Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

اہم ترین کام (رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے)

rangonoor 486 - Saadi kay Qalam Say - Aham Tareen Kaam

اہم ترین کام

رنگ و نور ۔۔۔سعدی کے قلم سے (شمارہ 486)

اللہ تعالیٰ نے ہر عاقل،بالغ مسلمان مرد … اور مسلمان عورت پر ’’نماز ‘‘ کو فرض فرمایا ہے…

وَاَقِیْمُو الصَّلوٰۃ

حضور اَقدس ﷺ نے نماز کو دین کا ستون قرار دیا اور نماز چھوڑنے کو کفر قرار دیا…

فرمایا:

فمن ترکھا فقد کفر

جس نے نماز چھوڑ دی وہ کافر ہوا

حضرت سیدنا عمر رضی اللہ عنہ نے قرآن و سنت کی روشنی میں واضح اعلان فرمایا:

لا حظ فی الاسلام لمن ترک الصلوٰۃ

جو نماز چھوڑے اس کا اسلام میں کوئی حصہ نہیں…

آپ بتائیں! جو اللہ تعالیٰ کو مانتا ہو…جو حضور اقدس ﷺ کو مانتا ہو…کیا وہ جان بوجھ کر ایک نماز بھی چھوڑ سکتا ہے؟…نماز اسلام کا سب سے بڑا اور لازمی فریضہ…ایک تابعی فرماتے ہیں …حضرات صحابہ کرام کسی عمل کے چھوڑنے کو کفر نہیں سمجھتے تھے مگر نمازکے چھوڑنے کو کفر قرار دیتے تھے…

آہ امت مسلمہ! آج اکثر مسلمان نماز کے تارک ہو گئے…سچی بات ہے دل خون کے آنسو روتا ہے…قرآن مجید نے کافروں کی صفت بیان کی :

وَاِذَا قِیْلَ لَھُمُ ارْکَعُوْا لَا یَرْکَعُونْ

جب انہیں کہا جاتا ہے کہ رکوع کرو تو وہ رکوع نہیںکرتے…

کیا روز مسجد سے نہیں بلایا جاتا…حیّ علی الصلوٰۃ،حیّ علی الصلوٰۃ

آؤ نماز ادا کرو…آؤ اپنے رب کے لئے رکوع،سجدے کرو…یہ آواز سن کر جو ٹس سے مس نہیں ہوتے…وہ آخر کس عقیدے پر ہیں؟کس دین پر ہیں؟ …تمام ائمہ کرام کا اتفاق ہے کہ … جو شخص نماز کی فرضیت کا منکر ہو وہ بالکل پکا کافر ہے …اور جو شخص نماز کو حقیرسمجھے یا معمولی چیز سمجھے اور چھوڑ دے وہ بھی کافر ہے…

صرف اس شخص کے بارے میں حضرات ائمہ کرام کا اختلاف ہے…جو نماز کو فرض سمجھتا ہو مگر اپنی سستی اور غفلت کی وجہ سے ادا نہ کرتا ہو… احناف کے نزدیک وہ فاسق ہے، اسے کوڑے مارے جائیں اور توبہ کرنے تک قید رکھا جائے … شوافع اور مالکیہ کے نزدیک وہ فاسق ہے اسے قتل کر دیا جائے…کیونکہ نماز کاچھوڑنا بڑا جرم ہے … اور اس کی سزا موت ہے…حنابلہ کے نزدیک وہ کافر،مرتد ہے…اسے مرتد ہونے کی وجہ سے قتل کر دیا جائے…اللہ کے بندو! یہ سب کچھ نہ سختی ہے اور نہ شدت…یہ سب شفقت ہی شفقت ہے …بے نمازی کی موت بڑی دردناک ہوتی ہے …یا اللہ! امان، یا اللہ! امان…بے نمازی کے جسم کا ہر بال اور ہر خلیہ ناپاک اور نجس ہو جاتا ہے …یا اللہ! امان…یا اللہ! امان…بے نمازی کی قبر آگ کا تندور اور عذاب کی بھٹی ہوتی ہے … یااللہ! امان، یا اللہ! امان… اور بے نمازی کے لئے آخرت میں آگ ہی آگ ہے…اور عذاب ہی عذاب…

اب ایک مسلمان کو ان تمام دردناک سزاؤں اور بُرے انجام سے بچانے کے لئے ضروری ہے کہ …اسے نماز پر لایا جائے…آخر کلمہ پڑھنے کا کچھ تو مطلب ہو…جو اللہ تعالیٰ کی پہلی بات ہی نہ مانے اس نے اللہ تعالیٰ کو کہاں مانا؟…جو رسول کریم ﷺ کے سب سے تاکیدی حکم کو نہ مانے … اُس کے دل میں رسول کریم ﷺ کی آخر کیا حیثیت ہے؟…دل میں جن کا احترام ہو اُن کے حکم کا بھی اِحترام ہوتا ہے…اور یہاں نماز کے بارے میں ایک حکم نہیں…بلکہ بار بار تاکید ہے…بہت سخت تاکید ہے…حتی کے بستر وفات پربھی یہی فکر اور کڑھن ہے کہ…مسلمانو! نماز کے بارے میں اللہ تعالیٰ سے ڈرو…مسلمانو! نماز کے بارے میں اللہ تعالیٰ سے ڈرو…سچی بات یہ ہے کہ جو لوگ خود کو مسلمان کہتے ہیں مگر نماز ادا نہیںکرتے…وہ رسول کریم ﷺ کو تکلیف پہنچاتے ہیں…کوئی والد اپنے بیٹے کو آٹھ، دس بار کوئی کام بتائے…بیٹا اپنی جگہ سے ہلے بھی نہ تو والد کے دل پر کیا گذرے گی ؟ …حضرت آقا مدنی ﷺ کا حق والد سے بہت زیادہ ہے بہت زیادہ…آپ ﷺ نے اپنے ہر امتی کو بار بار نماز کی طرف بلایا…سینکڑوں ہزاروں بار بلایا…فضائل سنا کر بلایا…وعیدیں سنا کر بلایا …اور نماز کو دین کے لئے ستون اور سر کی طرح قرار دیا… مگر کوئی شخص یہ سب کچھ سن کر بھی  نہ اُٹھے تو …اس نے کتنا بڑا ظلم کیا…شیطان نے لوگوں کو بازار کی طرف بلایا…بازار کھچا کھچ بھر گئے …شیطان نے لوگوں کو سینما اور کلبوں کی طرف بلایا …کھیل اور بے حیائی کے مقابلوں کی طرف بلایا تو وہاں جگہ ملنا مشکل ہوگئی…حضرت آقا مدنی ﷺ نے مسلمان کو مسجد کی طرف بلایا تو…مسجدیں خالی خالی نظر آئیں…کیا یہ تکلیف پہنچانا نہیں؟ … ہائے کاش کوئی مسلمانوں کو سمجھائے…ایک وقت تھا کہ …ملکِ مغرب کے علماء کا ایک اِجلاس ہوا …مسائل پر گفتگو تھی…ایک عالم نے تجویز دی کہ…تارکِ صلوٰۃ یعنی نماز چھوڑنے والے مسلمان کے بارے گفتگو ہو جائے…آیا وہ مسلمان ہے یا کافر؟…اُس کی نماز جنازہ ادا کی جائے گی یا نہیں؟اس سے کسی مسلمان عورت کا نکاح جائز ہے یا نہیں؟اس کا ذبیحہ حلال ہے یا نہیں؟ … چونکہ ائمہ کرام کا اختلاف ہے اس لئے علماء کی یہ مجلس اپنے ملک کے لئے…کسی ایک فتویٰ پر اتفاق کر لے…یہ تجویز سن کر باقی علماء نے فرمایا…ملک میں یہ طبقہ موجود ہی نہیں…نماز چھوڑنے والے کسی مسلمان کا یہاں تصور ہی نہیں…تو ایک فرضی مسئلہ پر ہم اپنا وقت کیوں لگائیں…یہی وقت کسی اور مسئلہ پر گفتگو کر لیتے ہیں جس کا ہمارے ہاں وجود ہو…سبحان اللہ! پورے ملک میں ایک بھی نماز چھوڑنے والا نہیں تھا…کہتے ہیں کہ یہ ساتویں صدی ہجری کا قصہ ہے…اور آج…ہر طرف بے نمازی ہی بے نمازی…حکمران بے نمازی، عوام بے نمازی…اور دُکھ کی بات یہ ہے کہ اتنا بڑا فریضہ چھوڑنے پر نہ کوئی شرم، نہ کوئی ندامت…نہ کوئی خوف، نہ کوئی دکھ…حالانکہ نماز چھوڑنا … چوری،شراب نوشی اور زنا سے بڑا گناہ ہے…مگر اب ہماری اشرافیہ میں اسے گناہ نہیں سمجھا جاتا… حالانکہ قرآن مجید نہایت صراحت کے ساتھ سمجھاتا ہے کہ نماز چھوڑنا کافروں کا کام…مشرکوں کا طریقہ ہے اور منافقوں کی عادت ہے…ایک آیت نہیں…سینکڑوں آیات میں نماز کا حکم موجود ہے…اور نہایت تاکید کے ساتھ موجود ہے… آہ! مسلمانوں کی حالت دیکھ کر دل روتا ہے کہ … نماز تک سے محروم ہو گئے…نماز ہی تو کلمہ طیبہ کے سچا ہونے کی پہلی دلیل ہے…اب معلوم نہیں کہ دل میں کلمہ بھی باقی ہے یا وہ بھی رخصت ہو چکا … وہ مسلمان جو اللہ تعالیٰ کے فضل سے نماز ادا کرتے ہیں وہ اس نعمت پر بہت شکر ادا کریں…آج جب مسجد جائیں اور نماز ادا کر لیں تو …دل کی گہرائی سے آنسو بہا بہا کر اللہ تعالیٰ کا شکر ادا کریں کہ… یا اللہ! اتنی عظیم نعمت عطا فرما دی…جس کے والدین نمازی ہوں وہ اس پر شکر ادا کرے…جس کی بیوی نمازی ہو وہ اس پر شکر ادا کرے…جس کی اولاد نمازی ہو وہ اس پر شکر ادا کرے…ہر نماز کے بعد والہانہ شکر اور جو نمازیں رہ گئیں ان کی قضائ…اور اگلی نمازوں کے لئے دعاء کہ یا اللہ! جتنی رہ گئی ہیں …وہ سب آسان فرما ،قبول فرما…مسجد میں تکبیر اولیٰ کے ساتھ نصیب فرما…قیامت کے دن پہلا سوال نماز کا ہو گا…نماز ٹھیک نکلی تو باقی پرچہ آسان ہو جائے گا…اور اگر نماز ہی میں فیل ہو گئے تو پھر آگے سوائے ناکامی کے اورکوئی بات نہ ہو گی … ارے بنیادی سوال ہی حل نہ کیا تو کوئی لاکھ خوشخطی دکھا دے کوئی نمبر ملنے والے نہیں…نماز کی محنت کا آغاز اپنی ذات سے کریں…نماز سمجھیں،نماز سیکھیں،نماز درست کریں…اور نماز سے سچا عشق کریں …خواتین خاص طور پر فکر کریں…اور ہر نماز اول وقت میں ادا کریں…بنات کے جامعات بن گئے مگر نماز کا معاملہ کمزور پڑ گیا…فجر میں سستی عام ہو گئی…اے مسلمان بہن! کیا نماز کے بغیر بھی کوئی زندگی ہے؟…کیا نماز کے بغیر بھی کوئی کامیابی ہے؟…اپنی ذات پر محنت کے بعد پھر اپنے گھر پر محنت کریں…جو کچھ بھی کرنا پڑے کر لیں کہ گھر میں کوئی بے نمازی نہ رہے… کسی کے پاؤں پکڑنے پڑیں تو پکڑ لیں…کسی کے سامنے رونا پڑے تو دریا بہا دیں…کسی کے بیٹے کو پھانسی کی سزا ہو جائے…وہ اس سزا کو ختم کرانے کی کتنی کوشش کرتا ہے؟…حالانکہ پھانسی دو منٹ کی تکلیف ہے…جبکہ بے نمازی کے لئے … بہت بڑی آگ ہے،بہت طویل عذاب اور بہت سخت لعنت…جو اپنی اولاد کو اس آگ، اس عذاب اور اس لعنت سے نہ بچا سکا…اس نے اولاد کے ساتھ کیا خیر خواہی کی؟…اپنے گھر کے بعد پھر عام مسلمانوں میں نماز کی دعوت ہے … بہت درد بھری، بہت جاندار، اوربہت تڑپتی ہوئی دعوت…یہ دعوت چل پڑی تو سب سے پہلا فائدہ خود دعوت دینے والے کو پہنچے گا…حضرات مجاہدین…نماز کا بہت خیال رکھیں…جاندار نماز کے بغیر جہاد میں جان نہیں پڑتی…اپنے مراکز میںنماز کا بہت اہتمام کرائیں…اللہ تعالیٰ کا شکر ہے کہ ان دنوں سات مساجد کی مہم چل رہی ہے …اسی مہم کی روشنی میں اقامت صلوۃ کی محنت بھی کر لیں…کیا معلوم آپ کی دعوت…آپ کے نامہ اعمال میں کسی مسلمان کے ہزاروں سجدے ڈال دے…اللہ تعالیٰ نے ہمیں بہت پیارا نصاب عطاء فرمایا ہے…

کلمہ طیبہ، اقامت صلوٰۃ…اور جہاد فی سبیل اللہ…یا اللہ! آپ کا شکر ہے…بے حد شکر… الحمد للہ، الحمد للہ، الحمد للہ

لا الہ الا اللّٰہ،لا الہ الا اللّٰہ،لا الہ الا اللّٰہ محمد رسول اللّٰہ

اللہم صل علی سیدنا محمد والہ وصحبہ وبارک وسلم تسلیما کثیرا کثیرا

لا الہ الا اللّٰہ محمد رسول اللّٰہ

٭…٭…٭

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor