیلی کاپٹر مار گرایا ،لشکر گاہ میں لیزر گن حملے میں3 فوجی ہلاک،ضلع گریشک میں چیک پوسٹ پر ساتھیوں کو مارنے کے بعد اہلکارہتھیار لے کر طالبان سے جاملا، مجاہدین نے فراہ ائیربیس میں امریکی و اطالوی فوجوں کی رہائش گاہ پر میزائل داغے، 8 اطالوی فوجی ہلاک ، 16 زخمی ،سپلائی کے قافلے پر حملے میں 5ٹینکر تباہ،بادغیس میں ٓبادی پر گولہ باری سے خاتون شہید، ہلمند میں بم دھماکے سے افسر مارا گیا،کنڑ میں 3 چوکیوں پر مجاہدین کا قبضہ،نورستان وغزنی میں 15 اہلکار کام آئے۔ تفصیلات کے مطابق طالبان نے صوبہ فراہ کے صدر مقام فراہ شہر ائیر بیس پر حملہ کیا۔رپوٹ کے مطابق مجاہدین نے ائیربیس میں امریکی و اطالوی فوجوں کی  رہائش گاہ پر میزائل داغے، جو اہداف پر گرے، جس سے 8 اطالوی فوجی ہلاک، جبکہ 16 مزید زخمی ہوئے۔بھارتی  ہیلی کاپٹر کو امارت اسلامیہ کے مجاہدین نے صوبہ تخار ضلع درقد میں مار گرایا، صوبہ تخار ضلع درقد کے  بصیرخیل اور قرہ تپہ کے علاقوں میں دشمن کا ہیلی کاپٹر ز بمباری کررہا تھا اور اس دوران مجاہدین نے ایک ہیلی کاپٹر کو اینٹی ایئرکرافٹ گن کا نشانہ بنایا، جو جری قشلاق  کے علاقے میں گر کر تباہ ہوا اور اس میں سوار تمام اہلکار عملہ سمیت ہلاک ہوئے۔ادھر  دارالحکومت کابل اور صوبہ غزنی میں طالبان حملوں میں 10اہلکار ہلاک جبکہ 3زخمی ہو گئے۔ منصوری آپریشن کے سلسلے کابل شہر اور صوبہ غزنی میں افغان طالبان نے افغان فوجوں اور پولیس اہلکاروں پر حملہ کیا۔ ضلع قرہ باغ کے آھینو اور سپین کاریزکے علاقوں میں ہلکے و بھاری ہتھیاروں اور بم دھماکوں کے نتیجے میں دو ٹینک تباہ ہونے کے علاوہ کمانڈر سخی سمیت 8 اہلکار ہلاک جبکہ 3 زخمی ہوگئے جبکہ کابل شہر کے مغربی علاقے کمپنی بازار میں طالبان نے دو پولیس اہلکاروں کو موت کے گھاٹ اتار دیا۔اسی طرح طالبان نے صوبہ ہلمند کے ضلع گرشک میں فوجی چوکی پر حملہ کیا۔ ترابی ہوٹل کے علاقے میں واقع چوکی پر حملے میں 2گاڑیاں تباہ ہو گئیں جبکہ 14اہلکار مارے گئے باقی فرار ہوگئے جبکہ چوکی پر طالبان نے قبضہ کرکے 2 ہیوی مشن گن، ایک راکٹ لانچر اور 3 کلاشنکوفوں سمیت مختلف فوجی سازوسامان قبضے میں لے لیا۔ صوبہ زابل میں دھماکے میں تین اہلکار ہلاک جبکہ 2زخمی ہو گئے۔بادغیس میں افغان فوج کی گولہ باری سے ایک خاتون شہید جبکہ ہلمند میں بم دھماکے سے افسر مارا گیا۔ایک افغان سکیورٹی اہلکار نے صوبہ ہلمند میں فائرنگ کرکے اپنے ہی 16 ساتھیوں کو بھون ڈالا۔افغان نشریاتی ادارے کے مطابق افغان حکام نے واقعے کی تصدیق کرتے ہوئے بتایا کہ یہ واقعہصوبہ ہلمند کے ضلع گریشک میں قائم ایک چیک پوسٹ پر پیش آیا۔رپورٹ میں مقامی حکام کے حوالے سے بتایا گیا ہے کہ ساتھیوں کو قتل کرنے کے بعد مشتبہ شخص فرار ہونے میں کامیاب ہوگیا۔خیال رہے کہ رپورٹ میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ مذکورہ واقعے کی ذمہ داری طالبان نے قبول کی ہے اور کہا ہے کہ ملزم ہلاک کیے گئے سیکیورٹی اہلکاروں کے ہتھیار لے کر ان کے پاس بحفاظت پہنچ گیا۔سیکورٹی چیک پوسٹ پر طالبان کے حملے میں 6سیکورٹی اہلکار ہلاک اور 8زخمی ہوگئے جبکہ طالبان نے حملے کی ذمہ داری قبول کرتے ہوئے 15اہلکاروں کی ہلاکت اور تین چیک پوسٹوںپر قبضے کا دعویٰ کیا ہے۔ صوبہ تخار کے ینگی قلعہ اور درقد اضلاع میں دشمن پر حملہ کیا۔آمدہ رپورٹ کے مطابق  ضلع ینگی قلعہ کے المیجر کے علاقے میں مجاہدین نے کٹھ پتلی دشمن کے خلاف وسیع کاروائی کا آغاز کیا، جو علی الصبح تک جاری رہا، جس کے نتیجے میں اللہ تعالی کی نصرت سے مذکورہ علاقہ مکمل طور پر فتج اور وہاں تعینات اہلکاروں میں 12 ہلاک جبکہ 2 لاپتہ ہونے کے علاوہ دو ٹینک بھی تباہ ہوئے اور مجاہدین نے ایک فوجی رینجر گاڑی اور دیگر فوجی سازوسامان غنیمت کرلی۔دوسری جانب ضلع درقد کے مربوطہ علاقے میں مجاہدین کے حملے میں ایک فوجی ٹینک تباہ ہونے کے علاوہ پانچ اہلکار ہلاک جبکہ دیگر فرار ہونے میں کامیاب ہوئے۔سرخدوز کے علاقے میں واقع چوکیوں پر مجاہدین نے ہلکے وبھاری ہتھیاروں سے حملہ کیا، جس سے 3 چوکیاں فتح، 2 گاڑیاں اور 2 موٹرسائکل تباہ،  سنگور جنگجو ہلاک، جبکہ دیگر نے فرار کی راہ اپنالی۔امارت اسلامیہ کے دعوت و ارشادکمیشن کے کارکنوں کی دعوت کو لبیک کہتے ہوئے صوبہ کنڑ کے نرنگ اور مانوگی اضلاع میں درجنوں اہلکاروں نے مجاہدین کے سامنے ہتھیار ڈال دیے۔ صوبہ ننگرہار ضلع سرخ رود کے چارباغ کے علاقے میں بم دھماکہ سے تین جنگجو ہلاک جبکہ دو زخمی ہوئے اور ساتھ ہی تازہ دم اہلکاروں کی رینجر گاڑی دھماکہ خیز مواد سے تباہ اور اس میں سوار شرپسندوں میں سے تین موقع پر ہلاک جبکہ دو زخمی ہوئے۔صوبہ پکتیا سے موصولہ رپورٹ کے مطابق  صدر مقام گردیز شہر کے چھاونی کے علاقے میں مجاہدین نے فوجی کاروان پر حملہ کیا،جس میں دو ٹینک تباہ ہونے کے علاوہ چار اہلکار ہلاک جبکہ پانچ زخمی ہوئے۔

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
TAKWIR Web Designing (www.takwir.com) Copyrights Alqalam Weekly Online