Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

مؤثر نسخہ (رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے)

rangonoor 459 - Saadi kay Qalam Say - Muasir Nuskha

مؤثر نسخہ

رنگ و نور ۔۔۔سعدی کے قلم سے (شمارہ 459)

اللہ تعالیٰ نے مجاہدین کے لئے جہاد میں کامیابی کا نسخہ ارشاد فرما دیا ہے:

واذکرواللّٰہ کثیرالعلکم تفلحون

اللہ تعالیٰ کا بہت ذکر کرو…کامیابی یقینی ہے…

الحمد للہ پشاور میں دورہ تربیہ شروع ہو چکا ہے …اللہ تعالیٰ سے امید ہے کہ آگے چل کر ملک کے ہر ڈویژن میں یہ مبارک دورہ شروع ہو جائے گا…

سبحان اللّٰہ وبحمدہ سبحان اللّٰہ العظیم

دین کا درد رکھنے والے افراد کے لئے کتنی آسانی ہو گئی…ہر شخص خود نہ تو اچھی طرح دین سمجھا سکتا ہے اور نہ ہی دنیا میں پھنسے ہوئے کسی مسلمان کا ذہن درست کر سکتا ہے…

اب آسانی ہو گئی کہ… دعوت دے کر،منت سماجت کر کے ’’دورہ تربیہ‘‘ میں لے آئے… یہاں ماشاء اللہ سب کچھ ہے…الف اللہ سے بات شروع ہوتی ہے…کلمہ دل میں اترتا ہے اور پھر دین کی سب سے اونچی چوٹی’’جہاد فی سبیل اللہ‘‘ تک بات پہنچ جاتی ہے…

ماحول میں نورانیت ہوتی ہے…خدمت اور رہنمائی کے لئے اہل محبت…اکرام اور محبت کے ساتھ موجود ہوتے ہیں…اور گناہوں سے الحمد للہ دوری کا ماحول ملتا ہے…

آپ اندازہ لگائیں کہ …دین کے دشمن کیسے سرگرم ہوئے کہ…فتنوں اور گناہوں کو ہر مسلمان کے گھر میں داخل کر دیا…گھر تو اب بڑی بات ہر مسلمان کی جیب میں گناہوں اور فتنوں کا پورا سامان پہنچا دیا گیا ہے…ظالموں نے دن رات محنت کی کہ کس طرح اللہ تعالیٰ کے بندوں کو گمراہ کریں…اور اللہ تعالیٰ کے بندوں کو اللہ تعالیٰ سے دور کریں…یہ ان کی محنت ہے کہ آج ہر گناہ سستا ہو گیا،آسان ہو گیا، ہر کسی کو میسر ہو گیا…اور اللہ معاف فرمائے ہر کسی کی زندگی اور معاشرے کا حصہ بن گیا…اب کون کس کی نگرانی کرے…اور کون کس کو گناہ سے باز رکھے…سود کی لعنت ایسی عام کر دی کہ مسلمان حلال کو ترسے…ہر طرف جوا ہی جوا اور سود ہی سود ہے…

صرف ایک گھنٹے میں ہر کسی کو اس کے موبائل پر…پانچ بار گناہ کی دعوت ملتی ہے…لاٹری کھیل لو…گانے سن لو…بدمعاشی دیکھ لو…سودی انعامی مقابلے میں کود پڑو…میوزک بجا لو…آہ افسوس! اس ماحول نے دل کی مٹھاس اور چہرے کا پانی چھین لیا…

دل ایسے سخت اور قساوت زدہ ہوئے کہ دو آنسو بھی اللہ تعالیٰ کے لئے نہیں ٹپکتے…موبائل فون ہر کسی کے گلے میں بندھی ہوئی رسی ہے…یا یوں سمجھیں کہ ناک کی نکیل ہے… ایک منٹ فارغ نہیں چھوڑتا کہ انسان کچھ اپنے اندر جھانک لے…اپنی روح کو کچھ وقت دے …اپنے دین کو کچھ درست کرے…اپنی قبر کی کچھ فکر کرے…

موبائل نے انسان کو ایک بے وقوف مشین بنا دیا ہے…فلاں گر گیا،فلاں اٹھ گیا، فلاں بیمار ہے،فلاں کا ایکسیڈینٹ ہو گیا…فلاں آخری سانس لے رہا ہے…فلاں یہ کہہ رہا ہے …اب ہم فلاں،فلاں اور فلاں کے ہو گئے… اور ’’اپنے‘‘ نہ رہے…

اپنے لئے تو ہمارے پاس وقت ہی نہیں کہ کچھ اپنا بھی بنا لیں کہ…آگے جب اکیلی قبر میں ہوں گے تو وہاں ہمارے ساتھ جائے گا اور کام آئے گا…

