Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

معارف جہاد ۔ 655

معارف جہاد

مولانا محمد مسعود ازہر (شمارہ 655)

سرکاری جہادکابہانہ

جہاد پر اعتراضات کرنے والے آج کل کے نام نہاد دانشوروں کی حالت یہ ہے کہ وہ کبھی بھی جہاد میں نہیں جانا چاہتے انہوں نے خود کو دنیا میں بری طرح سے پھنسا لیا ہے مگر یہ لوگ اپنی بزدلی چھپانے کے لئے جہاد پر اعتراضات کرتے ہیں کہ فلاں جگہ کا جہاد غیر شرعی ہے کیونکہ جہاد تو حکومت کا کام ہے اورحکومت اس جہاد میں ساتھ نہیں ہے اورفلاں جگہ کا جہادغیر شرعی ہے کیونکہ وہ سرکاری جہاد ہے حکومت کی ایجنسیاں وہاں تعاون کررہی ہیں ایسے لوگوں سے یہی پوچھاجائے کہ اگر کہیں آپ کی شرائط کے مطابق جہادشروع ہوجائے تواس کے لئے آپ نے کیا تیاری کی ہوئی ہے؟..اورکیا آپ کے دل میں جہاد کرنے کی کوئی نیت ہے؟حقیقت یہ ہے کہ یہ لوگ جہاد کوسراسراپنی زندگیوں سے نکال چکے ہیں اللہ پاک سب مسلمانوں پر رحم فرمائے(فتح الجواد جلد۲:ص۵۴۶)

منافق کی لیڈری

ہر زمانے میں منافقین کایہی طرز عمل رہاہے کہ وہ اﷲ تعالیٰ اور اس کے رسول ﷺ کے احکامات کی کھلم کھلامخالفت کرتے ہیں مگر مسلمانوں کے درمیان قسمیں کھا کھاکر خود کو مسلمان بتاتے ہیں تاکہ اسلامی معاشرے میں ان کی عزت ہو، وہ محفوظ رہیں اور ہوسکے تو مسلمانوں کے لیڈر بھی کہلائیں۔(فتح الجواد جلد۳:ص۱۱)

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor