Bismillah

694


۱۰رمضان المبارک۱۴۴۰ھ

معارف جہاد ۔ 664

معارف جہاد

مولانا محمد مسعود ازہر (شمارہ 664)

جہاد کون کرسکتا ہے؟

جہاد وہی انسان کرسکتا ہے جس کے دل میں ایمان اور اسلام کی عظمت پوری طرح راسخ ہو اور اس کے دل میں کفر کے لیے مکمل نفرت اور بے زاری ہو۔ اسلام انسانیت کے لیے کتنا ضروری اور مفید ہے اور کفر انسانیت کے لیے کتنا نقصان دہ اور تباہ کن ہے اس بات کو دل میں بٹھائے بغیر جہاد کا مسئلہ نہیں سمجھا جاسکتا۔ اﷲ پاک نے کافروں کی ناکامی اور ایمان والوں کی کامیابی کے احوال کھول کھول کر بیان فرمادیئے تاکہ ہر انسان ایمان اور کفر کی حقیقت کو سمجھ لے۔(فتح الجواد جلد۳:ص۳۳۲)

مکی اورمدنی دین کافرق کرنا

پورے دین کو ماننا ضروری ہے اس لیے دین کے حصے کرکے یہ کہنا کہ یہ مکی دین ہے اور یہ مدنی دین ہے اور پھر یہ کہنا کہ فلاں حکم ہمارے لیے نہیں ہے کیونکہ ہم مکی دور میں ہیں یہ سب غلط ہے، مؤمن وہ ہے جو پورے دین کومانتاہے اور پورے دین پر عمل کی کوشش کرتا ہے، اور اگر دین کے کسی حکم پر عمل کا بالکل موقع ہی نہ رہے تو اس حکم پر یقین رکھتے ہوئے اس پر عمل کی تمنا رکھتا ہے۔(فتح الجواد جلد۳:ص۳۸۴)

رنگین صفحات کے مضامین

  • رنگ و نور ۔ سعدی کے قلم سے
  • Rangonoor English
  • Message Corner
  • رنگ و نور پشتو ترجمہ
  • کلمۂ حق ۔ مولانا محمد منصور احمد
  • السلام علیکم ۔ طلحہ السیف
  • قلم تلوار ۔ نوید مسعود ہاشمی
  • نقش جمال ۔ مدثر جمال تونسوی
  • سوچتا رہ گیا ۔ نورانی کے قلم سے

Alqalam Latest Epaper

Alqalam Latest Newspaper

Rangonoor Web Designing Copyrights Khabarnama Rangonoor