Bismillah

599

۲۷رمضان المبارک تا۳شوال المکرم ۱۴۳۸ھ        بمطابق      ۲۳تا۲۹جون۲۰۱۷ء

کلبھوشن مائنڈ سیٹ (قلم تلوار۔نوید مسعود ہاشمی)

Qalam Talwar 590 - Naveed Masood Hashmi - Kalbhoshan Mind set

کلبھوشن مائنڈ سیٹ

قلم تلوار...قاری نوید مسعود ہاشمی (شمارہ 590)

بھارتی وزیر خارجہ سشما سوراج نے دہشت گرد اور قاتل کلبھوشن یادیو کو ہندوستان کا بیٹا قرار دیتے ہوئے کہا کہ ''ان کا ملک کلبھوشن یادیو کو سزائے موت سے بچانے کے لئے ہر ممکن اقدامات کرے گا'ہر فورم پر لڑے گا' سشما سوراج نے پاکستان کو دھمکی دیتے ہوئے کہا کہ میں پاکستانی حکومت کو خبردار کرتی ہوں کہ وہ اس معاملے پر آگے بڑھنے سے قبل اس کے دوطرفہ تعلقات پر پڑنے والے اثرات پر غور کرے ،کلبھوشن کی سزا پر عملدرآمد کیا گیا تو اس کے سنگین نتائج برآمد ہوں گے''۔

بھارتی وزیر خارجہ سشما سوراج نے ''را'' کے گرفتار جاسوس اور دہشت گرد کو ہندوستان کا بیٹا قرار دے کر یہ بات تسلیم کرلی کہ پاکستان میں جاری دہشت گردی اور اس دہشت گردی میں شہید ہونے والے پچاس ہزار سے زائد پاکستانیوں کے قتل عام کا اصل ذمہ دار ہندوستان ہے۔ بھارتی وزیر خارجہ نے کلبھوشن یادیو کو ہندوستان کا بیٹا تسلیم کرکے اور اس کو سنائی جانے والی سزائے موت کے ردعمل میں پاکستان کو دھمکیاں دے کر یہ بات ثابت کر دی ہے کہ بھارت آئندہ بھی دہشت گردی کی کارروائیوں سے باز نہیں آئے گا 'سوال یہ ہے کہ اگر کلبھوشن یادیو ہندوستان کا بیٹا ہوا تو پاکستان میں جو اس کے سہولت کار یا ساتھی تھے انہیں کیا قرار دیا جائے؟ اور اس بات پر بھی نظر رکھنے کی ضرورت ہے کہ کلبھوشن یادیو کے پاکستان میں سہولت کار اور ساتھی کون تھے؟ ان سہولت کاروں کا تعلق سیاسی جماعتوں سے تھا یا پھر مذہبی جماعتوں یا این جی اوز سے تھا ؟ کلبھوشن کے سہولت کار اور ساتھی مدارس سے پڑھے لکھے تھے یا پھر کالجز اور یونیورسٹیز سے ؟ قوم کو یہ بھی بتایا جائے کہ پاک سرزمین پر بیٹھ کر جو عناصر بھارت کے حق میں مہم چلاتے ہیں ' بھارتی اشتہارات اور بھارتی فلموں کو نجی چینلز کے ذریعے عوام کے ذہنوں میں اتارتے ہیں  ان کا تعلق ''را'' کے کس ڈیسک سے ہے؟ جو کبھی مشاعروں کی آڑ میں اور کبھی دیگر تقریبات کی آڑ میں سال میں کئی کئی شامیں انڈیا میں گزارتے ہیں اور پھر واپس آکر بھارت کے گن گا' گا کر قوم کو گمراہ کرنے کی کوشش کرتے ہیں وہ کس کے بیٹے ہیں؟ پاکستان کے یا پھر ہندوستان کے؟ کلبھوشن یادیو نے ایسے سینکڑوں مکروہ چہروں کو بے نقاب کیا جو بظاہر پاکستانی بیٹے نظر آتے تھے مگر وہ تھے اصل میں ہندوستان کے بیٹے۔کلبھوشن یادیو نے ایک ایسے پڑوسی کو بھی بے نقاب کیا کہ جو کہتا اپنے آپ کو پاکستان کا دوست ہے لیکن پاکستان کو عدم استحکام سے دوچار کرنے کی سازشوں میں وہ بھی شریک نظر آیا ،پاکستانی سینمائوں میں انڈین فلمیں دکھانے کی اجازت دینے والے حکمران پاکستان کے دشمن ہندوستان کو کمزور کرنے کی بجائے اس قسم کے اقدامات کرکے ہندوستان کی مضبوطی کا سبب بن رہے ہیں۔ ک

لبھوشن یادیو تنہا ایک فرد نہیں بلکہ ایک پورے مائنڈ سیٹ کا نام ہے' ایک ایسا مائنڈ سیٹ کہ جو پاکستان کے ایوانوں سے لے کر ٹی وی چینلز کے سٹوڈیوز تک موجود ہے ۔ایک ایسا مائنڈ سیٹ کہ جو کشمیری مجاہدین کے خلاف دہلی سرکار کی کھل کر حمایت کرتا ہے' ایک ایسا مائنڈ سیٹ کہ جس کا ''شاہین'' پہاڑوں کی چٹانوں کی بجائے ممبئی کی ''فلم نگری'' میں بسیرا کرتا ہے  ایک ایسا مائنڈ ''سیٹ'' کہ جو بھارتی پشت پناہی کے بل بوتے پر پاک فوج کو بد نام کرنے کے لئے ہر وقت تیار رہتا ہے' ایک ایسا مائنڈ سیٹ کہ اگر رینجرز ایم کیو ایم کے دہشت گردوں پر ہاتھ ڈالے یا بلوچستان کے علیحدگی پسندوں کے خلاف سیکورٹی ادارے آپریشن شروع کریں تو وہ ایم کیو ایم کے دہشت گردوں اور بلوچ علیحدگی پسندوں کے حق کی آڑ میں ملکی سلامتی کے اداروں کو مطعون کرنا شروع کر دیتا ہے۔ کلبھوشن یادیو نے سیکورٹی اداروں کی تحویل میں جو خوفناک انکشاف کیے ،ان انکشافات کی وجہ سے پاکستان میں موجود ’’را‘‘ کے دہشت گردوں کی صفوں سے لے کر انڈیا میں موجود ''را'' کے ہیڈ کوارٹر تک اک کہرام برپا کر رکھا ہے۔ ایسے لگتا ہے کہ جیسے بھارتی خفیہ ایجنسی ''را'' ہمارے لبرل فاشسٹوں کے جسموں میں خون بن کر دوڑ رہی ہے  لیکن ''را'' اور اس کے دہشت گرد یاد رکھیں کہ پاکستان کے قومی سلامتی کے ضامن اداروں کے جانباز بھی کسی سے کم نہیں ہیں ،ابھی تو کلبھوشن یادیو کو پھانسی کی سزا ہی سنائی ہے ۔ ان شاء اللہ جس دن اس ملعون کے گلے میں پھانسی کا پھندا فٹ کیا گیا وہ دن پاک سرزمین پر بسنے والے ''را'' کے گماشتوں کے لئے انتہائی عبرتناک ہوگا' مقبول بٹ شہید ہو ' یا افضل گورو شہید یہ کشمیر کی دھرتی کے ایسے بہادر بیٹے تھے کہ جنہوں نے تکبیر اور جہاد کے نعرے بلند کرتے ہوئے کلمہ طبیہ پڑھ کر مسکراتے ہوئے پھانسی کو قبول کیا تھا۔ مقبول بٹ سے لے کر افضل گورو تک عزیمت و شجاعت کی ایسی داستان ہے کہ جسے ہندوستانی مائیں اپنے بچوں کو لوریوں میں سنایا کریں گی ' اس سے قبل گرفتار بھارتی جاسوس سربجیت سنگھ ہو یا کشمیر سنگھ پاکستان میں موجود کلبھوشن مائنڈ سیٹ نے انہیں بھی بچانے کی پوری کوششیں کیں تھیں' مجھے پرویز مشرف دور میں انصار برنی کی وہ سہولت کاری کیسے بھول سکتی ہے کہ جس ''سہولت کاری'' کے ذریعے بھارتی جاسوس اور دہشت گرد کشمیر سنگھ کو رہا کروایا گیا تھا۔ مجھے یقین ہے کہ کلبھوشن مائنڈ سیٹ' اپنے ''یادیو'' کو ملنے والی سزائے موت کے خلاف مکمل پھڑپھڑا رہا ہے' کسی کی ''چڑیا'' دہلی سے دانا چگنے گئی ہوئی ہوگی اور کوئی ''وکالت'' کے چکر میں کلبھوشن یادیو کا سہولت کار بننے کیلئے پرتول رہا ہوگا' چلیں انتظار کرتے ہیں کہ وہ اب کون ہوگا کہ جو کلبھوشن یادیو جیسے قاتل' دہشت گرد اور بھارتی جاسوس کی رہائی کے لئے اپنی خدمات انڈیا کو پیش کرنے والا ہے' بس سمجھ لیجئے کہ یہی وہ کلبھوشن مائنڈ سیٹ ہے کہ جس سے پاکستان کو اندرونی طور پر شدید خطرات لاحق ہیں۔ وما توفیقی الا باللہ

٭…٭…٭

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
TAKWIR Web Designing (www.takwir.com) Copyrights Alqalam Weekly Online