Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

افادات اکابر۔ 646

 افادات اکابر

(شمارہ 646)

اِخلاص اور تصحیح نیت

اِنسان اس کا مکلف ہے کہ وہ اپنی قدرت، اپنے علم، اپنی فہم، اپنی صلاحیت اور اپنی صوابدید کے مطابق قدم اُٹھائے، انسان کی مسئو لیت یہی ہے،کامیابی و ناکامی اس کے اختیار سے بالاتر ہے۔ کہاجاتاہے: السعی منی والاتمام من اللہ، یعنی کوشش کرنا میرا فرض ہے، باقی تکمیل تک پہنچانا یہ حق تعالیٰ کا کام ہے۔ نتیجہ ہمیشہ حق تعالیٰ کے قبضۂ قدرت میں رہتا ہے۔ اس کی تکوینی مصلحت و حکمت کا جو تقاضا ہوگا وہی ہوگا، اختیار تمام تراللہ تعالیٰ کا ہے۔ نیز انسان اس کامکلف ہے کہ جو کام کرے وہ اِخلاص سے کرے یعنی پہلے یہ سوچ لے کہ حق تعالیٰ کی مرضی کیا ہے، مقصد رضائے الہٰی ہو، نفسانی خواہش نہ ہو، یہ مرحلہ بہت باریک اور بہت مشکل ہے، پہلے تو نفسیاتی مکائد کی وجہ سے اور شیطانی دسائس اوروساوس کی وجہ سے نفسانی خواہشات کاتجزیہ کرنا ہی بہت مشکل ہے ’’کارے دارد‘‘۔ کسی مقصد کا ایساتجزیہ کرنا کہ رضائے الٰہی کتنی ہے اور نفس کی خواہش کتنی ہے آسان نہیں۔پھر نفسانی خواہش کویک قلم چھوڑ کر حق تعالیٰ کی خوشنودی ہی منزل مقصود ہو، بڑاکٹھن مرحلہ ہے۔

(بصائر وعبر۔حصہ اول، ص۲۲۳)

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor