Bismillah

609

۲۳تا۲۹ذی الحجہ۱۴۳۸ھ   بمطابق  ۱۵تا۲۱ستمبر۲۰۱۷ء

خواتین اسلام سے رسول اکرمﷺ کی باتیں (شمارہ 576)

خواتین اسلام سے رسول اکرمﷺ کی باتیں

(شمارہ 576)

کسی عورت کو اس کے شوہر سے الگ کراکر اس کے شوہر سے نکاح کرنے کی کوشش جہاں اس کی ایذاء کا باعث ہے وہاں تقدیر سے آگے بڑھنے کے بھی مترادف ہے۔ ہر مرد عورت کے لیے مال اور رزق اور دیگر منافع مقدر ہیں جو عورت چاہتی ہے کہ کسی عورت کو طلاق دلوا کر اس کے شوہر سے نکاح کر لے اسے چاہیے کہ اس کے شوہر پر قبضہ کرنے کے بجائے کسی دوسرے مرد سے اپنا نکاح کرلے ،ہزاروں مسلمان مرد موجود ہیں جو تقدیر میں ہے یہ اس کے پاس بھی ملے گا اور اس کے پاس بھی۔

آج کل عورتوں میں یہ مرض بہت زیادہ ہے ایسے ایسے واقعات سنے ہیں کہ بہن نے بہنوئی سے نکاح کرنے کا فیصلہ کرلیا اور اپنی حقیقی بہن کو طلاق دینے پر بہنوئی کو آمادہ کر کے طلاق دلادی اور اسے خود اپنا شوہر بنا کر بیٹھ گئی۔

کسی عورت کو اس کے شوہر کے خلاف اُکسانا گنا ہ ہے

حضرت ابوہریرہ رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہﷺ نے ارشاد فرمایا: وہ شخص ہم میں سے (یعنی جماعت مسلمین میں سے) نہیں ہے جو کسی عورت کو فریب دے کر شوہر کی مخالف بنادے یا کسی غلام کو دھوکہ دے کر اسے آقا کا مخالف بنادے۔(مشکوٰۃ المصابیح: ص ۲۸۲بحوالہ ابودائود)

اس حدیث میں اس بات کی نصیحت فرمائی ہے کہ کوئی مرد وعورت کسی عورت کو ورغلا کر اور سجھا بجھا کر اس کے شوہر کی مخالفت پر آمادہ نہ کردے اگر کوئی ایسی حرکت کرے گا تو وہ ایسا سخت مجرم ہوگا کہ اس کے بارے میں رحمۃ للعالمینﷺ نے فرمایا کہ وہ ہماری امت سے نہیں ہے، بہت سے مردوعورت اس میں مزہ لیتے ہیں کہ کسی کا گھر بگاڑ دیں، شوہر کو بیوی کے خلاف یا بیوی کو شوہر کے خلاف بھڑکانے کو کمال سمجھتے ہیں خدانخواستہ اگر میاں بیوی میں کوئی رنجش ہوگئی اور کسی نے شوہر کو چڑھایا، کسی بیوی کو اکسایا اور دونوں میں صلح کرانے کے بجائے معمولی سی رنجش کو ناقابل عبور سمندر بنادیا تو ایسے لو گوں کی حرکت بد سے میاں بیوی قریب تر آنے کے بجائے دور ہوتے چلے جائیں گے۔ ایسی حرکت کرنے والے اجنبی ہی نہیں ہوتے بلکہ فریقین کے رشتہ دار ہی ایسا کام زیادہ کرتے ہیں۔ بہت سے ماں باپ یابہن مرد کو اس کی بیوی کے خلاف ابھاردیتے ہیں۔ عورت کی ماں بہن یا محلہ کی عورتیں عورت کو شوہر کے خلاف ابھارتی ہیں، دیکھ تجھے ایسا ایسا کہا ہے، تو کوئی گرے پڑے گھر کی تھوڑا ہی ہے جو ایسی باتیں سنے گی، تیرازیور بھی بیچ کھایا اور تجھے زیور کی ایک کیل بھی بنا کر نہیں دی ،کپڑے بھی وہی تیرے ماں باپ کے گھر کے چل رہے ہیں، کیسے شوہر کے پلے بندھی ہے، ان باتوں سے اس کا دل کھٹا ہوجاتا ہے، شوہر سے لڑتی رہتی ہے وہ بھی بری طرح پیش آتا ہے اور بدمزگی بڑھتے بڑھتے طلاق تک نوبت پہنچ جاتی ہے۔

 جب طلاق ہوجاتی ہے تو اب شوہر بھی دوسری شادی کے لیے پریشان ہے مگر کسی جگہ شادی کا موقع نہیں لگتا اور بیوی کے اقرباء واولیا ء بھی چاہتے ہیں کہ کہیں رشتہ ہوجائے مگر لوگ اس کو اس لیے قبول نہیں کرتے کہ اسے طلاق ہوچکی ہے، عادت و خصلت خراب ہوگی تب ہی تو ایسا ہوا، بہرحال جن کا گھر بگڑا وہ مصیبت جھیلتے ہیں اور یہ بھڑکانے اور اکسانے والے تماشہ دیکھتے ہیں شیطان اپنی حرکتیں انسانوں سے بھی کرالیتا ہے، اللہ تعالیٰ شیطان کے کاموں سے سب کو بچائے۔ آمین

تعلیم و تربیت کا بیان

بچوں کی ایمان و اسلام اور اعمالِ اسلام سکھانے کی ذمہ داری ماں باپ پر ہے:

حضرت عمروبن شعیبؒ روایت کرتے ہیں کہ میں نے اپنے دادا کی کتاب میں( جس میں انہوں نے حضور اقدسﷺ کی احادیث جمع کی تھیں) یہ لکھا ہواپایا کہ جب تمہاری اولاد بولنے لگے تو ان کو لاالہ الا اللہ سکھائوپھر ان کی موت آنے تک فکر مت کرو(یعنی شروع میں جب عقیدہ ٹھیک کردیا اور اسلام کا عقیدہ اس کو سکھادیا تو اب کوئی ڈر نہیں، ایمان کی پختگی اسے ایمان ہی پر زندہ رہنے دے گی اور اسی پر ان شاء اللہ ا س کی موت آئے گی) اور جب ان کے دودھ کے دانت گرنے لگیں تو ان کو نماز کا حکم کرو۔

نیزعمرو بن شعیب یہ بھی روایت کرتے ہیں کہ حضور اقدسﷺ کا یہ طریقہ تھا کہ عبدالمطلب کی اولاد میں جب کوئی بچہ بولنے لگتا تھا تو اسے یہ آیت سکھاتے تھے: وقل الحمدللّٰہ الذی لم یتخذ ولدا( عمل الیوم واللیلہ لابن السنی ص ۱۱۳)

(جاری ہے)

٭…٭…٭

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
TAKWIR Web Designing (www.takwir.com) Copyrights Alqalam Weekly Online