Bismillah

618

۲۷صفرتا۳ربیع الاول۱۴۳۸ھ   بمطابق ۱۷تا۲۳نومبر۲۰۱۷ء

قادیانی جواب دیں؟ (قلم تلوار۔نوید مسعود ہاشمی)

Qalam Talwar 569 - Naveed Masood Hashmi - Qadiyani Jawab Dein

قادیانی جواب دیں؟

قلم تلوار...قاری نوید مسعود ہاشمی (شمارہ 569)

مرزا غلام احمد قادیانی دجال کے پیروکار کہ جو اپنے آپ کو جماعت احمدیہ کے نام سے بھی موسوم کرتے ہیں کے سربراہ اور ترجمان کو اردو اخبارات سے اس بات پر بڑا شکوہ ہے کہ اخبارات میں ان کے حوالے سے مضامین اور خبریں کیوں شائع کی جاتی ہیں۔۔۔ خاص کر علماء کرام کے ختم نبوتعلی صاحبہا الصلوۃ و التسلیم پر بیانات اور خبروں کو شائع کرنے پر تو وہ خاصے سیخ پا رہتے ہیں۔۔۔ یہی وجہ ہے کہ قادیانی اردو اخبارات میں منکرین ختم نبوت کے خلاف چھپنے والی خبروں اور مضامین کی باقاعدہ سالانہ رپورٹ مرتب کر کے جاری کرتے ہیں۔۔۔

اس رپورٹ میں کون سے اخبارات نے سال میں کتنی خبریں شائع کیں، اور کتنے مضامین شائع کئے۔۔۔ اس کی مکمل تفصیل نمبر وار درج ہوتی ہے، ختم نبوت علی صاحبہا الصلوۃ و التسلیم کے دفاع اور منکرین ختم نبوت کے خلاف شائع کی جانے والی خبروں اور مضامین کو قادیانی ترجمان متعصبانہ اور نفرت انگیز قرار دیتے ہیں۔۔۔اردو اخبارات کے حوالے سے مرزا غلام قادیانی کی پیروکار جماعت احمدیہ کی شائع شدہ رپورٹ پڑھ کر اندازہ ہوا کہ قادیانی انگلش اخبارات سے کافی حد تک مطمئن ہیں، یا انگلش میڈیا سے انہیں نہ کوئی شکوہ ہے اور نہ شکایت۔۔۔ شائد اس کی ایک وجہ یہ بھی ہو کیونکہ مرزا غلام احمد قادیانی فرنگی سامراج کا ہی لگایا ہوا پودا تھا، اور آج بھی انگریز سرکار ہی ان کی دنیا مکمل سرپرستی کر رہی ہے

سب سے پہلے تویہ وضاحت ضروری ہے کہ میرے سمیت کسی مسلمان کا بھی قادیانیوں کے ساتھ کوئی جائیداد، پلاٹ، یا مال و متاع کا تنازع نہیں ہے، اور نہ ہی کسی اخبار یا صحافی کی قادیانیوں سے کوئی سیاسی یافرقہ وارانہ مخاصمت ہے۔۔۔بلکہ اصل اور بنیادی اختلاف ختم نبوت پر ہے۔۔۔۔ قرآن وسنت کی رُو سے ہمارے پاک پیغمبر حضرت محمد کریمﷺ اللہ کے آخری نبی ہیں۔۔۔ اور آپﷺ کے بعد جو بھی دعویٰ نبوت کرے گا وہ ختم نبوت کا منکر ہو کر کافر، دجال اور مرتد ہو جائے گا۔۔۔ دوسرا قادیانیوں کو پاکستان کی قومی اسمبلی ایک زبردست بحث مباحثے، مکمل سوچ و بچار اور تمام مسالک کے علماء کرام اور مفتیان عظام کے فتوؤں اور قرآن و سنت کی روشنی میں متفقہ طور پر غیر مسلم اقلیت قرار دے چکی ہے، قادیانی گروہ کی بھی ذمہ داری بنتی ہے کہ وہ آئین پاکستان کے سامنے سر تسلیم ختم کرتے ہوئے۔۔۔ اپنی’’غیرمسلم‘‘ کی حیثیت کو تسلیم کرتے ہوئے قانون کی عمل داری کو یقینی بنائیں۔۔۔

اردو اخبارات میں جماعت احمدیہ(قادیانیوں) کے خلاف چھپنے والی خبروں کی مرتب کردہ رپورٹ کو نظارت امور عامہ صدر انجمن احمدیہ چناب نگر(ربوہ) کے تحت جاری کی گیا۔۔۔ اس رپورٹ میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ’’احمدیوں(قادیانیوں) کو بلا ثبوت کبھی امریکا، کبھی انڈیا اور کبھی اسرائیل کا ایجنٹ قرار دینے کا مشغلہ بھی اخبارات میں جاری رکھا جارہا ہے۔۔

اگر قادیانی سربراہ جواب دینا پسند کر دیں تو ثبوت حاضر ہے۔۔۔ 14نومبر کو روزمانہ اوصاف میں ایک باتصویر رپورٹ شائع ہوئی ہے جس کا عنوان ہے’’پاکستانی قادیانیوں کا وفد اسرائیل پہنچ گیا‘‘۔۔۔ رپورٹ کے مطابق’’پاکستان کی قادیانی کمیونٹی کے اسرائیلی دوروں کے بارے میں انکشاف کرتے ہوئے عرب جریدے نے لکھا ہے کہ رواں سال جولائی میں مقبوضہ فلسطینی شہر حیفا میں منعقدہ سالانہ جلسے میں پاکستان کے قادیانی وفد نے شرکت کی ہے۔ اسرائیل کی عرب ویب سائٹ کی رپورٹ کے مطابق اگست2016ء میں قادیانی جماعت نے حیفاء کے علاقے الکبابیر میں اپنا بیسواں سالانہ کنونشن منعقد کیا۔ کنونشن میں امریکا، شمالی امریکا اور یورپی ممالک کے علاوہ پاکستان ، اردن مصر سے بھی قادیانی وفود شریک ہوئے۔28جولائی کو منعقد ہونے والے تین روزہ کنونشن میں پاکستانی قادیانیوں کے وفد کی شرکت کو قادیانی کمیونٹی اور اسرائیلی انتظامیہ نے غیر معمولی اہمیت دی اور ان کا بڑے تپاک سے استقبال کیا گیا۔پاکستانی وفدکو کنونشن میں پاکستان میں قادیانیوں کو درپیش مسائل پر بات کرنے کی دعوت دی گئی جس میں انہوں نے پاکستان میں قادیانیوں کی سرگرمیوں کے بارے میں کنونشن کے شرکاء کو بتایا۔ اس کنونشن میں قادیانیوں کے علاوہ عیسائی،درزی، بہائی اور ملحدوں کے ساتھ یہودی وفود نے بھی شرکت کی۔ اسرائیلی پارلیمنٹ کے ممبران، یہودی ربیوں اور یہودی مصنفین کنونشن میں بطور خاص شریک ہوئے جبکہ اسرائیل کے سیکورٹی حکام اور قومی سلامتی کے عہدیداروں کو بھی بطور خاص مدعو کیا گیا تھا۔ ایلان یونیورسٹی کے یہودی پروفیسر وائیل ہر شکوفیتش نے قادیانی اجتماع سے خطاب بھی کیا اور قادیانیت کی خدمات کا تذکرہ کرتے ہوئے ان کے لئے نیک تمنائیں ظاہر کیں۔اسرائیل کے ڈومینکین اور کریبین کے سفرا نے بھی اجتماع سے خطاب کیا۔کنونشن کے دوران پاکستانی وفد سمیت غیر ملکی وفود کے اسرائیلی عہدیداروں سے ملاقاتیں بھی کرائی گئیں،عرب جریدے کے مطابق پاکستانی وفد کی آمد کو بہت سراہا گیا اور آئندہ کے لئے سالانہ کنونشن میں ان کی شرکت کو لازمی قرار دیاگیا۔ فلسطین کا مقبوضہ شہر حیفا بحیرہ روم کے مشرقی کنارے پر واقع ہے۔ اس شہر پر برطانوی قبضہ تھا جس نے ایک خاص سازش کے تحت اس شہر میں قادیانیوں کو بسایا اور اس کی ہر طرح سے مدد کی۔ اس مقصد کیلئے برطانیہ نے1928ء میں سب سے پہلے ہندوستان سے جلال الدین شمس نامی ایک قادیانی مبلغ کو حیفا بلوایا۔ اسے رہائش کی تمام سہولیات سمیت دیگر مراعات دے دیں۔برطانوی دور میں حیفا میں الشاذلی نامی صوفی تحریک بڑی سرگرم تھی،برطانوی انتظامیہ نے قادیانی مبلغ کو اسی صوفی تحریک کے افراد کو قادیانی بنانے کا ٹاسک دیا تھا۔ برطانوی حکومت کی سرپرستی میں فلسطینی سرزمین پر قادیانیت کو فروغ ملنے لگا اور صوفی تحریک کے بہت سے خاندانوں نے قادیانیوں کے فریب میںآکر قادیانیت قبول کر لی۔ قادیانیوں پر اپنی مہربانیوں کے لئے مشہور برطانوی انتظامیہ نے 1934ء میں حیفا کے محلے الکبابیر میں قادیانیوں کی عبادت گاہ اور قادیانی ثقافت کے نام پر ایک کمیونٹی سینٹر تعمیر کیا یہ مقام پورے مشرق وسطی میں قادیانیت کے دجل و فریب کا اولین مرکز بنا۔ جہاں سے قادیانیت کی سرگرمیاں پورے مشرق وسطیٰ میں پھیلنی شروع ہو گئیں ۔1948ء میں برطانیہ نے حیفا کو یہودیوں کے حوالے کیا، اس زمانے میں یہودیوں نے سینکڑوں مساجد کو شہید کیا اور درجنوں کو جانوروں کے باندھنے اور دیگر مذموم مقاصد کے لئے استعمال کرنا شروع کیا تاہم قادیانیوں کے عبادت خانے کو کوئی گزند نہیں پہنچائی گئی۔ قابض یہودیوں نے قادیانی کمیونٹی کو پوری طرح سپورٹ کیاحیفا میں قادیانی مرکز کا سربراہ محمد شریف نامی شخص ہے جس کے ساتھ فلسطینی مفتیان کرام اور علماء کرام کے مناظرے بھی ہوئے ہیں تاہم اسرائیل کی بھرپور سرپرستی کے سبب اس کے منفی اثرات فلسطینی معاشرے میں پھیلنے کا سلسلہ ابھی تک رکوایا نہیں جا سکا۔ اسرائیل کے شمال میں واقع الکبابیر مرکز کو اسرائیلی حکومت کی بھرپور سرپرستی اور تعاون حاصل ہے۔‘‘

٭…٭…٭

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
TAKWIR Web Designing (www.takwir.com) Copyrights Alqalam Weekly Online