خیر یہ ایک الگ موضوع ہے … بات یہ چل رہی تھی کہ اہل فساد اور اہل فتنہ نے دن رات محنت کی…اور ہر گناہ کو ہمارے گھر کے دروازے تک پہنچا دیا…کیا ’’اہل دین‘‘ کا فرض نہیں بنتا کہ وہ محنت کریں اور مسلمانوں کو گناہوں کے ماحول سے نکال کر …خالص دینی ماحول میں لے جائیں …ساز اور گانے کے شور سے نکال کر …اللہ، اللہ ، اللہ کی صداؤں میں لے جائیں… دنیا کی تنگی اور گھٹن سے نکال کر…آخرت کی وسعت یاد دلانے والی جگہوں پر لے جائیں… دنیا پرستی کے تعفن سے نکال کر…شوق شہادت کی خوشبوؤں میں لے جائیں…الحمد للہ دورہ تربیہ کا نصاب ایک مسلمان کو ایمان،ذکر ،جہاد ہر ایک کی لذت چکھاتا ہے…اور زندگی کو تنگ گلی سے نکال کر کھلی شاہراہ پر ڈالتا ہے…آپ اپنے بچوں پر بھی یہ احسان کریں کہ جو بالغ ہو چکے ان کو دورہ تربیہ میں بھیجیں اور بار بار بھیجیں…آپ اپنے رشتہ داروں کے ساتھ بھی یہ بڑی بھلائی کریں…وہ رشتہ دار مالدار ہوں یا غریب آپ ان کے پاس چل کر جائیں…اور انہیں منت سماجت کے ساتھ ترغیب دیں کہ…آپ اللہ تعالیٰ کی رضاکے لئے اپنی زندگی کا ایک ہفتہ دے دیں…ان شاء اللہ اس ایک ہفتہ کی روشن راتیں اور معطر دن آپ کے بہت کام آئیں گے…یہی دعوت اپنے پڑوسیوں کو بھی دیں…جماعت کے ذمہ دار دورہ تربیہ کی قدر کریں اور اس میں بڑھ چڑھ کر خود حصہ لیا کریں…اپنے اندر ایمانی کیفیات مضبوط ہوں گی تو ہماری دعوت میں بھی برکت ہو گی اور ہمارے اوقات میں بھی…

اہل برکت،بہت تھوڑے وقت میں سالہا سال کا کام کر لیتے ہیں…اپنے نفس کی اصلاح ہر مسلمان کے ذمہ لازم اور فرض ہے…دورہ تربیہ اصلاح نفس کا بہترین اور آسان نسخہ ہے…ہر مسلمان کے لئے لازم ہے کہ وہ اپنے ایمان کی تجدید کرتا رہے اور دورہ تربیہ ایمان کی تجدید کا بہترین ذریعہ ہے…اپنے گناہوں پراستغفار اور سچی توبہ کرنا یہ ہر مسلمان کے لئے لازم ہے…دورہ تربیہ سچی توبہ اور سچے استغفار کی بہترین مجلس ہے …جہاد کو ماننا فرض ہے اور جہاد میں نکلنا بھی فرض ہے…جہاد کو مانے بغیر ایمان مکمل نہیں ہوتا… اور جہاد میں نکلے بغیر اعمال صالحہ کی بلند چوٹی نصیب نہیں ہوتی…دورہ تربیہ جہاد سمجھاتا ہے اور جہاد کی راہیں دکھاتا ہے…ذکر اللہ ہر عمل کی روح ہے… ذکر ہی میں مسلمانوں کی اصل ترقی ہے …اور ذکر ہی تمام اعمال کا سرتاج ہے…دورہ تربیہ ذکر اللہ کی شاندار محفل ہے…کئی لوگوں نے بتایا کہ ہم نے دورہ تربیہ کے سات دنوں میں جتنا ذکر کیا ہے…اتنا اپنی پوری سابقہ زندگی میں نہیں کیا تھا…

جب بندہ اللہ تعالیٰ کا ذکر کرتا ہے تو اللہ تعالیٰ اس بندے کا ذکر فرماتے ہیں:

سبحان اللّٰہ وبحمدہ سبحان اللّٰہ العظیم

محبت پہلے اللہ تعالیٰ کی طرف سے آتی ہے…

ویحبھم

یہ محبت دل میں اتر کر اس دل میں اللہ تعالیٰ کے لئے محبت پیدا کرتی ہے

ویحبونہ

یعنی عرش کے اوپر سے محبت آتی ہے…اور مومن کے دل میں اتر جاتی ہے…پھر اس دل سے محبت بلند ہوتی ہے…اور عرش کے نیچے جا کر سجدہ کرتی ہے…

ویحبھم ویحبونہ

اللہ تعالیٰ ان سے محبت فرماتا ہے اور وہ اللہ تعالیٰ سے محبت کرتے ہیں

ذکر اللہ اسی محبت کا پھل ہے…بہت میٹھا اور بہت لذیذ پھل

اللّٰہ، اللّٰہ، اللّٰہ، اللّٰہ، اللّٰہ

نماز ایک مسلمان کے لئے…اس کی زندگی کا سب سے اہم کام اور اہم فریضہ ہے…دورہ تربیہ …نماز سکھاتا ہے،نماز سمجھاتا ہے اور فرائض کے ساتھ ساتھ نوافل کا ذوق عطاء کرتا ہے…دراصل نماز اسی مسلمان کی محفوظ رہتی ہے جس کو نوافل کا ذوق ہو…تب فرائض ،واجبات اور سنن اس کے لئے بہت آسان ہو جاتے ہیں…الغرض دورہ تربیہ ایک مختصر سا نصاب مگر بہت انمول نعمت ہے…اہل پشاور کو مبارک کہ ان کے ہاں یہ ’’دورہ‘‘ پہنچ گیا…زندگی مختصر ہے اس دورہ سے خوب فائدہ اٹھائیں…یہ دورہ زندگی کو قیمتی اور کامیاب بنانے کا مؤثر نسخہ ہے…

لا الہ الا اللّٰہ، لا الہ الا اللّٰہ،لا الہ الا اللّٰہ محمد رسول اللّٰہ

اللہم صل علی سیدنا محمد والہ وصحبہ وبارک وسلم تسلیما کثیرا کثیرا

لا الہ الا اللّٰہ محمد رسول اللّٰہ

٭…٭…٭

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor