Bismillah

618

۲۷صفرتا۳ربیع الاول۱۴۳۸ھ   بمطابق ۱۷تا۲۳نومبر۲۰۱۷ء

شعائر اسلام کے خلاف عالمی دباؤ (قلم تلوار۔نوید مسعود ہاشمی)

Qalam Talwar 615 - Naveed Masood Hashmi - Shiyar e Islam k Khilaf Dabao

شعائر اسلام کے خلاف عالمی دباؤ

قلم تلوار...قاری نوید مسعود ہاشمی (شمارہ 615)

یقینا شعائر اسلام کے خلاف عالمی دباؤ بڑھتا چلا جا رہا ہے۔۔۔ ختم نبوت کے حلف نامے کو اقرار نامے میں تبدیل کر کے قادیانیت نوازی کی بدترین عالمی سازش شعائر اسلام کے خلاف اسی عالمی دباؤ کا حصہ تھی۔۔۔ اور حیرت انگیز طور پر پارلیمنٹ کے دونوں ایوانوں کے مسلمان اراکین میں سے ایک آدھ کو چھوڑکر کوئی رکن بھی آخر وقت تک اس خوفناک سازش کوسمجھ ہی نہ سکا۔

عالمی شیطانی طاقتیں اور ان کے مقامی ایجنٹ دوبارہ پھر کسی بھی وقت’’آئین‘‘ میں موجود اسلامی شقوں۔۔۔ کے خاتمے کے لئے حملہ آور ہو سکتے ہیں۔

عالمی صہیونی طاقتیں پاکستان اور سعودی عرب کے قوانین میںموجود اسلامائزیشن کو تحفظ فراہم کرنے۔۔۔ والی شقوں کو کسی قیمت پر ہضم کرنے کیلئے تیار نہیںہیں۔۔۔ قانون توہین رسالت۔۔۔ اور قادیانیوں کو آئینی طور پر۔۔۔ کافر قرار دینا قادیانی آقاؤں بالخصوص یہود و نصاریٰ کو کسی طور پر بھی قبول نہیں ہے۔۔۔ یہ بات اب ثبوتوں کے ساتھ منظر عام پر آچکی ہے کہ۔۔۔ اسرائیل میں قادیانی سینکڑوں کی تعداد میں موجود ہیں۔۔۔ صرف اسرائیلی کاروبار میں ہی نہیں بلکہ اسرائیل کی فوج میں بھی قادیانی شامل ہیں۔۔۔ امریکہ کے اندر یہودیوں کی طرح قادیانیوں نے بھی۔۔۔ اپنا ٹھیک ٹھاک اثر و رسوخ قائم کر رکھا ہے۔۔۔

لندن، جرمنی، فرانس غرضیکہ یورپین ممالک میں۔۔۔ قادیانیوں نے پاکستان کے خلاف پورا محاذ قائم کر رکھا ہے۔۔۔ ویسے تو ہر پاکستانی حکومت کو ہی۔۔۔ قادیانی یہود و نصاریٰ کے ذریعے قابو کرنے کی کوشش کرتے ہیں،لیکن رسوا کن ڈکٹیٹر پرویز مشرف کے بعد مسلم لیگ ن کی حکومت۔۔۔ یہ دو حکومتیں۔۔۔ امریکہ کی غلامی میں اس قدر اندھی ہو کر آگے بڑھیں کہ قادیانی اور ان کے سرپرست شیطانوں کو اپنے مذموم مقاصد کی تکمیل کے لئے یہ حکومتیں’’گولڈن‘‘ نظر آئیں۔۔۔ آصف علی زرداری کی حکومت میں بھی ایک دفعہ امریکی کانگرس اراکین نے ختم نبوتؐ کے قوانین کو ختم کرنے کے حوالے سے بے شمار مالی فوائد اور رعائیتوں کے حسین خواب دکھانے کی کوشش کی، مگر بھلا ہو اس وقت کے وزیر قانون کا کہ جنہوں نے۔۔۔ آصف علی زرداری کو سمجھایا کہ۔۔۔’’قادیانیوں کا کافر قرار دینے کا یہی قانون ہے کہ جس نے چالیس برسوں سے ’’بھٹو‘‘ کو زندہ رکھا ہوا ہے۔

اگر آپ نے امریکہ کی خوشنودی کے لئے ختم نبوت کے قوانین کو چھیڑنے کی کوشش کی۔۔۔ تو اللہ کی لعنت تو ہم پر برسے گی ہی۔۔ مگرپاکستان کے مسلمان بھی ہمیں معاف نہیں کریں گے‘‘۔۔۔ اللہ کا فضل شامل حال تھا کہ جناب زرداری کو بات سمجھ میں آگئی۔۔۔ اور امریکی کانگریس اراکین کے وفد کو۔۔۔ ناکام و نامراد لوٹنا پڑا، مگر ن لیگ کی حکومت کو تو قادیانی سیکولر شدت پسندوں نے تو۔۔۔ پہلے دن سے ہی’’گود‘‘ لے لیا تھا۔۔۔ پھر فواد حسن فواد، پرویز رشید، رانا افضل، زاہد حامد، رانا ثناء اللہ اور ان جیسے بعض دیگر چھپے’’رستم‘‘ تو باقاعدہ۔۔۔۔ حکومت کے اندر تھے۔

’’مجھے کیوں نکالا‘‘ کے معروف زمانہ جملے کے خالق مسٹر نواز شریف جب سرکاری دروں پر جرمنی، لندن وغیرہ جایا کرتے تھے۔۔۔تو وہاں بھی۔۔۔ یہ قادیانیوں سے خصوصی طور پر میٹنگینں کیا کرتے تھے، ان میٹنگوں میں کوئی آلو، چاول یا ٹماٹروں کے نرخ طے تو ہوتے نہیں ہوں گے۔۔۔ کیا طے ہوتا تھا؟ اس کا واپس پاکستان پہنچ کر شریف حکومت کے اقدامات سے اندازہ لگانا چنداںمشکل نہ تھا۔

یہ شریف حکو مت کا ہی دور تھا۔۔۔ جب تحفظ ختم نبوت کے لڑیچر کو بھی فرقہ وارانہ لٹریچر قرار دے کر۔۔۔۔ دہشتگردی کے پرچے کاٹ دیئے گئے۔۔۔ یہ شریف حکومت کا ہی کالا دورتھا کہ جب۔۔۔ پنجاب میں ختم نبوتؐ کا کرم کرنے والے رضاکاروں کو گرفتار کر کے جیلوں میں۔۔۔ڈالا گیا۔

 رانا ثناء اللہ ہوں یا شہباز شریف اب تو بڑھ چڑھ کر یہ بیان دے رہے ہیں کہ’’ان کا ختم نبوتؐ پر غیر متزلزل ایمان تھا، ہے اور رہے گا‘‘۔۔۔ وزیراعظم عباسی کی حکومت کو بھی۔۔۔ اخبارات میں اشتہارات دے کر یہ بات کہنا پڑی کہ’’حکومت ختم نبوت پر مکمل اعتماد رکھتی ہے‘‘۔۔۔ کیوں جناب کیوں؟ اب ن لیگی قائدین اور حکومت کو۔۔۔ یہ صفائیاں پیش کرنے کی ضرورت محسوس کیوں ہوئی؟

نواز شریف اور شہباز شریف ذرا اپنے وکیلوں، نجم سیٹھی، ماروی سرمد، عاصمہ جہانگیر، ڈاکٹر پرویز ہود، امتیاز عالم اور پرویز رشید کمپنی سے پوچھ کر دیکھیں کہ۔۔۔ ان کا مرزا غلام قادیانی دجال اور اس کی بے پیندے کی ذریّت کے بارے میں کیا عقیدہ اورنظریات ہیں؟

میں کسی کے ایمان پر انگلی اٹھائے بغیر ختم نبوتؐ پر ایمان رکھنے کے دعویدار وزیر اعلیٰ پنجاب اور وزیر قانون سے یہ سوال کر سکتا ہوں کہ۔۔۔ آپ گزشتہ30سالوں سے حکومتوںمیں ہیں۔۔۔ ان 30سالوں میں۔۔۔ آپ نے چناب نگر سمیت پنجاب بھر میں بسنے والے قادیانیوں کو آئین پاکستان کی پابندی نہ کرنے کی بناء پر کیا سزائیں دیں؟

’’ آئین‘‘ قادیانیوں کو کافر اور غیر مسلم اقلیت قرار دیتا ہے۔۔۔ مگر قادیانی بڑی ڈھٹائی کے ساتھ۔۔۔ آئین کی دھجیاں اڑاتے ہوئے۔۔۔ اپنے آپ کو نعوذ باللہ’’احمدی‘‘ مسلمان قرار دیتے ہیں۔۔۔ شریف برادران نے تین دفعہ حکومتوں میں آنے کے باوجود قادیانیوں کو اس ظلم عظیم سے کیوں نہ روکا؟

اگر کسی مولوی نے سپیکر پر جمعہ کا خطاب کر دیا ۔۔۔ اس پر تو دہشت گردی کا پرچہ کاٹ دیا گیا۔۔۔ اگر کسی جہادی نے کشمیر کے لئے چندہ مانگ لیا اسے بھی دہشت گرد قرار دیکر گرفتار کر لیا گیا۔

مگر ختم نبوت کے علماء کے بقول۔۔۔ قادیانی عسکریت پسند تنظیموں ’’خدام الاحمدیہ‘‘، انصار اللہ اور تنظیم اطفال الاحمدیہ وغیرہ پر آج تک پابندی لگا کر۔۔۔ ان کے عہدیداروں کو گرفتار کیوں نہ کیا گیا؟

یاد رکھیئے۔۔۔ ڈرامے کر کے جھوٹ بول بول کر آپ کسی قوم کو ایک وقت تک تو گمراہ رکھ سکتے ہیں۔۔۔ مگرہمیشہ کے لئے نہیں۔۔۔ اور شائد اب وقت آن پہنچا ہے کہ جب مکروہ چہروں پر پڑے ہوئے نقاب الٹے جائیں گے!

٭…٭…٭

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
TAKWIR Web Designing (www.takwir.com) Copyrights Alqalam Weekly Online