Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

مجلسِ تکبیر (رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے)

rangonoor 464 - Saadi kay Qalam Say - Majlis-e-Takbeer

 مجلسِ تکبیر

رنگ و نور ۔۔۔سعدی کے قلم سے (شمارہ 464)

اللّٰہ اکبر، اللّٰہ اکبر لا الہ الا اللّٰہ… واللّٰہ اکبر،

اللّٰہ اکبر وللّٰہ الحمد

آج کیا کالم لکھنا… اور کیا تبصرے کرنا! چھوڑیں بس… تکبیر پڑھتے ہیں تکبیر، اپنے عظیم ربّ کی بڑائی اور عظمت پکارتے ہیں… ارے بھائیو! تکبیر کہنا، تکبیر پڑھنا بڑا اونچا کام ہے…

اللّٰہ اکبر، اللّٰہ اکبر لا الہ الا اللّٰہ… واللّٰہ اکبر،اللّٰہ اکبر وللّٰہ الحمد

حج بیت اللہ کے دن قریب آگئے ہیں… اللہ تعالیٰ ہم سب مسلمانوں کو بار بار حج مبرور نصیب فرمائے… حج بیت اللہ کا اس عظمت کے ساتھ ہر سال قائم ہونا… یہ اللہ تعالیٰ کی نشانیوں میں سے ہے…بڑے بڑے فتنے کعبہ شریف کے خلاف اٹھے… کئی بار منحوس طیارے خطرناک بم اٹھائے روانہ ہوئے… کچھ ظالموں نے روضہ اطہر اور مسجد نبوی کو ویران کرنے کی بڑی خوفناک سازشیں کیں… کئی فتنے حج کا معنیٰ مطلب بدلنے کو بھی اٹھے… کئی بہروپیوں نے حج کے منسوخ ہونے کے فتوے بھی دیئے…حجاز کا وہ خطہ جہاں کعبہ شریف ہے اسے مکمل طور پر سیلابوں میں گم کرنے کی کوششیں بھی ہوئیں کہ… بس سمندر ہی سمندر نظر آئے… مگر ساری تدبیریں مکڑی کا جالا بن گئیں… وہ دیکھو! کعبہ شریف کس شان سے کھڑا ہے… اور لاکھوں مسلمان اس کے گرد دیوانہ وار گھوم کر… اللہ تعالیٰ کی وحدانیت کااور عظمت کا اقرار کر رہے ہیں… مسلمانو! شکر کرو کعبہ شریف بھی تمہارا… اور حج مبارک بھی تمہارا… تمہارے سوا نہ کسی کے پاس کعبہ نہ کسی کے پاس حج…

اللّٰہ اکبر، اللّٰہ اکبر لا الہ الا اللّٰہ… واللّٰہ اکبر،اللّٰہ اکبر وللّٰہ الحمد

وہ دیکھو! عید الاضحیٰ بھی تشریف لارہی ہے… سبحان اللہ، سبحان اللہ! کیا مناظر ہیں… ہر مسلمان قربانی پیش کرنے کی فکر میں ہے… جانوروں کی منڈیاں ہر سو سجی ہیں… اللہ تعالیٰ کے نام پر ذبح ہونا بھی سعادت اور اللہ تعالیٰ کے نام پر ذبح کرنا بھی سعادت… حضرت آقا مدنیﷺ نے سو اونٹوں کی قربانی پیش فرمائی… ان میں سے اکثر کو اپنے ہاتھ مبارک سے نحر فرمایا… وہ اونٹ خود آگے بڑھ بڑھ کر… شوق اور بے تابی سے اپنی گردن پیش کرتے تھے… قربانی بندے کو اللہ تعالیٰ کے قریب کر دیتی ہے… اسی لئے شیطان کے کارندے مسلمانوں کو قربانی سے روکتے ہیں… کوئی کہتا ہے گوشت ضائع جاتا ہے… کوئی کہتا ہے اس رقم سے غریبوں کا علاج کرالو… وہ اپنی عیاشیوں بدمعاشیوںمیں سے تو ایک پائی کی کٹوتی کو تیار نہیں… بس مسلمانوں کو اللہ تعالیٰ کے قُرب سے دور کرنے کیلئے… درد بھری باتیں بناتے ہیں… بس اتنا یاد رکھیں… ہم بندے ہیں، ہمارا کام اُن کا حکم ماننا ہے… اگر اپنے ذہن سے اپنا دین بنائیں گے تو مارے جائیں گے…کیونکہ ذہن ناقص ہے… وہ تویہاں تک کہہ سکتا ہے کہ تم پیدا ہی نہ ہو… تاکہ ماں کو تکلیف نہ ہو… بس قصہ ہی ختم… قربانی کے مخالفین نے لاکھ زور لگا لئے… مزید بھی لگا رہے ہیں… مگر قربانی اللہ تعالیٰ کے’’شعائر‘‘ میں سے ہے… سبحان اللہ! اللہ تعالیٰ کے خاص اور پسندیدہ ترین اعمال میں سے ہے… اسی لئے تو اتنی سازشوں کے باوجود ماشاء اللہ قربانی بڑھتی ہی جارہی ہے… وہ کونسی سازش ہے جو اللہ تعالیٰ کی قدرت اور طاقت سے بڑی ہو… کوئی نہیں، کوئی نہیں… اللہ ہی بڑا ہے… اللہ تعالیٰ سب سے بڑاہے…

اللّٰہ اکبر، اللّٰہ اکبر لا الہ الا اللّٰہ… واللّٰہ اکبر،اللّٰہ اکبر وللّٰہ الحمد

یہ جو دس دن عشرہ ذی الحجہ کے ہیں… اور پھر ان کے بعد تین دن ایام تشریق کے… ان میں ’’تکبیر‘‘ کی فضیلت بڑھ جاتی ہے… بس یوں کہیں کہ یہ تمام دن’’تکبیر‘‘ کا سیزن ہیں… یہ تو اللہ تعالیٰ کا احسان ہے کہ وہ ہمیں زیادہ سے زیادہ ’’تکبیر‘‘ کہنے کی توفیق عطاء فرمادے… ورنہ اللہ تعالیٰ کو کیا ضرورت ، کیا حاجت؟… اللہ تعالیٰ کی بڑائی اور عظمت کسی کے کہنے ،سننے اور ماننے پر موقوف نہیں ہے… اتنا بڑا عرش، بڑے بڑے آسمان اور زمینیں، سمندر اور بادل… یہ سب اللہ تعالیٰ کی عظمت بیان کرتے ہیں… طاقتور حکمرانوں کا منٹوں میں ختم یا بے بس ہو جانا… بڑے جابر لوگوں کا کینسر کے درد سے کڑھنا اور تڑپنا… دن کی جگہ رات… اور رات کی جگہ دن کا آنا جانا… ان میں سے کچھ بھی انسان کے بس میں نہیں… ہر چیز اللہ ہی اللہ پکارتی ہے… خوش نصیب ہے وہ انسان جو اللہ تعالیٰ کو یاد رکھے… اور یاد کرے… اور بڑا بد نصیب ہے وہ جو اللہ تعالیٰ کو بھلا دے… فرمایا جو ہمیں بُھلا دیتا ہے ہم اسے بُھلا دیتے ہیں…

نَسُوا اللّٰہَ فَنَسِیَھُمْ

انہوں نے اللہ تعالیٰ کو بُھلا دیا… تو اللہ تعالیٰ نے انہیں بُھلا دیا…

اللہ تعالیٰ کا بُھلا دینا یہ ہے کہ… اب خیر کے دروازے بند، ہر طرف شر ہی شر… صبح شام کفر، گناہ، بدکاری… اور بُرائی…

نہ کوئی خیر… نہ کوئی نیکی… نہ کسی اچھے کام کی توفیق… نہ اجر و ثواب کا کوئی موقع… ایک جانور کی طرح جی کر مرگئے… اور مستقل جہنم کا ایندھن بن گئے… یا اللہ! امان… مگر وہ جنہیں اللہ تعالیٰ یاد فرماتے ہیں…اُن کو تو ہر قدم پر خیر، ہر قدم پر بھلائی… اور ہر آن سعادتیں عطاء فرماتے ہیں…جب جس خیر کا موقع آیا… اُن کو اس کی توفیق عطاء فرمادی…تاکہ وہ ہمیشہ ہمیشہ کے بادشاہ بن جائیں…اب ذی الحجہ آیا تواُن کو تکبیر پر لگا دیا کہ اپنے رب کا نام بلند کرتے جاؤ… اور خود اپنے رب کے قرب کی طرف بلند ہوتے جاؤ…

اللّٰہ اکبر، اللّٰہ اکبر لا الہ الا اللّٰہ… واللّٰہ اکبر،اللّٰہ اکبر وللّٰہ الحمد

حضرات صحابہ کرام کو’’تکبیر‘‘ کا بڑا ذوق تھا… دراصل وہ بڑی محنتوں سے’’تکبیر‘‘ تک پہنچے تھے… وہ جس معاشرے میں اٹھے تھے اس میں… بہت سی چیزیں ’’بڑی‘‘ بن چکی تھیں… اور ایسی بڑی کہ اُن کو چھوٹا کرنے کا کوئی سوچ بھی نہیںسکتا تھا… بڑے بڑے بت تھے… اور اُن بتوں کے آستانے اور تیر… قبائلی روایات اور خاندانی فخر و غرور کے پہاڑ… خونریزی اور جھوٹی غیرت کی ناقابل تبدیل رسومات… شیطان کی صدیوں کی محنت کہ پورا معاشرہ ایک خاص رنگ پر پختہ ہو چکا تھا… اور تبدیلی کادور دور تک تصور بھی نہیں تھا کہ… اچانک کوہ صفا سے آواز آئی

قولوا لا الہ الا اللّٰہ

کہہ دو… صرف اللہ، صرف اللہ، فقط اللہ ہی معبودہے…

کہہ دو… اللہ اکبر، اللہ سب سے بڑا ہے… اللہ ایک ہے…

یہ کلمات جو ہم آج آسانی سے لکھ لیتے ہیں، بول لیتے ہیں… اُس وقت آسان نہ تھے… یہ کلمات اُس وقت سرخ موت اور کالے تشدّد کو پکارنے کے مترادف تھے… حضرات صحابہ کرامؓ نے ان مبارک کلمات کی بہت بھاری قیمت ادا کی … اور یہ کلمات اپنے خون کے بدلے میں حاصل کئے… چنانچہ انہیں… ان کلمات سے عشق تھا … وہ جب پڑھتے دل کے یقین… اور دل کی آواز سے پڑھتے… وہ چاہتے تھے کہ اور سب لوگ بھی ان کلمات تک پہنچ جائیں… اور ان کلمات کو پالیں…

حضرت سیدنا عمر بن خطاب رضی اللہ عنہ… جب منیٰ میں ’’تکبیر‘‘ بلند فرماتے تو آواز بہت دور تک جاتی… پھراس سچی آواز کو سن کر دوسرے لوگ بھی تکبیر پکارتے تو وادی گونج اٹھتی… جی ہاں! ایسی بارعب، والہانہ گونج کا تصور آج لاوڈ سپیکر اور دیگر آلات کی موجودگی میں بھی نہیں کیا جا سکتا…اُدھر حضرت سیدنا ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ… اور حضرت سیدنا عبداللہ بن عمر رضی اللہ عنہ عشرہ ذی الحجہ… بازاروں میںنکل جاتے اور لوگوں کو تکبیر کہلواتے… اور یوں بازار تکبیر کی آواز سے گونجنے لگتے…

اللّٰہ اکبر، اللّٰہ اکبر لا الہ الا اللّٰہ… واللّٰہ اکبر،اللّٰہ اکبر وللّٰہ الحمد

یاد رکھیں! تکبیر میں قوت ہے، تکبیر میں طاقت ہے، تکبیر میں سکون ہے… تکبیر میں سکینہ ہے… اور تکبیر میں عزت ہے…

اللہ اکبر… اللہ سب سے بڑا ہے… جی ہاں! دنیا کی اُن طاغوتی طاقتوں سے بھی بڑا ہے … جو خود کو ناقابل شکست سمجھ بیٹھی ہیں… اور ہمیں غلام بنانا چاہتی ہیں… اللہ اکبر، اللہ اکبر… اللہ تعالیٰ اُن فکروں، غموں اور پریشانیوں سے بھی بڑا ہے… جو ہمیں گھیر کر دنیا میں پھنسانا چاہتی ہیں…

اللہ اکبر، اللہ اکبر… اللہ تعالیٰ کی رحمت اُن گناہوں سے بھی بڑی ہے جن کو کرنے کے بعد بہت سے لوگ مایوسی کی کھائی میں جا گرے کہ… اب معافی نہیں… اور پھر سرتاپا گناہوں میں پھنس گئے…

الغرض…تکبیر جوں جوں دل میں اترتی ہے … یہ دنیا، اس کی طاقتیں، اس کے مسائل اور اس کی پریشانیاں… انسان کے دل میںچھوٹی ہوتی چلی جاتی ہیں… اور انسان آزاد ہو کر… اپنے رب سے قریب تر ہوتا چلاجاتا ہے…

اللّٰہ اکبر، اللّٰہ اکبر لا الہ الا اللّٰہ… واللّٰہ اکبر،اللّٰہ اکبر وللّٰہ الحمد

دل تو نہیں چاہتا کہ’’مجلس تکبیر‘‘ ختم ہو… مگر اختصار مطلوب ہے… الحمدللہ عشرہ ذی الحجہ میں جہاد کی طرف مسلمانوں کا رجوع بڑھ رہا ہے… حج اور جہاد کا آپس میں بڑا جوڑ ہے… اہل علم نے خوب کھول کر حج اور جہاد کے جوڑ کو بیان فرمایا ہے … وجہ یہ ہے کہ قرآن مجید میں… حج کے ساتھ جہاد کا تذکرہ جڑا ہوا ہے… پہلے اشہرِ حرم میں جہاد کی چھٹی تھی… بعد میں عمومی اجازت دے دی گئی … جہاد اور تکبیر کا بھی آپس میں گہرا جوڑ ہے … جہاد’’تکبیر‘‘ سے قوت پکڑتا ہے… اور’’تکبیر‘‘ جہاد کی برکت سے دور دور تک گونجتی اور پہنچتی ہے… آج عالم کفر نے بھی الحمدللہ… جہاد کی طاقت کو مان لیا ہے… اور اب وہ اس طاقت کو مٹانے کی کوشش میں دن رات مِٹ رہے ہیں… ہماری طرف سے تمام حجاج کرام کو… مبارک… تمام غازیان اسلام کو مبارک…

اور تمام اُمت مسلمہ کو… عیدالاضحیٰ مبارک

اللّٰہ اکبر، اللّٰہ اکبر لا الہ الا اللّٰہ… واللّٰہ اکبر،اللّٰہ اکبر وللّٰہ الحمد

لا الہ الا اللّٰہ، لا الہ الا اللّٰہ، لاالہ الا اللّٰہ محمد رسول اللّٰہ

اللھم صل علیٰ سیدنا محمد وآلہ وصحبہ وبارک وسلم تسلیما کثیرا کثیرا

٭…٭…٭

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor