Bismillah

672

۶تا۱۲ربیع الثانی۱۴۴۰ھ  بمطابق       ۱۴تا۲۰دسمبر۲۰۱۸ء

خواتین اسلام سے رسول اکرمﷺ کی باتیں (شمارہ 634)

خواتین اسلام سے رسول اکرمﷺ کی باتیں

(شمارہ 634)

اس آیت سے معلوم ہوا کہ نرم مزاجی اور نرم دلی، محبت اور اُلفت لانے والی ہے اور سخت مزاجی اکھڑپن اپنے تعلق والوں کو بھی دور کرنے والا ہوتا ہے، مومن کو نرم مزاج رحم دل ہونا چاہیے فرمایا حضور اقدس ﷺ نے کہ مومن الفت والا ہوتا ہے اور اس میں کوئی خیر نہیں جو الفت نہیں رکھتااور جس سے الفت نہیں رکھی جاتی۔(مشکوٰۃ)

یہ سب حالات اور عام ۱وقات کے اعتبار سے فرمایا ہے کبھی کبھار کہیں سختی کی بھی ضرورت پڑجاتی ہے اگر موقع کے مطابق اس کو اختیار کیا جائے تو اس میں بھی اس کی خیر ہوتی ہے، اپنے بچوں اور شاگردوں کو تنبیہ کرنے کے لیے کبھی سختی کی ضرورت ہوتی ہے مگر عام حالات میں نرمی ہی مناسب ہوتی ہے، ہر وقت سختی کرنے سے اولاد اور شاگرد اور ماتحت سب ڈھیٹ اور باغی ہوجاتے ہیں۔

 غصہ سے پرہیز کرنے کی تاکید

حضرت ابو ہریرہ رضی اللہ عنہ فرماتے ہیں کہ حضور اکرم ﷺ سے ایک شخص نے درخواست کی کہ مجھے وصیت فرمائیے، آپﷺ نے فرمایا:لا تغضبیعنی غصہ نہ کیا کر، اس نے پھر یہی عرض کیا کہ مجھے کچھ وصیت فرمائیے۔ آپﷺ نے پھر وہی جواب دیا، اس نے پھر وہی عرض کیا ، آپﷺ نے پھر وہی جواب دیا(غرضیکہ) اس شخص نے چند بار وہی سوال کیا اور آنحضرتﷺ ہر بار وہی جواب عنایت فرماتے رہے کہ غصہ نہ کیا کر۔( مشکوٰۃ المصابیح، ص۴۳۳ از بخاری)

بعض روایات میں یوں ہے کہ ایک شخص رسول اللہﷺ کی خدمت میں حاضر ہوا اور اس نے عرض کیا: یارسول اللہ! مجھے کچھ بتادیجئے جس پر عمل کروں مگر زیادہ نہ ہو، شاید میں اسے گرہ باندھ لوں، رسول اللہﷺ نے اس کے جواب میں فرمایا: غصہ نہ کیا کرو، اس نے پھر وہی بات کی، آپ ﷺ نے پھر وہی جواب دیا، غرضیکہ چند بار اسی طرح سوال وجواب ہوا۔

 دوسری روایت میں ہے کہ سائل نے یوں کہا تھا: یا رسول اللہ! مجھے ایک ایسا عمل بتادیجئے جس کے ذریعہ جنت میں داخل ہوجائوں لیکن زیادہ نہ بتائیے۔ آپ ﷺ نے فرمایا: غصہ نہ کیا کرو۔( جامع العلوم و الحکم لابن رجبؒ)

ان احادیث سے معلوم ہواکہ حضور اقدسﷺ نے سائل کو ایسی چیز بتائی تھی جس پر عمل کرنے سے بہت سی برائیوں سے بچا جا سکتا ہے اور بہت سی بھلائیوں کا ذریعہ بن سکتا ہے۔

 غصہ کا علاج:

حدیثوں میں غصہ کے کئی علاج بھی آئے ہیں جن میں سے ایک یہ ہے کہ غصہ آئے تو اعوذ باللہ من الشیطن الرجیم کہے، دوسرا علاج یہ ہے کہ زبان بند کرلے اور بالکل گونگا ہو جائے تیسرا یہ کہ زمین سے چپک جائے۔( جامع العلوم و الحکم لابن رجبؒ)

ایک روایت میں ہے کہ رسول اللہﷺ نے فرمایا: بلاشبہ غصہ شیطان کی طرف سے ہے اور اس میں بھی شک نہیں کہ شیطان آگ سے پیدا کیا گیا ہے اور آگ کو پانی ہی بجھاتا ہے، لہٰذا جب تم میں سے کسی کو غصہ آجائے تو وضو کرلے۔( مشکوٰۃ)

 حضرت ابوذررضی اللہ عنہ فرماتے ہیں کہ رسول اللہﷺ نے فرمایا : جب تم میں سے کسی کوغصہ آئے اور وہ اس وقت کھڑا ہوتو چاہیے کہ بیٹھ جائے، اگر بیٹھنے سے غصہ چلا جائے تو خیر ورنہ لیٹ جائے۔(مشکوٰۃ)

مشکوٰۃ شریف میں بیہقی سے ایک روایت نقل کی ہے کہ رسول اللہﷺ نے فرمایا: بلاشبہ غصہ ایمان کو اس طرح بگاڑ دیتا ہے جیسے ایلواشہد بگاڑ دیتا ہے۔

 طبعی طور پرانسان میں غصہ رکھا گیا ہے اور غصہ کا روکنا گو مشکل ہے لیکن انسان اس پر قابو پاسکتا ہے، ایک حدیث میں ہے کہ وہ زوردار اور پہلوان نہیں ہے جو اپنے مقابل (پہلوان) کو پچھاڑ دے، زور دار( اور پہلوان) وہ ہے جو غصہ کے وقت اپنے آپ کو قابو میں رکھے۔( بخاری ومسلم)

غصہ پینے کی فضیلت:

بیہقی کی ایک روایت میں ہے کہ رسول اللہﷺ نے فرمایا:جوشخص اپنے غصہ کو روک لیتا ہے، خدا قیامت کے روز اس سے اپنے عذاب کو روک لے گا اور حضرت عبداللہ بن عمر رضی اللہ تعالیٰ عنہما روایت فرماتے ہیں کہ رسول اللہﷺ نے فرمایا: اللہ کی رضا کے لیے غصہ کا گھونٹ پی جانے سے بڑھ کر اللہ تعالیٰ کے نزدیک کسی گھونٹ کا پینا افصل نہیں ہے۔ (مشکوٰۃ)

٭…٭…٭

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

  • القلم کے گذشتہ شمارے و مضامین
  • کارٹون
TAKWIR Web Designing (www.takwir.com) Copyrights Alqalam Weekly Online