Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

ایک سبق (رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے)

rangonoor 474 - Saadi kay Qalam Say - Aik Sabaq

ایک سبق

رنگ و نور ۔۔۔سعدی کے قلم سے (شمارہ 474)

اللہ تعالیٰ ہمیں اُن خوش نصیبوں میں سے بنائے جو صرف ’’اللہ تعالیٰ‘‘ سے مانگتے ہیں…اور اللہ تعالیٰ کے سوا کسی سے نہیں مانگتے…

اَللّٰہُمَّ اَغْنِنَا بِفَضْلِکَ عَمَّنْ سِوَاکَ

یا اللہ! اپنا فضل فرما کر ہمیں اپنے سوا ہر کسی سے غنی فرما دیجئے…

قرآنی نقشہ

’’دعاء‘‘ کتنی بڑی چیز ہے…اور کتنی ضروری چیز ہے اسے سمجھنا ہو تو قرآن مجید میں جھانک کر دیکھیں…بڑے بڑے اولوالعزم انبیاء علیہم السلام اللہ تعالیٰ سے دعاء مانگ رہے ہیں…بڑے بڑے مجاہدین دعاء مانگ رہے ہیں…بڑے بڑے بادشاہ دعاء مانگ رہے ہیں…فاتحین بھی دعاء مانگ رہے ہیں…اور مظلوم بھی دعاء مانگ رہے ہیں…اور جو بھی اللہ تعالیٰ سے دعاء مانگ رہا ہے وہ کامیاب ہو رہا ہے…

قرآن مجید کی دعائیں پڑھتے جائیں…ان دعاؤں کے آس پاس والا قصہ پڑھتے جائیں… آپ کے دل میں دعاء کی اہمیت اچھی طرح بیٹھ جائے گی…افسوس کہ آج مسلمانوں نے دعاء بہت کم کر دی ہے…اکثر مانگتے ہی نہیں…اور جو مانگتے ہیں وہ توجہ اور یقین سے نہیں مانگتے…

آج کا سبق

آج کئی باتیں عرض کرنی تھیں مگر ایک ضروری بات جس کا تعلق دعاء کے ساتھ ہے وہ ہر بار رہ جاتی ہے…آج کوشش کرتے ہیں کہ اس کا کچھ تذکرہ ہو جائے…دعاء کے بارے میں ہم پر کچھ حقوق ہیں…کچھ لوازمات ہیں اور کچھ قرضے…بس یہی ایک نکتہ آج کا سبق ہے…

تین طبقے

ہم میں سے ہر مسلمان کی زندگی میں تین طبقے ضرور موجود ہوتے ہیں:

(۱) ہم پر احسان کرنے والے…ہمارے ساتھ بھلائی کرنے والے مسلمان

(۲) ہم پر ظلم کرنے والے…ہمیں ستانے والے مسلمان

(۳) وہ مسلمان جن پر ہم کوئی ظلم کر بیٹھتے ہیں…کوئی زیادتی،غیبت،حق تلفی وغیرہ…

آپ کو اپنی زندگی میں یہ تین طبقے ضرور نظر آئیں گے…اور مرتے دم تک یہ تینوں ہمارے ساتھ رہتے ہیں…ہمارے لئے ضروری ہے کہ ہم اپنی روزانہ کی دعاء میں ان تین طبقوں کو ان کا پورا حق دیں…جو مسلمان یہ حق ادا کرتا ہے وہ بڑی بڑی نعمتیں پا لیتا ہے…

پہلا طبقہ

ناشکری بہت خطرناک گناہ اور جرم ہے … ناشکری انسان کو کفر تک لے جاتی ہے…اسی لئے عربی زبان میں ناشکری کو ’’کفران‘‘ کہتے ہیں … اور یہ مقولہ مشہور ہے کہ کفران بڑھ جائے تو انسان کو کفر میں گرا دیتا ہے…اور فرمایا کہ جس نے لوگوں کی ناشکری کی…یعنی ان کے احسان کو نہیں مانا، ان کے احسان کو محسوس نہیں کیا وہ انسان…اللہ تعالیٰ کا بھی ’’ناشکرا‘‘ ہوتا ہے…حضرت امام بخاریؒ نے اپنی مایہ ناز اصلاحی کتاب ’’الادب المفرد‘‘ میں ہر مسلمان کو یہ نکتہ سمجھانے کے لئے بہت زور لگایا ہے …اللہ تعالیٰ توفیق دے تو وہاں ضرور پڑھ لیجئے گا…اللہ تعالیٰ ہماری زندگی میں ایسے افراد کو لاتا ہے جو ہم پر ’’احسان‘‘ کرتے ہیں… اوران کے ذریعے اللہ تعالیٰ ہمیں بڑی انمول نعمتیں عطاء فرماتا ہے مگر شیطان کی پوری کوشش رہتی ہے کہ …ہم ایسے افراد اور ان کے احسانات کی ناقدری کریں ،ناشکری کریں… ایسے افراد کے لئے روزانہ دعاء کو اپنا معمول بنانا چاہیے…دعاء بھی شکر گزاری اور احسان کا بدلہ دینے کا ایک بہترین ذریعہ ہے… کسی نے ہم پر دینی احسان کیا،کسی نے ہم پر روحانی احسان کیا…کسی نے ہم پر دنیاوی احسان کیا… کسی نے ہم پر علمی احسان کیا…یا اللہ! جس مسلمان نے بھی ہمارے ساتھ کوئی احسان کیا،ہمیں کوئی بھی خیر یا بھلائی پہنچائی اسے اس کا بہترین بدلہ…جزائے خیر دنیا وآخرت میںعطافرما دیجئے …ایسے تمام افراد کی مغفرت فرما دیجئے!انہیں وافر رزق حلال عطاء فرما دیجئے …اور انہیں جہنم کی آگ اور دھوئیں تک سے بچا لیجئے … یا اللہ! آپ کے علم میں جو افراد ہمارے لئے خیر والے ہیںہمیں ان کی قدر دانی نصیب فرما دیجئے …

یہی دعاء کر لیجئے یا اس سے ملتے جلتے اپنے حسب حال الفاظ استعمال کیجئے…یقین کریں اگر آپ نے اس دعاء کو اپنا معمول بنا لیا تو …ان شاء اللہ آپ کے بہت سے قرضے اُتر جائیں گے… بہت سے حقوق ادا ہو جائیں گے…اور آپ بہت سی محرومیوں سے بچ جائیں گے…آپ کے ’’اہل احسان‘‘ وفات پا چکے ہیں یا زندہ ہوں…دونوں کے لئے دعاء کو اپنا معمول بنا لیں…

دوسراطبقہ

وہ مسلمان جو ہمیں ستاتے ہیں،تنگ کرتے ہیں…ہم پر ظلم یا زیادتی کرتے ہیں…ہماری غیبت کرتے ہیں…ہماری حق تلفی کرتے ہیں… ہمیں ایذاء پہنچاتے ہیں…یہ حضرات بھی دراصل ہمارے ’’محسن‘‘ ہیں…یہ اگر ہماری زندگی میں نہ آئیں تو ہم کبھی ترقی نہ کر سکیں …یہ افراد نہ ہوں تو ہم ہمیشہ کمزور رہ جائیں…یہ افراد نہ ہوں تو ہماری زندگی بہت سی اچھی تبدیلیوں سے محروم رہ جائے …یہ ہمارے محسن ہیں…جس طرح پہلے طبقے والے ہمارے محسن ہیں…فرق اتنا ہے کہ… پہلے طبقے والے ہمارے ساتھ بھی بھلا کرتے ہیں اور اپنے ساتھ بھی بھلا کرتے ہیں…جبکہ دوسرے طبقے والے وہ لوگ ہیں جو اپنا نقصان کر کے ہمارا بھلا کرتے ہیں…مثلاً اگر وہ ہماری غیبت کرتے ہیں تو اس میں ان کا شدید نقصان ہے مگر ہمارا بھلا ہے کہ…ہمارے گناہ اب ان کے سر چلے جائیں گے…وہ ہمیں ستاتے ہیں تو اپنا نقصان کرتے ہیںکیونکہ مسلمانوں کو ستانا جرم ہے…مگر ان کے ستانے کی وجہ سے ہمارے اندر مضبوطی اور اچھی تبدیلی آتی ہے…اورہماری اصلاح ہوتی ہے… اس لئے جو مسلمان جس قدر زیادہ کام والا ہوتا ہے اس کو ستانے والے بھی اس قدر زیادہ ہوتے ہیں …لوگوں کے ستانے اور ایذاء پہنچانے سے ہمیں کون کون سی نعمتیں ملتی ہیں…یہ قرآن مجید نے کئی جگہ بہت لطیف انداز میں سمجھایا ہے…آپ خود اپنی زندگی میں غور کریں…ماضی کے واقعات یاد کریں …اگر بہت سے ستانے والے اور ایذاء پہنچانے والے افراد آپ کی زندگی میں نہ آتے تو آپ کتنی نعمتوں سے محروم ہو جاتے…خیر یہ ایک بڑا وسیع موضوع ہے…آج یہ عرض کرنا ہے کہ اس طبقے کا ایک بڑا فائدہ یہ ہے کہ اگر ہم روز اسے معاف کریں …اور روز ان کے لئے دعاء کریں تو دو نعمتیں ملنے کا قوی امکان ہے…پہلی نعمت یہ کہ ہمیں اللہ تعالیٰ کی طرف سے معافی مل جائے گی جس کے ہم بے حد محتاج ہیں…اور دوسری نعمت یہ کہ رزق میں ایسی برکت ہو گی کہ عقل اس کا احاطہ نہیں کر سکتی…

یا اللہ! ہر وہ مسلمان جس نے ہماری غیبت کی، حق تلفی کی…ہم پر کوئی ظلم کیا،زیادتی کی…ہمیں ایذاء پہنچائی …یا اللہ! ہم نے اسے آپ کی رضا کے لئے معاف کر دیا…آپ اسے معاف فرما دیجئے اور اپنی مغفرت اور رحمت اسے عطاء فرما دیجئے …

یہ دعاء اگر دل کی موافقت کے ساتھ نصیب ہو جائے …اور ہمارا عمل بھی اس کے مطابق ہوجائے تو… پھر ان شاء اللہ توفیق، مغفرت اور رزق کے دروازے ہم پر کھل جاتے ہیں…

یہ وہ طبقہ ہے کہ اگر ہم اسے معاف نہ کریں تو یہ بھی جائز ہے… اگرہم اُس سے برابر کا بدلہ لیں تو یہ بھی جائز ہے…اور اگر ہم ان کے لئے کچھ شرائط کے ساتھ بددعاء کریں تو وہ بھی جائز ہے…

مگر جو مسلمان …اپنے آقا مدنی ﷺ کے حکم پر سر جھکا کر اپنے یہ تمام جائز حقوق چھوڑ دے …ظلم کرنے والوں کو معاف کرے اور برائی کرنے والوں کے ساتھ اچھائی کرے…

وَاعْفُ عَمَّنْ ظَلَمَکَ وَاَحْسِنْ اِلیٰ مَنْ اَسَائَ اِلَیْکَ

تو ایسا مسلمان …اپنے عظیم آقا مدنی ﷺ کے مبارک اخلاق کی پیروی کرتا ہے…آپ ایسے مسلمان کے اونچے مقام کا خود اندازہ لگا لیجئے…

تیسرا طبقہ

دعاء کے باب میں یہ طبقہ سب سے زیادہ ’’اہم‘‘ اور ’’ضروری‘‘ ہے…یہ وہ مسلمان ہیں جو ہمارے ’’ اہل حقوق‘‘ اور ’’اہل مظالم ‘‘ ہیں…ہم پر ان کے حقوق لازم تھے جو ہم نے ادا نہیں کئے … اور ان میں سے بعض وہ ہیں جن کی ہم نے غیبت کر ڈالی…گویا ان کا گوشت کھا گئے…

بعض ایسے ہیں جن پر ہم نے کوئی ظلم کر ڈالا …اور قیامت کے دن اپنی گردن ان کے ہاتھ میں دے دی…بعض ایسے ہیں کہ ہم نے انہیں کوئی ایذاء یا تکلیف پہنچا کر …مسلمان کی جگہ ’’موذی‘‘ ہونے کا کردار ادا کیا…یہ لوگ اگرہمیں معاف کئے بغیر دنیا سے جا چکے ہیں تومعاملہ زیادہ خوفناک ہے… اور اگر زندہ ہیں تو پھر کچھ کم خوفناک ہے …ہم پر لازم ہے کہ ہم دعاء اور نفل عبادات کے ایصال ثواب کے ذریعے اس معاملہ میں اپنی جان کا بھلا کریں…

یا اللہ! وہ تمام مسلمان جن کی ہم نے غیبت کی، حق تلفی کی، ایذاء رسانی کی…انہیںکوئی تکلیف پہنچائی… یا اللہ! ہمیں اور انہیں اپنی معافی عطا فرما دیجئے…یا اللہ! انہیں اس کے بدلے بہترین نعمتیں،اپنی رحمتیں اور برکتیں عطا فرما دیجئے…یا اللہ!انہیں توفیق دیجئے کہ وہ ہمیں معاف کر دیں …یا اللہ! آئندہ اس طرح کے گناہوں سے ہماری حفاظت فرما دیجئے…یہ الفاظ یا اپنے حسب حال جو بھی الفاظ ہوں ان میں دل کی توجہ سے…اور اپنی اہم ضرورت سمجھ کر اس دعاء کو اپنا معمول بنائیں …

ہم نے ایسے حضرات کو دیکھا ہے جو …فکرِ آخرت رکھتے تھے، وہ ہمیشہ اپنے اس تیسرے طبقے کے معاملہ میں بہت فکر مند رہتے اور سخت محنت کرتے …میں نے خود ایک بزرگ کو دیکھا کہ وہ روزانہ سات پارے تلاوت کر کے اپنے ’’اہل حقوق‘‘ اور ’’اہل مظالم‘‘ کو ایصال ثواب کرتے تھے …یعنی وہ افراد جن کی انہوں نے کبھی حق تلفی کی اور جن پر ان سے کوئی ظلم ہوا…اس طبقے کے لئے دعاء کے فوائد بے شمار ہیں…انسان کو اپنے گناہوں کا احساس رہتا ہے…اپنے بشر اور کمزور ہونے کا احساس رہتا ہے…اور دوسرے مسلمانوں کے حقوق کی اہمیت بھی دل میں رہتی ہے …اور بہت سا بوجھ بھی ہلکا ہو جاتا ہے…

اے مسلمانو! دعا کو اپنا لو…آپس میں رحم کرنے والے بنو…اللہ کے دشمنوں کے لئے سخت بنو… مسلمانوں کے حقوق ادا کرو…اور مسلمانوں کے دشمنوں سے جہاد کرو…دیکھو! کامیاب ترین طبقے کی یہی صفات قرآن مجید نے بیان فرمائی ہیں…

اَشِدَّائُ عَلیٰ الْکُفَّارِ،رُحَمَائُ بَیْنَھُمْ

لا الہ الا اللّٰہ،لا الہ الا اللّٰہ،لا الہ الا اللّٰہ محمد رسول اللّٰہ

اللہم صل علی سیدنا محمد والہ وصحبہ وبارک وسلم تسلیما کثیرا کثیرا

لا الہ الا اللّٰہ محمد رسول اللّٰہ

٭…٭…٭

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor