Bismillah

664

۸تا۱۴صفر المظفر۱۴۴۰ھ  بمطابق    ۱۹تا۲۵اکتوبر۲۰۱۸ء

مولانامسعودازہر کے بیان پر بھارت میں کھلبلی (قلم تلوار۔نوید مسعود ہاشمی)

Qalam Talwar 663 - Naveed Masood Hashmi - Maulana Masood Azhar k Biyan per Bhart mein Khalbali

مولانامسعودازہر کے بیان پر بھارت میں کھلبلی

قلم تلوار...قاری نوید مسعود ہاشمی (شمارہ 663)

ہمیں اللہ کی رحمت سے مایوس نہیں ہونا چاہئے کیونکہ قرآن مقد س میں ارشاد خداوندی ہے کہ ترجمہ،’’ اے پیغمبر میری طرف سے لوگوں کو کہہ دو کہ اے میرے بندو! جنہوں نے اپنی جانوں پر زیادتی کی ہے، اللہ کی رحمت سے نا امید نہ ہونا، اللہ سب گناہوں کو بخش دیتا ہے، بے شک وہی تو ہے بخشنے والا مہربان اور اس سے پہلے کہ تم پرعذاب آن پہنچے، اپنے پروردگار کی طرف رجوع کرو، اور اس کے فرمانبردار ہو جاؤ، ورنہ بعد میں تم کو مدد نہیں ملے گی‘‘(سورۃ الزمر، آیت538,540)

اے اللہ۔۔۔ ہم تیری رحمت سے قطعاً مایوس نہیں ہیں اور نہ ہی نا امید۔۔۔ بلکہ ہمیں یقین ہے کہ جہاد مقدس کی برکت سے مقبوضہ کشمیر کے مظلوم مسلمانوں کو آزادی حاصل ہو کر رہے گی ( ان شاء اللہ)

انسانوں پر ظلم ڈھانے والا بھارت۔۔۔ ذلیل و رسوا ہو کر رہے گا۔۔۔ انسانیت کی تذلیل کرنے والی بھارتی فوج عبرتناک انجام سے ضرور دو چار ہو گی، کشمیر کا مسئلہ70 سالوں سے اقوام متحدہ کے ایجنڈے پر موجود ہے۔۔۔ اور 70سالوں سے مقبوضہ کشمیر کے مظلوم مسلمان بھارتی وحشت ودرندگی کا نشانہ بن رہے ہیں۔

بھارت ایک طرف انڈیا اور مقبوضہ کشمیر کے مسلمانوں پر بدترین مظالم ڈھا رہا ہے تو دوسری طرف پاکستان کو جنگ کی دھمکیاں بھی دے رہا ہے۔۔۔ بھارتی وزیراعظم نریندر مودی ہو، بھارت کا آرمی چیف ہو، یا بھارتی میڈیا کے شیطان صفت خرکار۔۔۔ پاکستان کو آنکھیں دِکھانے میں کوئی بھی پیچھے نہیں رہنا چاہتا، ایسے لگتا ہے کہ جیسے گائے کا پیشاب پینے والی اس نسل’’بد‘‘ نے پاکستان کو ترنوالہ سمجھ لیا ہے؟

پاکستانی وزیرخارجہ نے اقوام متحدہ کے73ویں جنرل اسمبلی کے اجلاس میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ’’ بھارت کو ہمارے صبر کا امتحان نہیں لینا چاہئے، اگر اس نے کسی محدود جنگ کی پالیسی پر عمل پیرا ہونے کی کوشش کی تو بھرپور جواب کا سامنا کرنا پڑے گا‘‘

مجھے نہیں لگتا کہ ہمارے وزیر خارجہ کی اقوام متحدہ میں بھارتی مظالم کے خلاف اُٹھائی جانے والی۔۔۔آواز کو امریکہ سمیت دیگر عالمی طاقتیں پذیرائی بخشیں گی!

عالمی صورتحال کا جائزہ لیا جائے تو اسرائیل اور امریکہ کا بھارت کی طرف جھکاؤ کوئی ڈھکی چھپی بات نہیں ہے۔۔۔ جب امریکہ بھارت کا سر پرست ہو گا تو پھر۔۔۔ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں کی جانے والی پاکستانی وزیرخارجہ کی تقریر۔۔۔ بھارت کا کیا بگاڑے گی؟ 70سالوں سے بھا رت کشمیری نوجوانوں کی لاشیں گراتا ہے۔۔ اور ہمارے سیاست دان ہوں یا حکمران۔۔۔۔ ’’مذمت‘‘ کے سوا کچھ اور نہیں کرپاتے، پاکستان کے سیاست دانوں یا حکمرانوں کے مذمتی بیانات ۔۔۔ جلسے اور جلوسوں سے بھارت کے کانوں پر جوں تک نہیں رینگتی!

کشمیر کے مسلمان اپنے پیاروں کی لاشیں اُٹھا، اُٹھا کر تھک چکے ہیں، کچھ سرفروش وہ بھی ہیں کہ جو اپنا گھر، والدین کو اس پار چھوڑ کر۔۔۔ شوقِ شہادت میں اس پار جاکر جہادی ضربیں لگاتے ہیں۔

سچی بات ہے کہ مجھے اقوام متحدہ سے تو کوئی امید نہیں ہے، ہاں البتہ میں اللہ کی رحمت سے قطعاً مایوس نہیں ہوں۔۔۔ ایسے میں مقبوضہ کشمیر میں برسرپیکار عسکری تنظیم جیش محمدﷺ کے سربراہ مولانا محمد مسعود ازہر کا ایک بیان اخبارات کی زینت بنا۔

مولانا محمد مسعود ازہر اپنے بیان میں کہتے ہیں کہ اگر پاکستانی حکومت ان پر6ماہ کیلئے پابندی ختم کر دے۔۔۔ تو وہ نئی دہلی کو عبرتناک سبق سیکھا سکتے ہیں، بھارتی میڈیا میں مولانا محمد مسعود ازہر کی بھارت کو سبق سیکھانے کی دھمکی کو پاکستانی اخبارات نے بھی شائع کیا ہے۔

مولانا محمد مسعود ازہر کشمیریوں کی مظلومیت کا درد دل میں رکھنے والے۔۔۔ نامور عالم دین اور کشمیر کے ممتاز جہادی قائد بھی ہیں، وہ عرصہ14,12 سالوں سے سخت حکومتی پابندی کی زد میں ہیں۔

وہ اس وقت کہاں ہیں؟ کس حال میں ہیں؟ یہ تو میں نہیں جانتا،لیکن بھارتی میڈیا میں ان کا نام لے کر کی جانے والی چیخ وپکار سے اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ نریندر مودی جیسا دہشتگرد اور اس کی دہشتگرد فوج مولانا کی تقریر کے خوف میں آج بھی مبتلاء ہے۔

بقول بھارتی میڈیا کے مولانا محمد مسعود ازہر پاکستانی حکومت کی پابندیوں کی زد میں ہیں۔

یہی تو اصل دُکھ کی بات ہے کہ۔۔۔ کتوں کو کھلا چھوڑ کر شیروں کوباندھنے کا چلن، چل نکلا ہے، اگر پاکستان کے حکمران مقبوضہ کشمیر کے مظلوم مسلمانوں کے ساتھ مخلص ہوتے تو انہیں مولانا محمد مسعود ازہر سمیت تحریک کشمیر کے دیگر قائدین کو کھل کر آزادی کی جنگ لڑنے کا موقع دینا چاہئے تھا، کیا یہ حیرت کی بات نہیں ہے کہ پاکستان نے تو مولانا محمد مسعود ازہر ہوں، حافظ سعید ہوں یا دیگر۔۔۔ تحریک کشمیر کے سٹیک ہولڈرز ان کو پابندیوں کی قانونی زنجیروں میں جکڑ رکھا ہے۔۔۔ لیکن اس کے باوجود بھارت اور پاکستان میں موجود بھارتی پٹاری کے دانش فروش، پاکستان پر الزام لگاتے ہیں کہ ۔۔۔ پاکستانی ادارے جہادی تنظیموں کی سرپرستی کرتے ہیں، لاحول ولا قوۃ الا باللہ، بھارتی فوج کی مقبوضہ کشمیر کے مسلمانوں کے خلاف بڑھتی ہوئی دہشتگردی کو اگر اقوام متحدہ نہ روک سکا، اور یہ دہشتگردی یونہی بڑھتی چلی گئی۔۔۔کشمیر کے مسلمان اسی طرح بے گناہ مارے جاتے رہے،اورکشمیر کی عفت مآب خواتین کو اگر اسی طرح پامال کیا جاتا رہا۔۔۔ تو مجھے لگتا ہے کہ پھر پاکستان کے 22کروڑ عوام کا صبر کا پیمانہ لبریز ہو جائے گا۔۔۔ اور وہ سڑکوں پر نکل کر خود اپنی حکومت سے مطالبہ کرنے پر مجبور ہو جائیں گے کہ وہ مولانا محمد مسعود ازہر پر عائد پابندی ہٹا لے۔۔۔ تاکہ بھارت کو کشمیری مسلمانوں پر بدترین مظالم کا کرارا جواب دیا جا سکے۔

٭…٭…٭

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
TAKWIR Web Designing (www.takwir.com) Copyrights Alqalam Weekly Online