Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

فدائی (قلم تلوار۔نوید مسعود ہاشمی)

Qalam Talwar 682 - Naveed Masood Hashmi - Fidai

فدائی

قلم تلوار...قاری نوید مسعود ہاشمی (شمارہ 682)

بھارتی دہشت گرد نریندر مودی۔۔۔ اس کی تینوں مسلح اَفواج اور بھارتی خفیہ ایجنسیوں کے سربراہان۔۔۔دروغ گو بھارتی میڈیا اور گائے کا پیشاب پینے والے ہندو لومڑ! مقبوضہ کشمیر کے ضلع پلوامہ میں ایک فدائی مجاہد کے ہاتھوں50کے لگ بھگ فوجیوں کے جہنم واصل ہونے پر جس تلملاہٹ اور بوکھلاہٹ کا مظاہرہ کر رہے ہیں۔۔ اسے دیکھ کر یوں اندازہ ہوتا ہے کہ جیسے کشمیر میں پہلی مرتبہ انسانوں کا خون بہا ہو؟

پاکستان کے خلاف گزگز لمبی زبانیں نکالنے والے ان ہندو لومڑوں سے کوئی پوچھے کہ تم جو70سالوں سے مقبوضہ کشمیر کے مسلمانوں کا خون بہا رہے ہو کیا وہ’’خون‘‘ نہیں ہے؟ آزادی کا حق مانگنے والے بچوں کا قتل عام کرنا، حق آزادی کا مطالبہ کرنے والی خواتین کو بے آبرو کرنا، کشمیر کے سینکڑوں مرد و خواتین کو زبردستی نابینا بنا ڈالنا کیا یہ ظلم نہیں ہے؟

جب بھارتی فوج کشمیر کے مظلوم مسلمانوں پر ظلم و ستم کے پہاڑ توڑے گی، اور بھارتی آرمی چیف جنرل بپن راوت پتھر کا جواب گولی سے دینے کا اعلان کرے گا تو پھر مجاہد عادل احمد ڈار عرف کمانڈر وقاص گولی کاجواب فدائی حملے سے دے تو شکوہ کیسا؟ ہندو لومڑو!روتے کیوں ہو؟ چیختے اور چلاتے کیوں ہو؟ دھمکیاں کیوں دیتے ہو؟

تم نے ستر سالوں سے انسانوں کے سر بوئے ہیں

اب زمیں خون اگلتی ہے تو شکوہ کیسا؟

ذرا غور تو کرو کہ فدائی عادل احمد ڈار کے فدائی حملے کے  نتیجے میں جب بھارت کے فوجی مردار ہوئے تو سرینگر کے کشمیریوں نے یہ خبر سن کر جشن کیوں منایا؟

اس فدائی کارروائی کی خبر سن کر ہر مظلوم انسان اور انسانیت سے پیار کرنے والا خوش ہوا۔۔۔ سوائے ہندو لومڑوں اور منافق گیدڑوں کے۔۔۔ تو اس کی وجہ صرف اور صرف یہ ہے کہ بھارت مقبوضہ کشمیر کے مسلمانوں پر ظلم و ستم کی تمام حدیں پار کر چکا ہے، بھارت کی آٹھ سے دس لاکھ کی تعداد میں فوج اور دیگر فورسز کشمیر کے نہتے انسانوں پر سالہا سال سے ظلم ڈھا رہی ہیں۔۔ ماؤں کے سامنے ان کے جوان بیٹوں کوخون میں نہلا دیا جاتاہے، بہنوں کی دیکھتی آنکھوں کے سامنے ان کے بھائیوں کو گولیوں سے چھلنی کر دیا جاتا ہے۔۔۔۔

بیویاں اپنے شوہروں کی خون آلود لاشوں سے لپٹی پتھرائی ہوئی آنکھوں کے ساتھ کسی محمد بن قاسمؒ کی منتظر رہتی ہیں۔۔ بیٹیوں کی آنکھوں کے سامنے ان کے والدین کو تاراج کر دیا جاتا ہے، گن پوڈر چھڑک کر کئی کئی منزلہ گھروں کو نذر آتش کر دیا جاتا ہے۔۔۔۔

کشمیر کے مسلمانوں پر جمعہ کی نماز کی ادائیگی پر پابندی لگا دی جاتی ہے اور کبھی عید کی نماز پڑھنے سے روک دیا جاتا ہے، بھارت کے مکارلومڑو! تم روز کشمیری جوانوں کے خون کے ساتھ ہولی کھیلو تو جائز۔۔۔۔ تم ٹارچر سیلوں اور جیلوں میں بے گناہ کشمیریوں پر ظلم و ستم ڈھاؤ تو جائز۔۔۔ تم کبھی مقبول بٹؒ، کبھی سجاد افغانیؒ اور کبھی افضل گوروؒ کو جیلوں میں ہی مار ڈالو تو یہ بھی جائز۔۔۔ لیکن اگر مقبوضہ کشمیر کا مجاہد فدائی بن کر تمہارے فوجی جہنم واصل کر ڈالے تو یہ نہ جائز؟

کیوں، کیوں، کیوں؟

عادل احمد ڈار نے تمہارے خرمن پر بجلیاں گرا کر یہ اعلان کر دیا ہے کہ کشمیر کے نوجوان اب تمہاری گولیوں اور بموں کا جواب’’فدائی‘‘ بن کر دیں گے۔۔۔۔

تم نے شہداء کاخون بہا کر خوشیوں کے شادیانے بجائے تھے، تم نے جوان لاشے تڑپا کر چیلنج کیا تھا۔۔۔ تم نے برہان وانیؒ کے جسموں کو گولیوں سے چھلنی کر کے اپنی کامیابی کے بڑے بڑے دعوے کئے تھے۔۔۔ تم نے یٰسین ملک اور شبیر شاہ کی پوری جوانیاں جیلوں کی نظر کر ڈالیں۔۔۔ تم نے سید علی گیلانی کے بڑھاپے کو جیلوں کا رزق بناڈالا، تم نے آسیہ اندرابی کے خاتون ہونے کا بھی لحاظ نہ کیا۔۔۔۔

بدچلن دہشت گرد نریندر مودی! تمہارے فوجی جب چاہیں کشمیر کے جس گھر میں چاہیں گھس جائیں۔۔۔جس کو چاہیں مار ڈالیں، جس کو چاہیں زخمی کر دیں۔۔۔ جس کو چاہیں اٹھا کر لے جائیں۔۔۔ جس کو چاہیں غائب کر ڈالیں، تمہیں موت کی سوداگری کا بڑا شوق ہے، لاشوں پہ سیاست کرنا تمہارا خاص ذوق ہے۔۔۔ انسانی حقوق کی خلاف ورزیاں کرنا تمہاری عادت ہے۔۔۔ فرقہ وارانہ فسادات کو بھڑکا کر بے گناہ مسلمانوں کا قتل عام کرنا تمہارا مشن ہے، مسلمانوں کے لہو کا چسکا تمہیں جینے نہیں دے گا۔۔۔ بے گناہ مسلمانوں کا لہو تمہیںپٹخیاں دے ،دے کر تڑپائے گا، ( ان شاء اللہ)

نریندر مودی نے کشمیریوں کے قتل عام کیلئے بھارتی فوج کو جو فری ہینڈ دیا تھا۔۔۔ عالمی برادری نے اس کا نوٹس لیا یا نہیں، مگر مجاہد عادل ڈار نے’’فدائی‘‘ بن کر اس کا ایسا نوٹس لیا کہ جو دہشتگرد اور مکار’’لومڑوں‘‘ کو ہمیشہ یاد رہے گا۔۔۔۔

اب لکیر پیٹنے کا کیا فائدہ؟ سومنات کے یہ بندر! اب پاکستان سے کسی جیش محمدﷺ کو ڈھونڈ رہے ہیں،یہ صرف ’’پاکستان‘‘ کو مظلوم کشمیریوں کی اخلاقی حمایت سے پیچھے ہٹانے کا حربہ ہے۔۔۔ وگرنہ نریندر مودی سے لے کر جنرل بپن راوت تک گورنر سیتہ پال ملک سے لے کر راجناتھ سنگھ تک کے علم میں یہ بات ہے کہ جیش محمدﷺ کوئی ’’سوئی‘‘تھوڑی ہے کہ جو مٹی میں گم ہو چکی ہو؟ بلکہ جیش محمدﷺ تو مقبوضہ کشمیر کے مسلمانوں کی مضبوط ترین عسکری جماعت کا نام ہے۔۔۔۔

پلوامہ حملے کے بعد ہندو بدمعاش جس طرح سے جموں، اترکھنڈ سے لیکر ہریانہ تک مسلمانوں پر حملے کر رہے ہیں، ان کی املاک کو نذر آتش کر رہے ہیں، کشمیری طلباء کو ہندوستان کی یونیورسٹیوں سے نکال رہے ہیں یہ سب اس بات کا ثبوت ہے کہ نریندر مودی کے ٹڈی دل کن کھجورے مقبوضہ کشمیر کے ہر کشمیری کو جیش محمدﷺ کے رضاکار سمجھ رہے ہیں۔۔۔۔

کوئی بھارت کے دہشت گرد نریندر مودی سے سوال کرے کہ جن 50کشمیری طلباء کو اترکھنڈ یونیورسٹی سے نکالا گیا کیا ان کا تعلق مولانا محمد مسعود ازہر کی جیش محمدﷺ سے تھا؟ جموں میں جن کشمیری مسلمانوں کی جان و مال پر حملے کئے گئے کیا وہ پاکستانی تھے؟

جموں کے علاقے بٹھنڈا میں جن دو ہزار مسلمانوں نے ہندو انتہاء پسندوں کے ظلم سے بچنے کیلئے ایک مسجد میں پناہ لے رکھی ہے۔۔۔ کیا ان مسلمانوں کا تعلق جیش محمدﷺ یا پاکستان سے ہے؟ پلوامہ حملے کے بعد جن کشمیری راہنماؤںکو دی گئی سکیورٹی بھارتی حکومت نے واپس لے لی ہے کیا ان کا تعلق جیش محمدﷺ پاکستان سے ہے؟ پاکستانی دفتر خارجہ کے ترجمان کا یہ کہنا بالکل درست ہے کہ 2002ء؁ سے پاکستان میں جیش محمدﷺ کالعدم ہے۔۔۔۔

مجاہد عادل احمد ڈار نے’’فدائی‘‘ کر کے بھارت کو یہ پیغام دے ڈالا ہے کہ اگر وہ مستقبل میں ’’فدائیوں‘‘ سے بچنا چاہتے ہیں تو فوری طور پر کشمیر سے اپنا تسلط ختم کر کے ہندوستان کے مسلمانوں کو ان کے حقوق لوٹا دے۔۔۔۔

 وماتوفیقی الا باللہ

٭…٭…٭

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor