Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

نفیس پھُول ۔ 661

نفیس پھُول

امام جمال الدین ابن الجوزیؒ

(شمارہ 661)

میں نے تمام اسلاف کو بغور دیکھا اور ارادہ کیا کہ ان میں سے ایسے حضرات کا انتخاب کروں جو علم میں لگے تو مجتہد کہلائے اور عمل کے میدان میں اترے تو اہل عبادت کے لئے مقتداء اور پیشوابنے جن میں تین حضرات امتیازی مقام رکھتے ہیں(۱) حسن بصریؒ(۲) سفیان ثوریؒ(۳)احمدبن حنبلؒ میں نے ان میں سے ہر ایک کے حالات پر ایک ایک مستقل کتاب لکھی ہے اور بعض نے ان تینوں کے ساتھ چوتھے حضرت سعید بن المسیبؒ کو بھی شامل کیاہے جس کے انکار کی کوئی وجہ نہیں۔ یوں تو اسلاف میں بڑے بڑے بزرگ و سادات گزرے ہیںمگر ان میں اکثر ایسے ہیں کہ ایک فن کا غلبہ ہو اتو دوسرے میں کمی آگئی چنانچہ ان میں سے بعض پر علم غالب رہا اور بعض پر عمل، گو سب کے سب ایسے تھے کہ انہیں علم کا بھی وافر حصہ ملا تھا اور معرفت و معاملات کا بھی اور ان کے نقش قدم پر چلنے والوں کی بھی کمی نہیں مگر اولیت کی فضلیت انہی کو حاصل ہے جیسا کہ اللہ تعالیٰ نے حضرت خضر علیہ السلام کو ایسی باتوں پر مطلع فرمایا تھا جو موسیٰ علیہ السلام سے مخفی تھیں بس اللہ تعالیٰ کے خزانے بھر پور ہیں اور اس کی عطا کسی ایک کے لئے مختص نہیں میرے پاس علامہ ابن عقیل کی یہ بات نقل کی گئی کہ وہ اپنے بارے میں فرمایا کرتے تھے :کتنے لوگ ہیں جو عجب و خود پسندی میں مبتلا ہوتے ہیں مگر جب کسی دوسرے کی خوبی اور کمال سامنے آتا ہے تو اپنے کو حقیر سمجھنے لگتے ہیں اور کتنے بعد میں آنے والے ہیں جو پہلوں سے آگے بڑھ جاتے ہیں، شاعر نے اسی کو بیان کیا ہے کہ

راتیں اور دن حاملہ عورت کی مانند ہیں کہ اللہ تعالیٰ کے سوا کوئی نہیں جانتا کیا جنے گی۔

٭…٭…٭

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor